اسلام آباد (نیوزایجنسیاں )وزیر اعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدرخان نے کہا ہے کہ مودی خطے کا ہٹلر ہے ۔وہ کشمیریوں کی نسل کشی کرنا چاہتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز ترک صحافیوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ان کا کہنا تھاہندوستانی فوج کے مظالم سے انسانیت بھی شرما گئی ہے ۔ مقبوضہ کشمیر میں اب تک ایک لاکھ انسان شہید کیے جاچکے ۔قابض افواج نے سات سال سے لیکر 80 سال تک عمر کی دس ہزار خواتین کی عصمت دری کی۔10 ہزار خواتین آدھی بیوہ ہیں جن کے خاوند لاپتہ ہیں، ان کے بارے میں کوئی علم نہیں زندہ ہیں یا نہیں۔ انہوں نے کہا کشمیر کا مسئلہ حل نہ ہونے کی وجہ سے نہ صرف جنوبی ایشیا بلکہ پوری دنیا کا امن دائو پرلگا رہے گا۔انسان دوست ممالک ادارے کشمیریوں کی مدد کیلئے آگے آئیں۔ دریں اثناء کشمیر کونسل یورپ کے چیئرمین علی رضا سید سے ٹیلیفون پر بات چیت کرتے ہوئے راجہ فاروق حید ر نے کہا یورپی پارلیمنٹ میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر بحث اور کشمیری عوام کی مرضی کے مطابق اس کے مستقل حل کیلئے آواز اٹھانے پر یورپین پارلمینٹیرینز کے شکر گزار ہیں ۔ترک صحافیوں نے کشمیر ہائوس اسلام آباد میں صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان سے بھی ملاقات کی۔ اس موقع پر صدر آزاد کشمیر نے کہا بھارت اس وقت مقبوضہ کشمیر میں جو کچھ کر رہا ہے وہ نیو ورلڈ آرڈر کو دفن کرنے کے مترادف ہے ۔ بھارت کے ان اقدامات کا اگر نوٹس نہ لیا گیا تو جنوبی ایشیاء میں تباہ کن جنگ کو کوئی نہیں روک سکے گا اور اگر یہ جنگ ہوئی تو اس کی تباہ کاریوں سے دنیا کی ایک تہائی آبادی متاثر ہو گی۔ انہوں نے کہا اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل مقبوضہ کشمیر میں سنگین انسانی بحران کو ختم کرانے ، نسل کشی رکوانے اور جنوبی ایشیا میں جنگ کے خطرات کو ٹالنے کیلئے اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے میں ناکام رہی ہے ۔ انہوں نے ترک صحافیوں کو مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورتحال سے بھی آگاہ کیا۔انہوں نے ترک عوام خاص طور پر صدر طیب اردوان کی طرف سے کشمیر ی عوام کے ساتھ یکجہتی اور ہمدردی کا اظہار کرنے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ آزادکشمیر کے عوام2005ء کے زلزلے کے بعد ترک عوام کی طرف سے فراہم کی جانے والی فراخدلانہ مدد کو کبھی فراموش نہیں کریں گے ۔