لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر مملکت پارلیمانی امورعلی محمدخان نے کہاہے کہ پاکستان کی سیاسی تاریخ کا آج بہت اہم دن ہے جب میں کابینہ کا رکن بنا تو عمران خان نے دوسرے یا تیسرے اجلاس میں کہا تھا کہ میں سیاست کرنے نہیں بلکہ اس ملک کو ٹھیک کرنے آیا ہوں میں اپنی حکومت قربان کردونگا لیکن کسی کرپٹ کو نہیں چھوڑوں گا ۔ہمارے ہاں ہمیشہ احتساب ہوتا ہے لیکن کوئی اور کرتاہے موجودہ حکومت واحد ہے ۔ پہلی بار ایک وزیر اعظم نے شوگر سیکنڈل کی انکوائری کرائی ماضی میں کسی نے نہیں کیا۔وزیر صنعت و تجارت پنجاب میاں اسلم اقبال نے کہا کہ حکومت نے مارکیٹوں اورشاپنگ مالز میں خریداری کا وقت رات دس بجے تک کرنے کا فیصلہ بڑی سوچ وبچارکے بعد کیا ہے کیونکہ لوگ صبح دیر سے اٹھتے ہیں وہ2بجے کے بعد بازاروں کا رخ کرتے ہیں اس لئے وقت بڑھایا ۔ بازاروں کا رش کم کرنے کیلئے وقت بڑھایا ۔یہ رعایت عید تک ہے ، اس کے بعد بازارو ں کی ٹائمنگ پھر پانچ بجے کردی جائے گی۔ماہرامراض خون ڈاکٹر طاہر شمسی نے کہا کہ جب سے لاک ڈائون کھلا، اس کے بعد سے اصل تصویر سامنے آناشروع ہوئی ہے ۔ لاک ڈائون میں نرمی کا فیصلہ حکومت کا ہے جس پرعمل کرینگے لیکن اس میں بھی دورائے نہیں کہ کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوناہی ہونا ہے کون ساسماجی فاصلہ، یہ تو اس وقت نہیں ہوا جب ابتدا میں فیصلہ کیا گیا۔ پلازمہ منتقلی کی ہرمریض کو ضرورت نہیں ہوگی ۔ سابق وزیر خارجہ خورشید محمود قصوری نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے بارے سوال کے جواب میں کہا کہ بھارت تواتر سے ایل او سی پر حملے کررہاہے جس میں بے گناہ شہری شہید ہورہے ہیں ا ا نہوں نے کہاکہ اگر بھارت چین اور پاکستان سے چھیڑ چھاڑ کریگا تواس کا نقصان بھارت کوہی ہوگا۔کیونکہ امریکہ اپنے ملک میں بیٹھ کربیانات دیتا رہے گا۔