لاہور (علی ارشد سے ) پنجاب حکومت نے 2 سال سے زا ئد عرصہ تک قائم مقام سربراہان کے ساتھ کام کرنے والے صوبے کے اعلیٰ تعلیمی و ثانوی بورڈز کے چیئر مینوں کی مستقل تعیناتی کرنے کا فیصلہ کر لیا اورنیا اشتہار جاری کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیاہے ۔روزنامہ 92نیوز کو محکمانہ ذرائع نے بتایا کہ وزیراعلیٰ پنجا ب کی جانب سے صوبے کے 7 اعلیٰ تعلیمی و ثانوی بورڈز کی سمری کے ساتھ دو مزید خالی ہونے والی سیٹوں پر تقرری کیلئے بھی منظوری لے لی گئی، مجموعی طور پر 9 سیٹوں کیلئے طریقہ کا ر اور منظوری کا عمل مکمل کر لیا گیا، صوبے میں اس وقت بہاولپور، ملتان، فیصل آباد، گجرا نوالہ، راولپنڈی، ساہیوال، سرگودھا کے بورڈ آف انٹر میڈیٹ اینڈ سکینڈری ایجوکیشن کے چیئرمینوں کی سیٹیں خالی ہیں۔ذرائع نے بتایا آئندہ سال اگست میں ریٹائز منٹ کے بعدخالی ہونے والی اعلیٰ تعلیمی ثانوی بورڈ لاہور کے چیئر مین محمد اسماعیل اور ڈیرہ غازی خان تعلیمی بور ڈ کے چیئر مین کی ریٹا ئرمنٹ کے بعد خالی ہونے والی نشست پر مستقل چیئر مین کی منظوری لے لی گئی۔ مستقل چیئرمینوں کی تقرری کیلئے طریقہ کار میں ایم پی 1 سکیل کو ختم کر کے گریڈ 19 اور گریڈ 20 کے افسران اہلیت پر رکھیں گے ۔ ذرائع کے مطابق 9 چیئر مینوں کیلئے بیوروکریٹس اور دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے افسران بھی اپلائی کرنے کے مجاز ہوں گے ۔ نئے طریقہ کار کے مطابق چیئر مین کو تنخواہ کے ساتھ ایک اضافی تنخواہ بھی دی جا ئے گی جبکہ عمر کی حد کم از کم 57سال مقرر کی گئی ہے ۔ تمام اعلیٰ تعلیمی و ثانوی بورڈز کے چیئرمینوں کی تقرری کیلئے اشتہار جلد دے دیا جا ئے گا۔ چیئرمینوں کی تقرری کے حوالے سے پنجاب پرو فیسرز اینڈ لیکچرز ایسوسی ایشن کے صدر حافظ عبدالخالق ندیم نے کہا کہ حکومت تمام امیدواروں کی تقرری کیلئے میرٹ پر عمل کر تے ہو ئے ہر قسم کے دبائو سے بالاتر ہوکر تعیناتیاں کرے ۔