لاہور(خبرنگارخصوصی،کامرس رپورٹر، 92 نیوز رپورٹ،صباح نیوز)وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں ون ونڈو سمارٹ سروس سنٹرکا افتتاح کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے سمارٹ سروس سنٹر میں فراہم کی جانے والی سہولتوں کا جائزہ لیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے سمارٹ سروس سنٹر میں تمام سہولتیں یکجا کرنے کے اقدام کو سراہتے ہوئے کہا کہ کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے کے لئے ون ونڈو سمارٹ سروس سنٹرکا قیام خوش آئند ہے ۔ صدر لاہورچیمبر آف کامرس عرفان اقبال شیخ نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو ون ونڈو سمارٹ سروس سنٹرمیں فراہم کردہ سہولتوں کے بارے میں بریفنگ دی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے ہمیشہ مجھ پر اعتماد کیا ہے اس لیے ہمیشہ فرنٹ فٹ پر کھیلوں گا۔ تاجر برادری کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے ، بڑھتے مسائل کو حل کرنے کیلئے نیا شہر آباد کرنے کا فیصلہ کیا ۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ نیب نے مجھے بطور ملزم نہیں بطور گواہ بلایا ۔ تمام سوالوں کے جواب دوں گا، نیب کو مطمئن کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی توجہ جنوبی پنجاب کی ترقی پر ہے ، کم ترقی یافتہ علاقے ہماری ترجیح ہیں، جنوبی پنجاب کی ترقی کیلئے سیکرٹریٹ فعال ہوگیا۔ماڈل پولیس سٹیشن کے منصوبے کو آگے بڑھائیں گے ۔نیب نے مجھے مجرم کی حیثیت سے نہیں بلایا بلکہ میں نیب کے سامنے خود پیش ہوا، نیب جب بھی بلائے گا، خود جاؤں گا اور نیب کے تمام سوالات کے جواب دوں گا۔علاوہ ازیں وزیراعلیٰ سے گزشتہ رات سپیکرقومی اسمبلی اسد قیصرکی قیادت میں اراکین قومی اسمبلی نے ملاقات کی اوروزیراعلیٰ پر اعتمادکا اظہار کیا اور وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے خلاف منظم پراپیگنڈے کی مذمت کی۔اراکین قومی اسمبلی نے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ عثمان بزدار وزیراعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق سرگرم عمل ہیں۔عثمان بزدار نے پنجاب کو یکساں ترقی کے ویژن پر گامزن کیا ہے ۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اراکین قومی اسمبلی کی آمد کا خیر مقدم کرتے ہیں۔پنجاب کے اراکین قومی اسمبلی میرے لئے بے حدقابل احترام ہیں۔پنجاب کے اراکین قومی اسمبلی کا اعتماد میرے لئے اعزاز ہے ۔وزیراعلیٰ آفس کے دروازے سب کے لئے کھلے ہیں۔ پنجاب حکومت اوراراکین قومی اسمبلی کے درمیان ایسے رابطوں کا سلسلہ مستقل جاری رہے گا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار فرداً فرداً ہر رکن قومی اسمبلی کی نشست پر گئے اور حال احوال دریافت کیا۔