لاہور (سٹاف رپورٹر )عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت راوی روڈ لاہور کے زیراہتمام 9ویں سالانہ تحفظ ختم نبوت کانفرنس قصورپورہ میں علماء کرام نے کہا ہے کہ قانون میں تبدیلی اور قادیانیوں کو نوازنے پر بھرپور مزاحمت کرینگے ۔انہوں نے کہا قوم ناموس رسالتﷺ کیلئے اپنی جان اور مال قربان کرنے کیلئے بھی تیارہے ،مقبوضہ کشمیر میں بھاتی مظالم افسوسناک ہیں ،ناروے میں قران کی بیحرمتی قابل مذمت ہے ، کانفرنس عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع لاہور کے امیر، رکن مرکزی مجلس شوریٰ یادگار اسلاف شیخ الحدیث مولانا مفتی محمدحسن کی صدارت میں ہوئی جس میں مختلف نشستیں ہوئیں۔مولانا اﷲ وسایا نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت پر اپنی جانیں قربان کر دیں گے ،مرکزی جمعیت اہلحدیث کے مرکزی رہنما انجینئر ابتسام الٰہی ظہیر نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ کرتار پور راہدری سے قادیانیوں کو سہولت دینے کی سخت مزاحمت کریں گے قانون ناموس رسالت پر قدغن لگانے والے دنیا وآخرت میں ناکام و نامراد ہوں گے ۔ مولانا مفتی نعیم الدین نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ صہیونی و سامراجی قوتیں قادیانیوں کو اپنے مذموم مقاصد کے حصول کیلئے استعمال کیلئے کوشاں ہیں ۔مولانا عبدالنعیم نے کہا کہ قوم ناموس رسالت اور تحفظ ختم نبوت کے سلسلہ میں اپنا مال،جان اور عزت وآبرو قربان کردے گی لیکن ان مسائل پر کبھی سمجھوتہ نہیں کرے گی ۔حامد بلوچ نے کہا کہ ختم نبوت کا دفاع ہما را ایمان ہے ۔قاری جمیل الرحمن اختر نے کہا کہ عقیدہ تحفظ ختم نبوت کا تحفظ صرف ایمان کی اساس ہی نہیں بلکہ امت مسلمہ کی زندگی وموت کا مسئلہ بھی ہے ۔مولانا صدیق طارق نے کہا قانون تحفظ ناموس رسالت ختم کرنے کی سازشیں کی جاری ہیں۔ محمد مسلم بلوچ نے کہا کہ ختم نبوت پر ایمان کے بغیر کوئی عبادت بھی بارگاہ ایزدی میں درجہ قبولیت کو نہیں پہنچتی۔قاری مومن شاہ نے کہا کہ قادیانی دجل و فریب کے ذریعے ختم نبوت کے معانی و مطالب میں تحریف و تکذیب کر کے نو خیز نسل کو گمراہ کر رہے ہیں۔مقررین نے کہا اسلام امن پسند مذہب ہے مگر بدقسمتی سے اسلام فوبیا کے شکار لوگ دنیا کا امن تباہ کر نے کے مشن کے تحت مسلمانوں کو اشتعال دلانے کی کوشش کر رہے ہیں ۔کانفرنس سے مولانا عزیز الرحمن ثانی، مولانا عبدالعزیز، مولانا جمیل الرحمن اختر، معروف ثناخوان مصطفیٰ مولانا محمدقاسم گجر، حامد بلوچ، حکیم ارشاد حسین، عبدالولی، رانا محمدقیصر، ملک محمدیونس، کاشان مرزا، مولانا عبدالحفیظ،مولانامحمدصدیق طارق، قاری محمدحنیف، قاری محمدصدیق توحیدی اور متعدددیگر رہنماؤں اور ممتاز شخصیات نے شرکت وخطاب کیا۔