لاہور(سٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سرا ج الحق نے کہاہے کہ وزیراعظم اپنے گھر سے احتساب کے آغاز کا وعدہ پورا کریں تاکہ حقیقی احتساب لوگوں کو نظر آئے اور کسی کو یہ کہنے کا موقع نہ ملے کہ صرف اپوزیشن پارٹیوں سے احتساب کے نام پر انتقام لیا جارہاہے ، اربوں کھربوں لوٹنے والوں نے ملکی سیاست کو یرغمال بنارکھاہے ، پانچ سال بعد الیکشن ہوتے ہیں مگر پھر وہی چہرے نئی پارٹیوں اور جھنڈوں کے ساتھ اقتدار کے ایوانوں پر قابض ہو جاتے ہیں ،نظریاتی قیادت کے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا ، جماعت اسلامی سب کا بے لاگ احتساب چاہتی ہے ، کرپشن کیخلاف جماعت اسلامی کی جدوجہد کامیابی سے آگے بڑھ رہی ہے ، حکومت پانچ ماہ میں کوئی ریکوری نہیں کر سکی ، عدالتوں میں پیشیوں پر آنے جانے سے ملک و قوم کو کچھ حاصل نہیں ہو رہا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں جاری مرکزی تربیت گاہ کے شرکاسے خطاب اور میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ، سراج الحق نے کہا پانچ ماہ سے زائد عرصہ گز رچکا مگر ابھی تک حقیقی احتساب شروع نہیں ہوسکا ، نوازشریف نااہل ہو ئے مگر پانامہ کے دیگر 436 ملزموں کو طلبی کا سمن تک جاری نہیں ہوا،سراج الحق نے ادویات کی قیمتوں میں پندرہ سے بائیس فیصد تک اضافے کی شدید مذمت اور اضافہ واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ادویات کی قیمتیں پہلے ہی زیادہ تھیں حکومت ان میں کمی کرنے کی بجائے مزید مہنگا کر رہی ہے ،گزشتہ الیکشن میں ہم نے ایم ایم اے کے پلیٹ فارم سے حصہ لیاتھا ، جماعت اسلامی کی شوریٰ نے فیصلہ کیا ہے کہ آئندہ جماعت اسلامی اپنے جھنڈے اور نشان پر الیکشن لڑے گی ۔