لندن(مانیٹرنگ ڈیسک،92نیوزرپورٹ، نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ یورپ میں کچھ لوگ پشتونوں میں مخصوص سوچ اجاگر کررہے ہیں ، ہم متحد ہوجائیںتو انتشار کی خواہش مند قوتیں ناکام ہوجائیں گی۔انہوںنے برطانیہ میں متحدہ پشتون سوسائٹی کی افتتاحی تقریب میں شرکت کی اور پاکستانی برادری سے خطاب کیا۔ تقریب میں پشتون شہریوں نے بڑی تعداد موجود تھی ، وزیر خارجہ کو روایتی پشتون پگڑی بھی پہنائی گئی۔ شاہ محمود قریشی نے کہا 15لاکھ پاکستانی صرف برطانیہ میں رہائش پذیر ہیں، جوایک آواز بن جائیں تو انتشار کا بیج بونے کی خواہش مند قوتیں کبھی کامیاب نہیں ہوسکتیں،برطانیہ اوریورپی یونین میں ایک خاص سوچ کو ہوا دینے کی کوشش کون کررہا ہے ، ان کے مقاصد کیا ہیں اور یہ کیا حاصل کرنا چاہتے ہیں؟ان سوالات کی تہہ تک جانا ہوگا۔ این این آئی کے مطابق وزیر خارجہ نے میڈیا کی آزادی پر عالمی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ترقی پذیر ممالک کی اکثریت میں سے پاکستانی میڈیا آج سب سے زیادہ آزاد، متنوع اور طاقت ور ہے ، حکومت صحافیوں کو درپیش مسائل کے حل اور آئین میں اظہار رائے کی دی گئی ضمانت کے مطابق قوانین اور اس کے عملی اطلاق کے ذریعے میڈیا صنعت کی بہتری کیلئے ٹھوس اقدامات کررہی ہے ۔ انہوںنے کہا فی زمانہ سنسر شپ کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ،ہم میں تنقید سننے کا حوصلہ ہے ۔ شاہ محمود سے سرمایہ کاروں کے وفد نے بھی ملاقات کی۔ وزیر خارجہ نے اپنی کینیڈین ہم منصب کرسٹینا فری لینڈ سے ملاقات کی اور دو طرفہ امور پر تبادلہ خیال کیا۔ ادھر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے برطانیہ کے شاہی محل کنسنگٹن پیلس میں برطانوی شہزادہ چارلس سے ملاقات کی ۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ ہم ڈیوک اینڈ ڈچز آف کیمبرج شہزادہ ولیم اور ان کی اہلیہ کیٹ مڈلٹن کے دورہ پاکستان کے منتظر ہیں ۔شہزادہ چارلس نے کہا ان کی دورہ پاکستان کی یادیں ابھی تک تازہ ہیں اور وہ دوبارہ دورہ کرنے کے خواہاں ہیں ۔ شہزادہ چارلس نے وزیر اعظم عمران خان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔ شاہ محمود قریشی کی دولت مشترکہ کی سیکرٹری جنرل بیرونز پیٹریشیا سکاٹ لینڈ سے بھی ملاقات ہوئی، دوران ملاقات دو طرفہ باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا،سیکرٹری جنرل نے کامن ویلتھ کی سالگرہ کے موقع پر یادگاری ڈاک ٹکٹ کے اجرا پر پاکستان کا شکریہ ادا کیا،شاہ محمود قریشی نے دولت مشترکہ کی سیکرٹری جنرل کو پاکستان کی پارلیمانی کرکٹ ٹیم کی برطانیہ آمد کے حوالے سے آگاہ کیا۔