سرینگر(این این آئی) بھارت کی معروف مصنفہ اور دانشورارون دھتی رائے نے کہاہے کہ کشمیر ایک پریشر کوکر کی طرح ہے جہاں کسی بھی وقت کچھ بھی ہوسکتا ہے ۔ ایک انٹرویو میں دھتی رائے نے کہا بھارت میں سیاسی صورتحال کی وجہ سے ہندو قوم پرستی میں اضافہ ہوگیاہے ،نیوز چینلز پر 24 گھنٹے قوم پرستی کا پرچار کیا جارہا ہے جبکہ ان چینلز کو حقیقت کا احساس بھی نہیں۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر کو بھارت اور پاکستان کے درمیان فلیش پوئنٹ کے بجائے ایک بفرزون ہونا چاہے ۔کشمیر میں حقیقی، جعلی اوردرپردہ دہشت گرد گروپس موجودہیں۔ پلوامہ حملہ ایک جعلی آپریشن تھا جس کا بھارتی فوج کے سربراہ کو پہلے سے علم تھا۔ پلوامہ حملے کو انٹلی جنس کی ناکامی قراردیاگیا جس کا اعتراف گورنر کشمیر نے بھی کیااور اس کے بعد سب چپ ہوگئے ۔ نریندر مودی نے اپنی فورسز کی تصاویر کو انتخابی مہم چلانے کے لے استعمال کیا جو انتہائی خوفناک ہے ۔ کشمیر میں دودھ لینے جاتے ہوئے بھی لوگو ں کی تلاشی لی جاتی ہے ایسے میں اتنی مقدار میں بارود یہاں کیسے پہنچا جبکہ کانوائے اور اسکا راستہ ہمیشہ محفوظ بنایا جاتا ہے ۔ اصل میں ہوا کیاہے کوئی بتانے کوتیار نہیں۔