واشنگٹن(صباح نیوز) ہیومن رائٹس واچ ایشیا کی ڈائریکٹر مناکشی گنگولی نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر لاک ڈائون جلد ختم کیا جائے ، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی صورت حال پر بھارت کو عالمی برادری کی بڑھتی تشویش اور اٹھنے والے سوالات کا جواب دینا پڑے گا، بچوں کی تحویل یا دیگر شکایات پر غیر جانبدارانہ تحقیقات ہونی چاہئیں ۔امریکی نشریاتی ادارے کے ساتھ گفتگو میں میناکشی گنگولی نے کہا کہ بھارت عالمی برادری کا حصہ ہے ، اگر سوال اٹھیں گے تو جواب تو دینا پڑیں گے ۔کشمیر ی شہریوں کا باہر کی دنیا سے رابطہ نہ ہونا تکلیف دہ ہے ۔ایک سوال کے جواب میں انسانی حقوق کی سرگرم کارکن نے کہا کہ ایسا سننے میں آیا ہے کہ لاک ڈائون جلد ختم ہو جائے گا تاہم پہلے ہی دو ماہ سے زیادہ کا وقت گزر چکا ہے ۔ہم چاہتے ہیں جلد سے جلد اس لاک ڈائون کا خاتمہ ہو۔انہوں نے کہا کہ کشمیر سے ہزاروں بچوں کو تحویل میں لیے جانے کی بات ہو یا دیگر شکایات، ہر معاملے پر غیر جانبدارانہ تحقیقات ہونی چاہئیں ۔