اسلام آباد (وقائع نگار،نیوز رپورٹر) دفتر خارجہ کا کہناہے کہ روس اور پاکستان کے دفاعی تعلقات بڑھ رہے ہیں ، دونوں ممالک دفاعی معاملات میں فروغ کیلئے ملکر کام کرینگے ۔ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے ہفتہ وار میڈیا بریفنگ میںکہا کہ پاکستان پرامن ہمسائیگی پر یقین رکھتا ہے ، پاکستان افغانستان میں جاری کشیدگی کے حل کیلئے ہر ممکن اقدامات کریگا۔ انہوںنے کہا کہ بھارت کی جانب سے ریاستی جبر چھپانے کیلئے صحافیوں کو کشمیر نہیں جانے دیا جارہا ، رواں سال اب تک 1400 سے زائد مرتبہ بھارت کی جانب سے سیز فائر معائدے کی خلاف ورزی کی گئی جبکہ بھارتی جارحیت کی وجہ سے 30 شہری شہید ہوچکے ۔انہوںنے کہا کہ علی جہانگیر صدیقی سمیت تمام نان کیرئیر سفیر نئی حکومت آنے کے ساتھ ہی مستعفی تصور ہونگے ، نان کیرئیر سفیروں کی مدت سفارت جاری رکھنے یا ختم کرنے کے حوالے سے فیصلہ نئی حکومت کی صوابدید ہے ۔ ترجمان کا سعودی عرب اور کینیڈا کے درمیان کشیدگی سے متعلق سوال پر کہنا تھا کہ پاکستان سعودی عرب کی حمایت کرتا ہے اور ہمارا ہمیشہ یہی مؤقف رہا ہے کہ کسی بھی ملک کے پاس یہ اختیار نہیں کہ وہ کسی کے داخلی معاملات میں مداخلت کرے ۔ ایک اور سوال پر انہوںنے کہا کہ آئی ایم ایف کے پاس جانے کا فی الحال کوئی فیصلہ نہیں ہوا۔