لاہور،لندن،اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں)صدر مسلم لیگ (ن) شہباز شریف نے بھارت میں مسلمانوں کے قتل عام، مذہبی مقامات کی بے حرمتی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے مودی نے گجرات کی تاریخ نئی دہلی میں دہرائی،بھارتی مسلمانوں کے منظم قتل عام سے ہٹلر کے دورکی یاد تازہ ہوگئی،مسلمانوں کے قتل عام سے مودی حکومت کا دیگر ممالک کی اقلیتوں سے ہمدردی کا ناٹک پوری طرح بے نقاب ہوگیا،حکومت معاملہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن اور اوآئی سی میں اٹھائے ۔اپوزیشن لیڈر نے کہاجو حکومت اپنے ملک کی اقلیتوں کا تحفظ نہ کرسکے وہ کسی دوسرے ملک کی اقلیتوں کے تحفظ کی بات کس منہ سے کرسکتی ہے ؟، دہلی میں خونریزی ارویند کیجروال کی حکومت پر سیاہ دھبہ ہے ،امریکہ کو سوچنا ہوگا وہ تباہ کن ہتھیار جنونی کے ہاتھ میں دے رہا ہے جس کے پاگل پن سے خطہ پہلے ہی خطرے سے دوچار ہے ،عالمی برادری بھارت میں مسلمانوں کے قتل عام، اقلیتوں پر جبروتشدداور مذہبی مقامات کی بے حرمتی کا نوٹس لے ،ہندتوا کا خونی کھیل رکوایااورجرائم میں ملوث عناصر کو گرفتار کرکے سزا دی جائے ۔سوشل میڈیا پر جاری بیان میں انہوں نے کہا ڈاکٹروں کی ہدایت کے مطابق نوازشریف کاعلاج ہورہاہے ،ان کاعلاج اولین ترجیح ہے ، نواز شریف کی زندگی پاکستانی عوام کی امانت ہے ، کسی کو خیانت نہیں کرنے دیں گے ۔حسد وانتقام کی آگ میں جلتا اور سہما ہوا وزیراعظم سیاسی مخالفین کو جھوٹے مقدمات میں جیل بھیج کر خودکو محفوظ سمجھتا ہے ،یہ شخص اپنی سیاہ کاریوں اور چوریوں کے انجام سے ڈر کر شتر مرغ کی طرح ریت میں سر چھپا کر محفوظ ہونا چاہتا ہے ، اپنی ذات کے لئے جینے والا خود غرض کسی کو عزت دے سکتاہے نہ انسانی رشتوں کے تقدس سے آشنا ہے ،کرپٹ اور خوفزدہ شخص نے میرے پاکستان کو دیوالیہ اور کنگال کردیا، ایسے قومی مجرموں کے انجام کی مثالوں سے تاریخ بھری پڑی ہے ۔شہبازشریف نے کرونا وائرس سے نمٹنے کے لئے بھی ہنگامی اور ٹھوس اقدامات کا مطالبہ کیا۔