میکسیکو سٹی(نیٹ نیوز) میکسیکو میں ایک میئر نے غیر معمولی سماجی تجربے کیلئے معذور شخص کا روپ دھار لیا تاکہ سماجی بہبود کے سرکاری اداروں کے افسران اور اہلکاروں کا رویہ دیکھ سکیں۔کوہوٹیماک کے میئر کارلوس ٹینا کو معذوروں کی جانب سے مسلسل شکایات موصول ہو رہی تھیں،جس پر وہ معذور کا بھیس بدل کر مختلف علاقوں میں گئے اور سرکاری اہلکاروں سے مدد مانگتے رہے ۔انہوں نے چہرے کو ڈھانپا، ہیٹ پہنا، کان پر پٹی باندھی تاکہ پہچانے نہ جا سکیں، وہیل چیئر پر بیٹھ کر وہ سماجی ترقی کے ہیڈ آفس پہنچے اور مفت کھانے کی فرمائش کی جسے دینا ادارے کا فرض تھا، لیکن ادارے نے نہ صرف کھانا دینے سے انکار کر دیا بلکہ انکی تذلیل بھی کی۔کارلوس خود اپنے دفتر بھی گئے لیکن وہاں بھی شنوائی نہ ہوئی۔ کارلوس کو احساس ہوا کہ عوام درست کہہ رہے ہیں، انہوں نے موقع پر ہی اپنی شناخت ظاہر کی جس پر لوگ حیران رہ گئے ۔کارلوس نے دو ماہ تک اداروں کی چیکنگ کی، بعد ازاں متعلقہ اداروں کے افسران کو دفتر بلا کر سخت وارننگ دی جسکے بعد اب معاملات درست طریقے سے چل رہے ہیں۔