اسلام آباد، مکہ مکرمہ (سپیشل رپورٹر،این این آئی) منیٰ میں دنیا کی سب سے بڑی خیمہ بستی آباد ہوگئی، سعودی عرب میں فریضہ حج کی ادائیگی کے لئے دنیا بھر سے آئے لاکھوں عازمین مکہ مکرمہ سے منیٰ میں جمع ہونے کے بعد آج رکن اعظم وقوف عرفہ کرینگے ۔عازمین سعودیہ کی تاریخ میں پہلی بار مسلسل تین روز3خطبے سنیں گے ، ان میں پہلا خطبہ جمعہ کا سنا گیا ، دوسرا خطبہ ہفتے کو حج کا خطبہ اور تیسرا خطبہ اتوار کو نماز عید الاضحٰی کا سنا جائے گا،آج 9ذی الحج کو بعد نماز فجر غلاف کعبہ تبدیل کیا جائے گا،وقوف عرفہ کے دوران مسجد نمرہ میں خطبہ حج ہوگا جس کے بعد نماز ظہر اور عصر ایک ساتھ ادا کی جائے گی بعدازاں عازمین حج غروب آفتاب کے ساتھ ہی مزدلفہ روانہ ہوں گے جہاں وہ نمازِ مغرب اور عشا ایک ساتھ ادا کریں گے ، عازمین رات بھر کھلے آسمان تلے قیام کریں گے اور رمی کے لئے کنکریاں چنیں گے دس ذی الحج کو طلوع آفتاب کے بعد حجاج کرام مزدلفہ سے رمی کے لئے جمرات جائیں گے پھر قربانی کے بعد سر منڈوا کر احرام کھول دیں گے اور طواف زیارت کریں گے ۔سعودی حکام نے عازمین کیلئے خصوصی سہولیات فراہم کی ہیں، مکہ مکرمہ میں دفتر امور حج پاکستان نے عازمین حج کو ہدایت کی کہ گرم موسم کے پیش نظروہ پانی کا زیادہ استعمال کریں اور دھوپ کی تمازت سے بچنے کے لیے اپنے ساتھ چھتری رکھیں۔ دوران حج اپنے ساتھ کم سے کم سامان رکھیں اور کسی پریشانی کی صورت میں معاون حج سے مدد لیں یا مفت ہیلپ لائن 8001166622 پر کال کریں۔دریں اثنا اسلام آباد سے سپیشل رپورٹر کے مطابق وزیر اعظم کے مشیر اور حج کوآرڈینیٹر شہزاد ارباب نے کہاہے کہ موجودہ حکومت حجاج کی خدمت سعادت سمجھ کر کر رہی ہے ،انہوں نے وزارت مذہبی امور کے کنٹرول آفس کے مختلف شعبوں اور میڈیکل مشن کے زیر اہتمام چلنے والے ہسپتال کا دورہ کیا۔