لاہور(خصوصی نمائندہ، 92 نیوزرپورٹ ) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی زیرصدارت وزیراعلیٰ آفس میں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں ٹیچنگہسپتالوں میں ٹراما سنٹرزقائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا، وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پہلے مرحلے میں ٹیچنگ ہسپتالوں میں ٹراما سنٹرز قائم کئے جائیں گے جبکہ مرحلہ وارٹراماسنٹرز کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا، وزیراعلیٰ نے پنجاب میں موجود تمام ٹراما سنٹرز کو فعال کرنے کی ہدایت کی۔اجلاس میں پنجاب میں انفارمیشن ٹیکنالوجی سے منسلک سمارٹ ہسپتالوں کے قیام کی تجویز کا جائزہ لیا گیا۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ سمارٹ ہسپتالوں میں مریض کی سہولت کیلئے انفارمیشن ٹیکنالوجی استعمال کی جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ ایئر ایمبولینس سروس کا منصوبہ صرف حادثات ہی نہیں بلکہ ہنگامی حالات میں بھی مددگار ہوگا۔ وزیراعلیٰ کی ہدایت پر ماڈرن ٹراما سنٹرز کے قیام اور ایئر ایمبولینس پراجیکٹ کیلئے 13رکنی کمیٹی تشکیل دی گئی جس کے چیئرمین ڈاکٹر طاہر علی جاوید ہوں گے ۔ وزیراعلیٰ پنجاب کی زیرصدارت ایک اور اجلاس میں نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔انہوں نے کہا کہ پروگرام کے پہلے مرحلے کا سنگ بنیاد جلد رکھا جائے گا، وزیراعلیٰ نے کہا کہ بے گھر وں کو چھت فراہم کرنا پی ٹی آئی کے منشور کا حصہ ہے ۔ سرکٹ ہاؤس ملتان میں اجلاس کے دور ان ڈیرہ غازی خان ڈویڑن میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیاگیا۔عثمان بزدار نے کہاکہ تمام اضلاع میں ترقیاتی فنڈز کی تقسیم کے حوالے سے کوئی امتیاز نہیں برتا جائے گا ۔ڈیرہ غازی خان ڈویڑن میں 477 ترقیاتی منصوبوں پر 61 ارب 88 کروڑ خرچ کئے جارہے ہیں۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارنے گردوں کے امراض سے بچاؤ کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ گردوں کے امراض کے اسباب اور احتیاطی تدابیرکے بارے میں عوام میں شعور و آگاہی اجاگر کرنے کی ضرورت ہے ۔ سرکاری ہسپتالوں میں علاج معالجے کیلئے سہولتوں کی فراہمی ہماری ترجیح ہے ۔وزیراعلی پنجاب نے صوبائی وزیرخوراک سے الزامات کے حوالے سے وضاحت طلب کرلی۔ذرائع کے مطابق وزیراعلی کو سمیع اﷲ کیخلاف مبینہ کرپشن کی شکایات ملی تھیں۔وزیراعلی نے فوری طورپرایکشن لیتے ہوئے وضاحت طلب کرلی،صوبائی وزیرنے وضاحت طلب کئے جانے کی تصدیق کردی۔