اسلام آباد، لاہور (وقائع نگار خصوصی ، خبرنگارخصوصی ، 92 نیوز رپورٹ، مانیٹرنگ ڈیسک ، نیٹ نیوز)الیکشن کمیشن کے ارکان کے تقررکیلئے وزیراعظم کا خط چیئرمین سینٹ کو موصول ہو گیا۔ ذرائع کے مطابق مشاورت کیلئے چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی آج سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے ملاقات کریں گے ۔ملاقات میں وزیراعظم کے خط پر غور کیا جائے گا۔ملاقات میں آئندہ کے لائحہ عمل اور اجلاس بلانے پر بات چیت کی جائے گی۔ادھر مسلم لیگ (ن) کے رہنما سردار ایاز صادق کا کہناہے کہ الیکشن کمیشن کو جلد از جلد فعال بنانے کیلئے سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کریں گے ۔لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے سردار ایاز صادق نے کہا عمران خان فارن فنڈنگ کیس کے باعث الیکشن کمیشن کو دانستہ طور پر غیر فعال رکھنا چاہتے ہیں۔ اسلئے الیکشن کمیشن کو جلد از جلد فعال بنانے کیلئے آج سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کریں گے ۔ان کا کہنا تھا نواز شریف کے معاملے پر عمران خان بوکھلاہٹ کا شکار ہیں۔ عمران خان نے خود اپنے وزرا کو بتایا نواز شریف کی صحت ٹھیک نہیں۔ میڈیکل بورڈ نے بتایا نواز شریف کی صحت ٹھیک نہیں۔ کم پلیٹ لیٹس والا مریض بھی چل پھر سکتا ہے ، ہم یہ نہیں چاہتے نواز شریف ہمیں وہیل چیئر پر نظر آئیں۔ان کا کہنا تھا آرمی ایکٹ میں ترمیم کے معاملے پر سپریم کورٹ کے تفصیلی فیصلے کا انتظار ہے ، جس کے بعد مشترکہ اپوزیشن باہمی مشاورت سے اس حوالے سے فیصلہ کرے گی۔جو شخض معاشی اور قانونی ٹیم کو شاباش دے اس پر کیا کہا جا سکتا ہے ۔دریں اثناء چیف الیکشن کمشنراورالیکشن کمیشن کے 2ارکان کے تقررکیلئے پارلیمانی کمیٹی کااجلاس کل طلب کرلیاگیا۔قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق پارلیمانی کمیٹی کااجلاس 3دسمبرکودن 10بجے پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگا۔ چئیرپرسن شیری مزاری کی زیر صدارت پارلیمانی کمیٹی چیف الیکشن کمشنراورسندھ اور بلوچستان سے الیکشن کمیشن کے دو ارکان کے تقررکیلئے ناموں کاجائزہ لے گی۔