لاہور(سلیمان چودھری )ٹیچنگ ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کی شدید قلت پید ا ہو گئی ہے ، گریڈ 18میں 609سپیشلسٹ ڈاکٹروں کی ریگو لر سیٹیں عرصہ داراز سے خالی پڑی ہیں ، ڈاکٹروں کی سیٹیں خالی ہونے کی وجہ سے مریضوں کا علاج معالجہ شدید متاثر ہو رہا ہے ۔ سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن نے سیکرٹری پرائمری اینڈ ہیلتھ کئیر کو مراسلہ لکھا ہے کہ پنجاب پبلک سروس کمیشن کو ڈاکٹروں کی مستقل بھرتی کے لئے درخواست بھجوا دی جائے ۔ سرکاری دستاویز کے مطابق سب سے زیادہ انستھیزیا شعبے کی 179سپیشلسٹ ڈاکٹروں کی سیٹیں خالی پڑ ی ہیں،76ریڈیالوجسٹ ، 22ماہر نفسیات، 25جنرل سرجن ، 10یورلوجسٹ ، 6ٹی بی چسٹ ، 21کارڈیالوجسٹ، 2پلاسٹک سرجن، 3ہیما ٹالوجسٹ، 1مالیکولرسپیشلسٹ ، 1پیڈ یاٹرک سرجن ، 10ای این ٹی سپیشلسٹ ، 8ماہر امراض چشم اور14آرتھوپیڈ ک سرجن شامل ہیں ، ایک برن سپیشلسٹ ، 5ڈرماٹولوجسٹ ،4آئی سی یو سپیشلسٹ ، 1ایکو سپیشلسٹ ،2 پلمانولوجسٹ، فزیو تھراپسٹ 2، فزیالوجسٹ 1، تھروکس سرجن 1، ایک بحالی معذوراں پیڈ ز فزیشن ، پیڈ ز پتھالوجسٹ ، چائلڈ سائیکاٹرسٹ کی ایک ایک ، نیورولوجسٹ 6، جنرل فزیشن29 کی سیٹیں خالی پڑی ہیں ، پتھالوجسٹ 79، جنرل پیڈیاٹریشن 13، گائنی 22، نیوروسرجری 11، نیفرالوجسٹ 13، چیسٹ سرجن ، چسٹ فزیشن ، ہسپاٹالوجسٹ کی ایک ایک سیٹ خالی پڑی ہے ۔ کارڈیک انستھیزیا دو، ایمرجنسی فزیشن 10، ایمرجنسی سرجن 13، کڈنی ٹرانسپلانٹ ،دو پیڈیاٹرک پتھالوجسٹ ، 2آڈیولوجسٹ کی سیٹیں خالی پڑی ہیں ۔ سیکرٹری سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن کا سیکرٹری پرائمری اینڈ ہیلتھ کئیر کو مراسلہ لکھا ہے کہ 609سپیشلسٹ ڈاکٹروں کی سیٹیں عرصہ داراز سے خالی پڑی ہیں تاہم ایڈہاک کی بنیا د پر چند ایک شعبوں میں ڈاکٹروں کو بھرتی کیا ہے لیکن مستقل بھرتی نہ ہونے کی وجہ سے ہسپتالوں میں علاج معالجہ متاثر ہو رہا ہے ، اس لئے سپیشلسٹ کیڈر پرائمر ی اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر کے ماتحت آتا ہے تو اس حوالے سے ایک ریکوزیشن پنجاب پبلک سروس کمیشن کو بھجوائی جائے ۔