نواب شاہ(بیورو رپورٹ) لاہور کی 30 سالہ حرا موبائل پر دوستی اور پھرمحبت کی شادی کرکے اپنی زندگی اجیرن بنا بیٹھی۔نامعلوم نوجوان اسے بیہوشی کی حالت میں پیپلز میڈیکل ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں چھوڑ کر فرار ہوگئے ۔طبی امداد کے بعد ہوش میں آنے پر لاہورکی رہائشی حرا نے ہسپتال میں صحافیوں کو بتایا کہ میری 9 ماہ قبل سکرنڈ کے نواحی گاؤں عثمان جمالی کے رہائشی امتیاز جمالی سے شادی ہوئی ،شادی کے وقت امتیاز جمالی نے اپنی پہلی شادی کا ذکر نہیں کیا۔ جب مجھے پتہ چلا تو میں نے احتجاج کیا،جس پر وہ مجھے زدوکوب کرنے لگا اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دے کر لاہور چھوڑکر آگیا۔مجھے جب لاہور میں یہ اطلاع ملی کہ امتیاز جمالی لبنیٰ نامی لڑکی سے تیسری شادی کررہا ہے تو میں ٹرین کی ذریعے نواب شاہ چلی گئی ۔راستے میں غصے کے باعث کچھ نہ کھایا پیا ،جس کے باعث ٹرین سے اترتے ہوئے بیہوش ہوگئی۔ جب ہوش آیا توہسپتال کے بیڈ پر تھی۔انہوں نے ڈی آئی جی شہید بے نظیر آباد سے انصاف فراہم کرنے کی اپیل کی۔