مکرمی !کورونا وائرس کی قدرتی آفت نے پوری دنیا میں نظام زندگی کو مفلوج کرکے رکھ دیا ہے اور ترقی یافتہ ممالک میں بھی کورونا کی دہشت نے حکومتوں اور اداروں کو بے بس کردیا مگر ہم اپنے پیارے ملک پاکستان پر نظر دوڑائیں تو یہاں کا نظام تو پہلے ہی اتنا مضبوط نہیں کہ اس سے زیادہ امیدیں وابستہ کی جاسکیںپولیس کا ادارہ کسی بھی ملک اورمعاشرے کے لیے انتہائی اہمیت کاحامل ہے،جس طرح ہمارے فوجی سرحدوں کے محافظ ہیں،وہ ہماری آرام دہ نیند کے لیے خود رات بھرجاگتے اوردشمن کی بندوقوں سے نکلی گولیاں روکنے کیلئے اپنے سینوں کوڈھال بناتے ہیں،اس طرح امن وامان برقراررکھنے کے لیے پولیس کے آفیسراوراہلکار سردھڑ کی بازی لگاتے ہیںیہ چوروں،ڈاکووں ،قاتلوں اور دہشت گردوں کاتعاقب کرتے اورانہیں گرفتارکرتے کرتے کئی بارموت سے آنکھ مچولی کھیلتے ہیں،پولیس اہلکار اپنی ڈیوٹی اوقات آٹھ گھنٹے سے زائد ڈیوٹی کرتے ہیں،تہواروں کے موقع پر یہ اپنی خوشیاں چھوڑ کر ہماری حفاظت کیلئے ڈیوٹی کرتے نظر آتے ہیں۔ جس سے روایتی انداز بڑی حد تک تبدیل ہورہا ہے ۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ پولیس کے رویے میں مثبت تبدیلی کی ستائش کی جائے۔ (سیدمنور نقوی تحصیل گوجرخان)