واشنگٹن( آن لائن ) امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے بھی مودی حکومت کا چہرہ آشکار کر دیا، اخبار کا کہنا ہے کہ نریندر مودی کے بھارت میں مسلمان عدم تحفظ کا شکار ہو گئے ہیں، مسلمانوں کو پارکوں اور کھلی جگہوں پر نماز جمعہ کی اجازت نہیں، مسلمان گھروں سے نکلتے وقت روایتی لباس بھی نہیں پہن سکتے ، امریکی اخبار نے لکھا مسلمان گھروں سے نکلتے وقت جینز اور ٹی شرٹ پہننے پر مجبور ہیں، 20 کروڑ مسلمان مودی کے دوبارہ منتخب ہونے پر خوف زدہ ہیں، اخبار نے لکھا بھارت کی آبادی کا 14 فی صد 20 کروڑ مسلمانوں پر مشتمل ہے ، مودی کی بی جے پی میں کوئی مسلمان رکن پارلیمنٹ نہیں، دوسری طرف بی جے پی کے رہنما مسلمان دشمن سرگرمیوں اور بیانات میں پیش پیش ہیں،مودی نے بھارت کو سیکولر کے بجائے ہندو سٹیٹ میں بدل دیا ہے ، گائے کے تحفظ کے نام پر ہجوم نے مسلمانوں کو تشدد کر کے قتل کیا۔عالمی تنظیم تھامس رائٹرز فانڈیشن کی جانب سے ایک سروے رپورٹ جاری کی گئی جس کے مطابق مودی کا بھارت دنیا میں خواتین کے لیے سب سے زیادہ خطرناک ملک بن گیا ہے ۔