لاہور ،اسلام آباد ( سٹاف رپورٹر،خبر نگار خصوصی ) مرکزی جمعیت اہلحدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے فرانسیسی صدرکو کند ذ ہن قراردیتے ہوئے کہا ہے انہوں نے انتہا پسندی کو اسلام سے جوڑ کر کم علمی اور کم عقلی کا مظاہر ہ کیا۔جامعہ سلفیہ دعوۃ الحق میں تحفظ شعائر اسلام سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے علامہ ساجدمیر کا کہنا تھا فرانسیسی صدرصلیبی نظریات کے حامل ہیں۔ وہ اسلام اورپیارے نبی ﷺ کو نشانہ بنا ئیں گے تو ڈیڑھ ارب مسلمانوں کے لیے ناقابل برداشت ہو گا۔وہ آگ سے مت کھیلیں۔ سیمینار سے علامہ ابتسام الہی ظہیر،عتیق الرحمن شاہ، حافظ عامر صدیقی اور حافظ محمد سالم نے بھی خطاب کیا۔سربراہ اہلسنت والجماعت مولانا محمد احمد لدھیانوی نے گستاخانہ خاکوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا اسلام دشمن قوتیں یاد رکھیں 52 اسلامی ممالک اور ڈیڑھ ارب کے لگ بھگ تاجدار ختم نبوتؐ کے نام لیوا سروں پر کفن باندھ کر حرمت رسولؐ کیلئے تیار ہیں۔اپنے بیان میں انہوں نے کہا حکومت پاکستان سفارتی سطح پر فرانس حکومت کو پابند کرے کہ اس طرح کے مکروہ اور گھنائونے ہتھکنڈے اگر روکے نہ گئے تو امت مسلمہ کے جذبات قابو میں نہیں رہیں گے ۔