لاہور(وقائع نگار) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار20ستمبر کو عمرہ کی ادائیگی کے بعدرات گئے تقریباً2بجے وطن واپس پہنچے ۔وزیراعلیٰ نے وطن واپسی کے فوراً بعد رات گئے ائیرپورٹ پر چونیاں میں بچوں کے قتل کے واقعہ پر ہنگامی اجلاس طلب کرلیا۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کریں گے ۔ صوبائی وزراء راجہ بشارت، ہاشم ڈوگراورسردار آصف نکئی اجلاس میں شریک ہوئے ۔چیف سیکرٹری، آئی جی پولیس،ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ،سیکرٹری اطلاعات اوراعلیٰ حکام نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں افسوسناک واقعہ کے بارے میں رپورٹ وزیراعلیٰ کو پیش کی گئی۔علاوہ ازیں انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں رواں صدی کا بدترین انسانی المیہ رونما ہونے کا خدشہ ہے لیکن بھارتی حکومت بدستورہٹ دھرمی کی روش پر گامزن ہے ۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ نریندرمودی میں ہمت ہے تو مظفر آباد میں وزیراعظم عمران خا ن کے جلسہ عام کی طرح سرینگر میں جلسہ عام کر کے دکھائے ۔انہوں نے کہاکہ نریندر مودی نے اپنے ملک میں انتہاء پسندی کے جو بیج بوئے ہیں،بھارت کی آئندہ نسلوں کو اس کا پھل کاٹنا پڑے گا۔