لاہور ،کراچی(اپنے نیوز رپورٹر سے ،سٹاف رپورٹر) احتساب عدالت لاہور میں نندی پور پاور پروجیکٹ میں 22کروڑ روپے فرنس آئل چوری کیس میں عدالت نے ملزم اخلاق شاہ کے مزید 07 روزہ جسمانی ریمانڈ میں توسیع کر دی۔احتساب عدالت کے جج محمد وسیم اختر نے ملزم کو دوبارہ 14 ستمبر کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیدیا۔ نیب پراسیکیوٹر کی جانب سے ملزم کے مزید 15 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی جبکہ ملزم کی جانب سے پلی بارگین کی درخواست جمع کرا دی گئی۔ ریفرنس کے مطابق ملزمان نے نندی پور پاور پلانٹ سے 145 آئل ٹینکر ز غائب کر دئیے تھے ، دیگر ملزمان میں قیصر عباس، دلبر حسین ڈوگر اور رانا مہتاب عالم جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں ہیں جن میں رانا مہتاب اور دلبر ڈوگر نے بھی نیب کو پلی بارگین کی درخواست دے رکھی ہے ۔ وعدہ معاف گواہ بننے والے قیصر عباس کی نشاندہی پر مبینہ طور پر ملزمان کو گرفتار کیا گیا تھا۔ جج چوہدری امیر محمد خان پر مشتمل احتساب عدالت لاہور نے جعلی بنک کے ذریعے شہریوں سے 52 ملین فراڈ سکینڈل کیس میں دو ملزمان حامد رسول اور محمد عارف خان کے مزید 14 روزہ جسمانی ریمانڈ میں توسیع کر دی اوردوبارہ 21 ستمبر کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیدیا، نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا ملزم سے ابھی مزید تفتیش کرنا باقی ہے ۔ ملزمان میانوالی میں یو بی ایل کی برانچ میں ملازم تھے اور متوازی بنک قائم کرکے لوگوں سے کڑوڑوں روپے کا فراڈ کیا۔ ادھر احتساب عدالت کراچی نے جامشورو جوائنٹ وینچر لمیٹڈ کمپنی میں 17 ارب روپوں کی کرپشن کیس کی سماعت 14 ستمبر تک ملتوی کردی ۔ہفتے کو سماعت پرڈاکٹر عاصم، بشارت مرزا،شعیب وارثی اور دیگر ملزمان عدالت میں پیش ہوئے ۔ عدالت نے گواہ کی عدم حاضری پر برہمی کا اظہارکیااور ریمارکس دیئے کہ کیس کو سالوں ہوچکے ، کیس سست روی کا شکار ہے ، گواہ کی عدم حاضری کے باعث سماعت بغیر کسی کاروائی کے 14 ستمبر تک ملتوی کردی گئی۔ ڈاکٹر عاصم حسین سمیت دیگر ملزمان ضمانت پر رہا ہے ملزمان پر نیب کی جانب سے 17 ارب روپوں کی کرپشن کا الزام ہے ۔ادھر احتساب عدالت نے ساحل سمندر کی اراضی کی غیر قانونی الاٹمنٹ ریفرنس کی سماعت 5 اکتوبر تک ملتوی کردی۔چیئرمین پاک سرزمین پارٹی سید مصطفیٰ کمال، سابق ڈی جی ایس بی سی اے افتخار قائمخانی، فضل الرحمان،ممتاز حیدر، نذیر زرداری عدالت میں پیش ہوئے دوران سماعت عدالت نے پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ مفرور ملزمان کی کیا رپورٹ ہے نیب پراسیکیوٹر نے بتایا مفرور ملزمان کے گھر پر نوٹس ارسال کردیے محسوس ہوتا کہ کچھ ملزمان پاکستان سے باہر ہیں۔وکیل زین ملک نے کہا ہمیں دیکھنا ہوگا یہ ریفرنس قابل سماعت ہے بھی یا نہیں۔وکیل عامر نقوی نے استدعا کی سب سے پہلے ہمیں ریفرنس کے قابل سماعت ہونے کے متعلق دلائل کی اجازت دی جائے ،ریفرنس میں کئی جگہ پر تضاد ہے ،وقت دیا جائ۔ مصطفیٰ کمال کے وکیل حسان صابر نے بھی عدالت سے مہلت طلب کی جس پرعدلت نے سماعت 5 اکتوبر تک ملتوی کردی۔ مصطفیٰ کمال اور دیگر کے خلاف ساحل سمندر پر ساڑھے پانچ ہزار مربع گز زمین کی غیرقانونی الاٹمنٹ کا الزام ہے ۔