لاہور(نمائندہ خصوصی سے ،خصوصی نمائندہ، نیوز ایجنسیاں )وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ میڈیا ریاست کا اہم ستون ہے اورجہاں ورکنگ صحافی کا جائز مسئلہ ہو گا میں صحافیوں کیساتھ کھڑا ہونگا جبکہ انٹرنیشنل فیڈریشن آف جرنلسٹس کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل جیریمی ڈئیر نے کہا ہے کہ پاکستان میں شعبہ صحافت سے وابستہ افراد کو چیلنجز کا سامنا ہے ۔گزشتہ روز لاہور پریس کلب میں پی ایف یو جے ،پی یو جے اور پریس کلب کے زیر اہتمام کانفرنس سے خطاب،جیریمی ڈئیر کیساتھ لاہور پریس کلب میں ملاقات، اپنے بیان اور میڈیا سے گفتگو میں فیاض الحسن چوہان نے مزید کہا کہ چیف جسٹس پاکستان صحافی عزیز میمن کے قتل پر بلاول بھٹو اور مقامی ایم این اے کو شامل تفتیش کریں۔ آل شریف نے اپنی والدہ کولندن اسلئے بلایا کہ اب کبھی واپس نہیں آنا جبکہ مولانافضل الرحمٰن کو دھرنے کا بخار ہونے والاہے ۔ ماضی کے کرپٹ حکمرانوں نے 24000 ارب کا مقروض ملک عمران خان کے حوالے کیا ، سفارتی اور معاشی محاذ پر پاکستان کو تنہا کرنے میں کوئی کسر نہ چھوڑی گئی لیکن وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں پاکستان دن بدن بہتری کی طرف جا رہا ہے ،گزشتہ سات ماہ میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں 66 فیصد اضافہ ہوا ۔ سردار عثمان بزدار کی قیادت میں اینٹی کرپشن پنجاب نے صرف جنوری میں 6 ارب سے زائد کی ریکارڈ ریکوری کی ۔ پہلی بار بین الاقوامی کھلاڑی پی ایس ایل کے تمام میچز پاکستان میں کھیل رہے ہیں۔اپوزیشن پاکستان کی ترقی میں اپنا حصہ ڈالے ۔رانا ثنااﷲ ،عظمیٰ بخاری ،رانا مشہود اورملک احمد خان روتے ہیں کیونکہ انہیں پتہ ہے کہ انکی قیادت نے واپس نہیں آنا۔ عزیز میمن نے دو ہفتے پہلے مجھ سے رابطہ کیا تھا جبکہ سندھ میں بلاول زرداری کے جلسے کی حقیقت کو بے نقاب کیا۔بلاول باتیں یورپ کی کرتے ہیں، لیکن سندھ میں غریب کی جان و مال کی کوئی وقعت نہیں۔ 6000 صحافیوں کو جلد انصاف صحت کارڈ تقسیم کئے جائینگے ۔ بزدار حکومت نے 77 کروڑ تک کے واجبات میڈیا ہاؤسز کو ادا کئے ۔ کانفرنس سے خطاب میں جیریمی ڈئیر نے مزید کہا کہ حکومتوں کی وجہ سے پاکستانی میڈیاا نڈسٹری مالی بحران میں مبتلا ہے ۔گورنر پنجاب، سپیکر صوبائی اسمبلی ،وزیر اطلاعات پنجاب اور دیگر مکاتب فکر سے وابستہ شخصیات سے ملاقات کرکے پاکستانی میڈیا پرسنز کے مشکلات ، مصائب کے خاتمے کیلئے بات کی ہے ۔قوی امید ہے کہ آنیوالے دنوں میں معاملات بتدریج بہتر ہونگے ۔ کانفرنس میں سیکرٹری اطلاعات پنجاب راجہ محمد جہانگیر، ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ پنجاب اسلم ڈوگر، پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے سیکرٹری جنرل رانا محمد عظیم ، سیکرٹری اطلاعات احتشام الحق صدرپنجاب یونین آف جرنلسٹ شہزاد حسین بٹ، جنرل سیکرٹری اشرف مجید، لاہور پریس کلب کے صدر ارشد انصاری، سیکرٹری بابر ڈوگر، جوائنٹ سیکرٹری حافظ فیض احمد، ممبر گورننگ باڈی شاہد چوہدری ، سینئر اخبار نویس میاں رئوف،قاضی ندیم اقبال، عامر سہیل، صائمہ نواز، ناصرہ عتیق، فاروق جوہری و دیگر بھی شریک تھے ۔