کراچی(شوبزڈیسک) گلوکار علی ظفر نے کہا ہے کہ کوئی انسان مکمل نہیں اور نہ ہی کوئی یہ دعویٰ کرسکتا ہے کہ اس نے زندگی میں کوئی گناہ نہیں کیا لیکن انسان کو ہمیشہ اچھا بننے کی کوشش کرتے رہنا چاہئے ۔نجی پروگرام میں علی ظفر نے بتایا کہ وہ تین بھائیوں میں سب سے بڑے ہیں، بچپن میں علی بہت شرمیلے بچے تھے جو نہ تو زیادہ دوست بناتے ہیں اورنہ ہی لوگوں میں گھلتے ملتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ انہیں پہلی بار اپنی ایک کلاس فیلو سے محبت ہوئی تھی لیکن وہ شرمیلے پن کی وجہ سے کبھی اظہار نہیں کرسکے ۔ ان کا تعلق ایک متوسط گھرانے سے تھا لہٰذا انہیں بہت جلدی اپنی ذمہ داریوں کا احساس ہوگیا تھا۔ اس لیے انہوں نے بہت چھوٹی عمر میں پینٹنگز بنا کر پیسے کمانے شروع کردئیے ۔ اہلیہ عائشہ فاضلی سے ملاقات بھی اسی ہوٹل میں ہوئی تھی جہاں وہ پیٹنگز بناتے تھے ۔ عائشہ ان سے اپنا سکیچ بنوانے آئی تھیں اور سکیچ بناکر علی نے اپنا فون نمبر بھی انہیں دے دیا تھا۔ عائشہ کی جو خصوصیت انہیں پسند ہے وہ یہ ہے کہ عائشہ بالکل ایک فرشتہ نما انسان ہیں ۔ان کے دل میں سب کے لیے بہت رحم ہے ۔علی ظفر نے کہا کہ میرا ماننا ہے کہ انسان کو ایسی خاتون سے ہی شادی کرنی چاہیے جو رحم دل ہو تاکہ یہ رحمدلی آگے بچوں میں بھی منتقل ہوجائے ۔