لاہور(جوادآراعوان)مسلم لیگ (ن)کے انتخابی امیدوار جو سابق نااہل وزیراعظم اور احتساب عدالت سے سزا یافتہ مجرم نواز شریف کی لندن سے پاکستان واپسی پران کی گرفتاری پر ہنگامہ آرائی کرنے کی کوشش کریں گے ، انہیں قانونی کارروائی کے بعد الیکشن کمیشن کے ذریعے نااہل قرار دیدیا جائے گا۔اعلیٰ سرکاری ذرائع نے روزنامہ 92نیوز کو بتایا کہ نواز شریف لاہور لینڈ کرتے ہیں تو ان کو متعلقہ اتھارٹیز گرفتار کرنے کے بعد ہیلی کاپٹر کے ذریعے اڈیالہ جیل راولپنڈی پہنچا دیں گی ۔ ذرائع نے بتایا کہ انٹیلی جنس رپورٹس کے مطابق مسلم لیگ (ن)کے کچھ کارکنان کو بھاری معاوضہ اور مراعات کا لالچ دیکر نواز شریف کی آمد کے موقع پر ہنگامہ آرائی کیلئے تیار کیا گیا ،جن کارکنان کو ہنگامہ آرائی کیلئے تیار کیا گیا ، انکا تعلق مریم کیمپ سے ہے ،اس موقع پر کرایے پر احتجاج کیلئے بھی پنجاب کے دور دراز علاقوں سے لوگوں کو لانے کا پلان بنایا گیا ہے ۔کرایے کے مظاہرین کو پانچ ہزار فی کس ،ٹرانسپورٹ اور کھانا فراہم کیا جائے گا۔ مریم کیمپ نے کم ازکم دس ہزار لوگ جمع کرنے کا ٹارگٹ دے رکھا ہے ۔ پارٹی کے بیشتر رہنمائوں کی طرف سے اس معاملے سے دور رہنے کی وجہ سے کرایے پر لوگ اکٹھا کر کے یہ ٹارگٹ پورا کرنے کا پلان بنایا گیا ہے ۔مسلم لیگ (ن)کے صدر شہباز شریف اپنے بڑے بھائی کی آمد پر کسی بھی ہنگامہ آرائی کیخلاف ہیں ۔خفیہ اداروں کی اطلاعات کی بنیاد پر متعلقہ اداروں نے مریم کیمپ کے رہنمائوں اور ان کے قریبی لوگوں کی نگرانی شروع کر دی ہے تاکہ شرپسندی کی کسی بھی ممکنہ کارروائی کیخلاف پیشگی ایکشن لیا جا سکے ۔ ذرائع نے بتایا کہ نواز شریف کی گرفتاری کے سلسلے میں سیکورٹی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے انتظامات مکمل کر لئے ہیں ۔ممکنہ ہنگامہ آرائی کی صورت میں گڑ بڑ کرنے والوں سے آہنی ہاتھ سے نمٹا جائے گا۔