لاہور(میاں رؤف) آئی جی پنجاب نے دھاتی ڈور سے اموات روکنے کیلئے بڑا فیصلہ کر لیا، پتنگ بازوں کو گرفتار کرنے والی پولیس ٹیم کو خصوصی انعام دینے کے علاوہ پتنگ بازی سے شہری کی ہلاکت پر متعلقہ علاقہ کے ایس ایچ او کے علا وہ سرکل ڈی ایس پی اور ایس پی بھی سزاکے عمل سے گزریں گے ۔ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے ایس پی اور ڈی ایس پی رینک کے افسروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ سب اچھا ہے کی رپورٹس پر کان دھرنے کے بجائے دفاتر سے نکل کر فیلڈ میں جائیں۔ رات کے اوقات بالخصوص سحر سے طلوع صبح تک شہر کی اہم شاہرات اور گردونواح کا دورہ کریں۔ ایس ایچ اوز اور ماتحت پولیس پارٹی کے گشت کی رپورٹس کا خود جائزہ لیں کیونکہ زیادہ تر حادثات رات کے اوقات میں شہر کی بڑی سڑکوں کے قریب ہوتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب نے واضح کیا ہے کہ پتنگ بازوں کو گرفتار کرنے والی پولیس ٹیم کو نقد انعام سے نوازا جائے گا ۔ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے کہا ہے کہ ماضی قریب میں پتنگ با زوں کے خلا ف ڈرون کیمرے استعمال کرنے کی ہدایات دی گئی تھیں، ان پرعمل درآمد ہو رہا ہے کہ نہیں، اس ضمن میں بھی رپورٹس تسلسل کے ساتھ بھجوائی جائیں ۔واضح رہے کہ پتنگ بازی کے سبب رواں سال ڈولفن اہلکار سمیت 8شہری جان سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔