لاہور (خرم عباس)کیمپ جیل کا قیدی سروسز ہسپتال میں دم توڑ گیا۔بتایا گیا ہے کہ احسان اللہ کو 18 اپریل کو کیمپ جیل میں لایا گیا، احسان اللہ شوگر اور بلڈ پریشر کا مریض تھا، طبیعت نہ سنبھلنے پر 24 اپریل کو سروسز ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ گزشتہ رات دم توڑ گیا، سپرنٹنڈنٹ جیل نے مجسٹریٹ کو معاملے کی جوڈیشل انکوائری کی درخواست دائر کر دی، عدالت سے پوسٹ مارٹم، کورونا ٹیسٹ اور قبر کشائی کی بھی اجازت مانگی ہے ۔ واضح رہے کہ قیدی احسان اللہ کالعدم تحریک لبیک کا کارکن تھا متوفی کے خلاف تھانہ گجر پورہ میں دہشتگردی ایکٹ اور دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج تھا۔