لاہور(نامہ نگار خصوصی) چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے قرار دیا ہے کہ عدالت نے پی کے ایل آئی پراجیکٹ رکنے نہیں دینا، یہ عوام کی زندگی کا معاملہ ہے ہم مدد کرنا چاہتے ہیں۔سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پی کے ایل آئی کیس کی سماعت چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کی۔ ڈی جی اینٹی کرپشن نے اپنی رپورٹ پیش کر دی ۔چیف جسٹس نے کہا اینٹی کرپشن بے ضابطگیوں کے معاملے کی انکوائری اور ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کرے ۔ چیف جسٹس نے کہاچونتیس ارب خرچ ہوگئے ، اس میں چار ہسپتال بن سکتے تھے اس منصوبے سے ابھی تک کوئی سہولت نہی ملی۔ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے چیف جسٹس سے مکالمے کے دوران کہا عدالتی ریمارکس پر اپوزیشن مجھ سے استعفے کا مطالبہ کر رہی ہے جس پر چیف جسٹس نے قرار دیا کہ آپکو استعفی نہیں دینے دیں گے ۔آپ اپنا کام ایمانداری سے کرتی رہیں ، گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں آپ ہمارے لیے بہت قابل احترام ہیں، آپ کا پورا کیرئیر بے داغ ہے ۔ چیف جسٹس نے کہا ہمارے خلاف بھی مہم چلائی جاتی ہیں تو کیا ان حالات میں کام کرنا چھوڑ دیں۔چیف جسٹس نے کہا آپ کا کردار قابل تحسین ہے ہمارے پاس الفاظ نہیں جن سے آپ کی تعریف کی جائے ۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے آسیہ مسیح کی بریت کے بعد ملک میں جلائو گھرائو اور توڑ پھوڑ سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔ عدالت نے شہریوں کے املاک کو ہونے والے نقصان کے ازالے کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو ایک ماہ میں متاثرین کو ادائیگی کا حکم دے دیا ۔ سرکاری اراضی پر پٹرول پمپس کے قیام سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے لاہور کے 24 پٹرول پمپس کی نیلامی کا حکم دے دیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے سرکاری اراضی کی بندر بانٹ کی اجازت نہیں دے سکتے ۔ دو رکنی بنچ نے نجی ٹی وی چینلز کو اشتہارات دینے کے کیس سماعت کی۔ عدالت نے چاروں صوبائی حکومتوں کو اشتہارات پالیسی سے متعلق نوٹس جاری کر دیا ۔ ڈی جی انفارمیشن عدالت میں پیش ہوئے اور عدالت کو آگاہ کیا کہ پی بی اے کے ساتھ کراچی میں میٹنگ ہو چکی ہے اور اشتہارات سے متعلق معاملات طے پا گئے ہیں۔ چیف جسٹس نے ہدایت سٹیک ہولڈرز سے دو دن میں میٹنگ کر کے رپورٹ عدالت میں پیش کریں۔ سپریم کورٹ نے پلاسٹک کی بوتلوں میں ادویات کی فروخت کے خلاف درخواست پر ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی اور محکمہ ماحولیات پنجاب سے جواب طلب کر لیا۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اور جسٹس اعجازالاحسن پر مشتمل بنچ نے کرسچین ہسپتال کو اصل حالت میں بحال کرنے کیلئے کیس سماعت کی۔ چیف جسٹس نے ہسپتال کو اصل حالت میں بحال کرنے کے لیے کمیٹی کو تین روز میں تجاویز پیش کرنے کا حکم دیدیا۔ سپریم کورٹ نے ایل ڈی اے سٹی سے متعلق کیس نمٹا دیا۔ صوبائی وزیر میاں محمود الرشید نے سپریم کورٹ میں بیان دیا ہے کہ ہماریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پی کے ایل آئی کیس کی سماعت چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کی۔ ڈی جی اینٹی کرپشن نے اپنی رپورٹ پیش کر دی ۔چیف جسٹس نے کہا اینٹی کرپشن بے ضابطگیوں کے معاملے کی انکوائری اور ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کرے ۔ چیف جسٹس نے کہاچونتیس ارب خرچ ہوگئے ، اس میں چار ہسپتال بن سکتے تھے اس منصوبے سے ابھی تک کوئی سہولت نہی ملی۔ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے چیف جسٹس سے مکالمے کے دوران کہا عدالتی ریمارکس پر اپوزیشن مجھ سے استعفے کا مطالبہ کر رہی ہے جس پر چیف جسٹس نے قرار دیا کہ آپکو استعفی نہیں دینے دیں گے ۔آپ اپنا کام ایمانداری سے کرتی رہیں ، گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں آپ ہمارے لیے بہت قابل احترام ہیں، آپ کا پورا کیرئیر بے داغ ہے ۔ چیف جسٹس نے کہا ہمارے خلاف بھی مہم چلائی جاتی ہیں تو کیا ان حالات میں کام کرنا چھوڑ دیں۔چیف جسٹس نے کہا آپ کا کردار قابل تحسین ہے ہمارے پاس الفاظ نہیں جن سے آپ کی تعریف کی جائے ۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے آسیہ مسیح کی بریت کے بعد ملک میں جلائو گھرائو اور توڑ پھوڑ سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔ عدالت نے شہریوں کے املاک کو ہونے والے نقصان کے ازالے کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو ایک ماہ میں متاثرین کو ادائیگی کا حکم دے دیا ۔ سرکاری اراضی پر پٹرول پمپس کے قیام سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے لاہور کے 24 پٹرول پمپس کی نیلامی کا حکم دے دیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے سرکاری اراضی کی بندر بانٹ کی اجازت نہیں دے سکتے ۔ دو رکنی بنچ نے نجی ٹی وی چینلز کو اشتہارات دینے کے کیس سماعت کی۔ عدالت نے چاروں صوبائی حکومتوں کو اشتہارات پالیسی سے متعلق نوٹس جاری کر دیا ۔ ڈی جی انفارمیشن عدالت میں پیش ہوئے اور عدالت کو آگاہ کیا کہ پی بی اے کے ساتھ کراچی میں میٹنگ ہو چکی ہے اور اشتہارات سے متعلق معاملات طے پا گئے ہیں۔ چیف جسٹس نے ہدایت سٹیک ہولڈرز سے دو دن میں میٹنگ کر کے رپورٹ عدالت میں پیش کریں۔ سپریم کورٹ نے پلاسٹک کی بوتلوں میں ادویات کی فروخت کے خلاف درخواست پر ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی اور محکمہ ماحولیات پنجاب سے جواب طلب کر لیا۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اور جسٹس اعجازالاحسن پر مشتمل بنچ نے کرسچین ہسپتال کو اصل حالت میں بحال کرنے کیلئے کیس سماعت کی۔ چیف جسٹس نے ہسپتال کو اصل حالت میں بحال کرنے کے لیے کمیٹی کو تین روز میں تجاویز پیش کرنے کا حکم دیدیا۔ سپریم کورٹ نے ایل ڈی اے سٹی سے متعلق کیس نمٹا دیا۔ صوبائی وزیر میاں محمود الرشید نے سپریم کورٹ میں بیان دیا ہے کہ ہمارے 13 ہزار کنال زمین موجود ہے ،فیز ون بنا کر متاثرین کو دیں گے ۔چیف جسٹس نے کہا ایل ڈی اے سٹی میں لوگ پیسیے 13 ہزار کنال زمین موجود ہے ،فیز ون بنا کر متاثرین کو دیں گے ۔چیف جسٹس نے کہا ایل ڈی اے سٹی میں لوگ پیسے دیکر بیٹھے ہیں لیکن انہیں زمین نہیں ملی۔ دوران سماعت چیف جسٹس نے استفسار کیا نیب کی تلوار کیوں لوگوں کے سر پر لٹکا دی گئی ہے ، نیب نے وکلا کی فیسوں کی چھان بین شروع کردی ہے ، کسی کے ساتھ ظلم نہیں ہونے دیں گے ۔