اسلام آباد(خصوصی نیوز رپورٹر)پاک افغان تجارت میں اضافہ اور تجارت کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کیلئے اگلے ماہ مذاکرات کابل میں ہوں گے ، پاکستان کی طرف سے مشیر تجارت کی سربراہی میں وفد افغان حکام سے مذاکرات کرے گا۔اس سلسلے میں جمعہ کو مشیر تجارت عبدالرزاق دائود سے افغان ٹیکنیکل ٹیم کے وفد کی ملاقات ہوئی۔ افغان ٹیکنیکل ٹیم کے وفد میں تجارت، فنانس، توانائی، سمیت دیگر مختلف نمائندے بھی شامل تھے ۔ مشیر تجارت عبدالرزاق دائود نے افغان ٹیکنیکل ٹیم کو خوش آمدیدکہتے ہوئے کہنا تھا کہ افغان صدر اشرف غنی کے دورہ پاکستان کے بعد ٹیکنیکل ٹیم کے وفد کا دورہ اہمیت کا حامل ہے اس سے دونوں ممالک کے مابین تجارتی تعلقات میں مزید بہتری ہوگی، گذشتہ برس پاک افغان دوطرفہ تجارت 1751 ملین ڈالرز تھی جس کو مزید بڑھایا جائے گا۔مشیر تجارت نے کہا کہ پاک افغان ترجیحاتی تجارتی معاہدے کا ڈرافٹ افغانستان کو بھیجا ، افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے معاہدے پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔