اسلام آباد(صباح نیوز) چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی کو باضابطہ طورپر اپنے خلاف اپوزیشن کی عدم اعتماد کی تحریک اور سینٹ اجلاس کیلئے ریکوزیشن کی فائل پیش کردی گئی ۔ ذرائع کے مطابق گزشتہ روز سینٹ سیکرٹری نے عدم اعتماد کی قرارداد اور ریکوزیشن کی فائل چیئرمین سینٹ کو پیش کی۔ سینٹ سیکرٹریٹ کے دو اہم افسران کی رخصت کے باعث اس فائل کی تیاری میں دو دن لگ گئے ۔ ایک افسر کو ہنگامی بنیادوں پر بیرون ملک سے واپس بلایا گیا ہے ۔ سینٹ سیکرٹریٹ میں اپوزیشن کی قرارداد اور تحریک پر قانونی مشاورت تیز ہوگئی ہے ۔ ادھر چیئرمین سینٹ سے اپوزیشن جماعتوں کے رہنمائوں کی ملاقاتوں کا سلسلہ بھی جاری ہے ، ملاقاتوں میں ہونے والی گفتگو کو خفیہ رکھا جارہا ہے ۔گزشتہ روز سینیٹر شیری رحمان اور سینیٹر مشاہد اﷲ خان نے الگ الگ چیئرمین سینیٹ سے ملاقاتیں کیں۔ ان ملاقاتوں کے حوالے سے جب سینیٹر مشاہد اﷲ سے میڈیا نے استفسار کیا تو انہوں نے کہا یہ امانت ہے وہ کسی کے ا عتماد کو ٹھیس نہیں پہنچانا چاہتے یقیناً مشورے مانگے گئے ہوں گے مگر ہم نے جو مشورے دئیے اسے راز ہی رہنے دیں، کسی کو بتانا مناسب نہیں ہوتا۔ادھر چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی نے کہا کہ میں ہرگز پریشان نہیں بلکہ خوش ہوں اور میری خوشی کو آپ محسوس کرسکتے ہیں۔ اس امر کا اظہار انہوں نے جمعرات کو وزیراعظم سے ملاقات کے بعد پارلیمنٹ ہائوس میں میڈیا کے استفسار پر کیا۔ وزیراعظم سے ہونے والی بات چیت یا حکومت کی طرف سے تحریک عدم اعتماد کو ناکام بنانے سے متعلق سوال کا چیئرمین سینٹ نے جواب دینے سے گریز کیا۔