BN









کالم


آج کے کالم 


  


کالم آرکیو


فوجی اڈے‘ پارلیمنٹ اور حکومت

منگل 22 جون 2021ء
ارشاد احمد عارف
پچھلے پچیس تیس سال سے ہمارے حکمرانوں کی امریکی چاپلوسی کا مشاہدہ کرنے والی نوجوان نسل کو یقین ہی نہیں آ رہا کہ کوئی پاکستانی وزیر اعظم صاف الفاظ میں کسی امریکی فرمائش کو رد بھی کر سکتا ہے‘ جن نوجوانوں نے 1970ء کے اواخر یا 1980ء کے اوائل میں آنکھ کھولی‘ زمانہ طالب علمی میں امریکہ سے آنے والے جونیئر اہلکاروں کو اسلام آباد کے اعلیٰ ایوانوں میں شاہی پروٹوکول کے مزے لوٹتے دیکھا‘ پاکستان میں متعین امریکی سفیر کی ہمارے صدر اور وزیر اعظم سے ملاقات کی تصویر دیکھی جس میں موصوف وائسرائے کی طرح ٹانگ پر ٹانگ
مزید پڑھیے


امریکی انخلا کے بعد افغانستان کا مستقبل!!

منگل 22 جون 2021ء
عبدالرفع رسول
افغانستان میںطالبان کی فتوحات لگاتار جاری ہیں اور علاقوںکے علاقے ان کے زیر کنٹرول آرہے ہیں ۔افغانستان کی تازہ ترین صورتحال یہ ہے کہ کابل اور دیگر چند علاقوں کو چھوڑکر افغانستان کے بیشتر علاقوں کا طالبان کنٹرول سنبھال چکے ہیں اور ہر جگہ طالبان کی اتھارٹی نظرآتی ہے افغانستان کواپنے پہلے دورکی طرح پرامن ملک بنانے کیلئے طالبان اتھارٹی سڑکوں، شاہراہوں اوراہم مقامات پر چیک پوائنٹس قائم کرچکی ہے۔ طالبان یوم الفتح منانے اور اللہ کے حضورسجدہ شکربجالانے کی تیاریاں کررہے ہیں۔ میرے رب نے چاہاتوچند دنوں تک طالبان اس بات کاڈنکا بجائیں گے کہ ’’ہم
مزید پڑھیے


بے نظیر بھٹو کی سوچ اور پیپلز پارٹی…

منگل 22 جون 2021ء
ظہور دھریجہ
محترمہ بینظیر بھٹو کی 68 ویں سالگرہ پورے ملک کی طرح وسیب میں بھی جوش و خروش کے ساتھ منائی گئی۔ تقریبات کا اہتمام ہوا اور محترمہ کی جمہوریت کیلئے قربانیوں کو سلام پیش کیا گیا لیکن ایک بات یہ بھی ہے کہ دن چاہے سالگرہ کا ہو یا برسی کا محترمہ بینظیر بھٹو کی شہادت کا دکھ اس میں شامل ہو جاتا ہے۔ سالگرہ کی تقریب بھی سوگوار گزرتی ہے۔ اس موقع پر وسیب سے تعلق کا بھی ذکر ہوتا ہے۔ آج کل پیپلز پارٹی کی سرائیکی قیادت کی نا اہلی کی وجہ سے وسیب میں شناخت کے مسئلے
مزید پڑھیے


اٹھارویں ترمیم پر از سر نو غور : حرج کیاہے؟

منگل 22 جون 2021ء
دردانہ نجم
تعلیم کو لے کر ہم کوتاہ نظر تو تھے ہی لیکن اس معاملے میں ہم بالکل ہی مجبور ہو جائیں گے اس کا اندازہ اٹھارویں ترمیم کی منظوری کے بعد سامنے آیا۔ صوبائی خودمختاری سے ترقی یافتہ ممالک نے مزید ترقی کے زینے طے کیے ہیں ۔ اس قسم کی گورننس کی ضرورت ہے خاص طور پر جب آبادی کا تناسب بڑھ جائے یا ملک مختلف ثقافتوں کا مجموعہ ہو تو اختیارات کا نچلی سطح پر منتقل ہونا بہترین نئائج لاتا ہے۔ ویسٹ منسٹر پر مبنی پارلیمانی نظام اسی قسم کے حکومتی ماڈل پر استوار ہے۔ گو امریکہ میں صدارتی
مزید پڑھیے


عثمان کاکڑ

منگل 22 جون 2021ء
آصف محمود
چند سال پہلے کی بات ہے ۔میں اس وقت ایک ہسپتال میں الرجی کا ٹیسٹ کروا رہا تھا جب اچانک خبر چلنے لگی کہ حنیف محمد انتقال کر گئے۔ تمام ٹی وی چینلز یہی خبر دے رہے تھے۔ حنیف محمد پاکستانی کرکٹ کا بڑا نام تھا ، دکھ ایک فطری امر تھا، میں نے ایک تعزیتی ٹویٹ کر دیا۔ اتنے میں کراچی سے ایک دوست کا فون آ گیا کہ حنیف محمد زندہ ہیں۔ کچھ وقت گزرا میں جنگل سے نکل کر پارکنگ میں پہنچا اور موبائل فون اٹھایا تو سوشل میڈیا پر عطاء اللہ عیسی خیلوی کی موت کی
مزید پڑھیے


کلچر

منگل 22 جون 2021ء
عبداللہ طارق سہیل
پچھلے ہفتے قومی اسمبلی کے ہنگاموں نے ملک بھر کے ایوان ہائے بحث مباحثہ میں رونق لگائے رکھی‘ فائدہ اس کا شہباز شریف نے اٹھایا جن کی تقریر بطور قائد حزب اختلاف چار روز تک جاری رہی۔ یہ بھی ایک نیا رکارڈ تھا جو قائم ہوا۔ سرکاری ارکان تلے ہوئے تھے کہ شہباز شریف کی تقریر ہو گی نہ بلاول کی لیکن ہونیاں ہو کر رہیں یعنی دو تقریریں ہو گئیں۔ سخت کوفت ہوئی۔ ارے بھئی مجھے نہیں‘ کسی اور کو بلکہ کئی اور کو۔ ٭٭٭٭٭ حاصل اس مشاعرے کا وہ گالیاں تھیں جو ایوان میں’’اون دی ریکارڈ‘‘ کی گئیں اور سوشل
مزید پڑھیے


کتابی آبِ حیات

منگل 22 جون 2021ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
اس میں کوئی شک نہیں کہ کتاب میری زندگی کی سب سے بڑی کمزوری اور کتاب ہی میری زندگی کی سب سے بڑی طاقت رہی ہے۔شعور کے دائرے میں قدم رکھنے کے بعدکم از کم ہزاروں کتابیں نظر سے گزری ہوں گی لیکن ان میں ایسی کتابیں تو شاید انگلیوں پہ گنی جا سکتی ہیں، جنھوں نے قدموں میں زنجیریں ڈال دی ہوں، قلب و ذہن پہ انمٹ تصویریں نقش کر دی ہوں یا جن کے مطالعے کے بعد ادبی سواد،ازلی ثواب کی کیفیت میں ڈھلتا محسوس ہوا ہو۔ ایسی کتابوں میں ایک نہایت اہم کتاب مولانا محمد حسین آزاد
مزید پڑھیے


نخلستان

منگل 22 جون 2021ء
ہارون الرشید
ناکامی کے صحرا میں امید کی کونپل کیسے پھوٹتی ہے۔ ہزاروں برس سے معلم، مفکر، فلسفی اور صوفی اس پہ فکر کے موتی رولتے آئے ہیں۔ ایک نکتے پہ سب متفق کہ تاریکی میں فقط امید دیا جلا سکتی ہے‘ مایوسی موت ہے اور وہ ویرانہ ‘جس میں کبھی کچھ نہیں اگتا۔ بھارتی سرحد سے متصل تحصیل ڈالی کے گاؤں سخی سیار میں، کھجور کے خوشے کوئی دن میں پیلے ہو جائیں گے۔تھر پارکر کے صحرا میں آخر کو ایک نخلستان نمودار ہوا ہے۔ اکتوبر2018ء میں کراچی کی دعا فاؤنڈیشن نے کینیڈا میں مقیم پاکستانیوں کی عمل فاونڈیشن کے تعاون سے
مزید پڑھیے


لاہور میں زیرزمین پانی کی گرتی سطح

منگل 22 جون 2021ء
اداریہ
وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ تحفظ آب کی ہماری پالیسیاں ثمر بار ہو رہی ہیں پنجاب حکومت نے زیر زمین پانی ذخیرہ کرنے ، دیگر اقدامات کے ذریعے 1980ء کے بعد پہلی بار لاہور کے زیر زمین پانی کو نیچے گرنے سے روک لیا ہے۔ آبی ماہرین کے مطابق35سال قبل شہر میں کھارا پانی 40فٹ ،میٹھا پانی200فٹ پر میسر تھا جو اب 800فٹ تک پہنچ چکا ہے۔ لاہور میں روزانہ 3ارب گیلن زیر زمین پانی استعمال کیا جاتا ہے جبکہ ہر سال برسات میں 9ارب پانی دریا برد ہو جاتا ہے۔ حکومت پانی کی ری سائیکلنگ اور
مزید پڑھیے


مرچ فارم کا پائلٹ پروجیکٹ

منگل 22 جون 2021ء
اداریہ
چیئرمین سی پیک اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل(ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ 100ایکڑ اراضی پر مرچ فارم کا پائلٹ پروجیکٹ مکمل کر لیا گیا، اگلے مرحلے میں مرچ فارم کا رقبہ 3ہزار ایکڑ تک پہنچ جائے گا۔ چین اور پاکستان زرعی پیداواری ٹیکنالوجی میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کر رہے ہیں۔ جس کے تحت زراعت پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔ پاکستان میں زراعت کے شعبے کو جدید بنانے کے لئے 20سے زیادہ منصوبوں پر عمل کیا جا رہا ہے۔ جس میں فصلوں کی پیداوار میں اضافے ،آبپاشی کے نظام کو اپ گریڈ کرنے‘ زرعی ترقی کو
مزید پڑھیے


بمپر فصل: آٹے کے نرخ بڑھنے کا خدشہ

منگل 22 جون 2021ء
اداریہ
سب سے زیادہ گندم پیدا کرنے والے پنجاب کی آٹا ملیں بیس کلو تھیلے کی قیمت میں 100 روپے اضافہ کا خدشہ ظاہر کر رہی ہیں۔فلور ملز ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ حکومت نے بر وقت گندم درآمد نہ کی تو گندم کی قلت ہو سکتی ہے جس سے آٹے کی قیمت میں اضافہ ہو جائے گا۔گندم کے ذخائر اور سپلائی کے ذمہ دار حکام اس صورتحال کو خیبر پختونخواہ کو گندم سمگل کئے جانے سے جوڑ رہے ہیں ،ان کا کہنا ہے کہ سمگلنگ روکی نہ گئی تو مسائل پیش آ سکتے ہیں۔ رواں برس صرف پنجاب میں گندم
مزید پڑھیے


افغانستان: شمالی اتحاد اور بھارت کے روابط کی کہانی

منگل 22 جون 2021ء
افتخار گیلانی

26ستمبر1996ء کو جب طالبان نے برہان الدین ربانی اور احمد شاہ مسعود کی افواج کو شکست دیکر کابل پر قبضہ کرکے سابق صدر نجیب اللہ کو ہلاک کردیا،اسکے ایک ہفتے بعد تاجکستان کے دارلحکومت دوشنبہ میں رات گئے بھارتی سفیر بھرت راج متھو کمار کے گھر پر فون کی گھنٹی بجی،دوسری طرف معزول شدہ کابل انتظامیہ کے دوشنبہ میں نمائندے اور افغانستان کے موجودہ نائب صدر امر اللہ صالح لائن پر تھے۔ انہوں نے سفیر سے گزارش کی کہ ’’ کمانڈر‘‘(احمد شاہ مسعود) چند لمحے قبل دوشنبہ پہنچ گئے ہیں اور وہ بھارت کے سفیر سے ملاقات کرنا چاہتے ہیں۔ویسے
مزید پڑھیے


انا کی نذر ہوتا نظام!

پیر 21 جون 2021ء
عا رف نظا می
حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کے درمیان قومی اسمبلی میں بقائے باہمی کی فضا قائم کر کے ایک مکدر ماحول کو نسبتاً خوشگوار بنانے اورغنڈہ گردی کے بجائے ایک دوسرے کی بات اطمینان سننے کی امید، امید موہوم ثابت ہوئی ہے۔ اگرچہ اس سلسلے میں ہونے والی انڈرسٹینڈنگ کے تحت جمعہ کو مخالفین کی تقریریں اطمینان سے سنی گئیں لیکن افسوسناک بات یہ ہے کہ تقریروں میںمعیار کا خیال نہیں رکھا گیا بلکہ وزیر توانائی حماد اظہر نے اپنی تقریر میں بلاول بھٹو پر رکیک حملے کیے، ان کے انگریزی بولنے پر اعتراض کرتے ہوئے کہا ٹیڑھے منہ سے انگریزی
مزید پڑھیے


باغِ گلِ سرخ اور افتخار عارف

پیر 21 جون 2021ء
احمد اعجاز
پاکستان کی سماجی و سیاسی تاریخ میں ستر کی دہائی کو یہ امتیاز ہے کہ اس دہائی میں سماجی سطح پر ایک ایسے رومانس نے جنم لیا ،جس نے اُس عہد کے سوچنے اور غوروفکر کرنے والے افراد کے اندر سنہرے خوابوں کی پنیری لگادی،اگرچہ رومانس سے جڑے خواب مذکورہ دہائی میں ہی بکھر گئے تھے ،مگر آج اکیسویں صدی کی تیسری دہائی میں اُن خوابوں کی پرچھائیاں موجود ہیں۔ستر کی دہائی کے شعراواُدبا راتوں کو جاگتے،خواب دیکھتے،اُمیدوں بھری شعری و نثری کائنات تخلیق کرتے اورہمہ وقت ایک خاص قسم کے رومانس کے سحر میں رہتے۔جس دور میں راتیں جاگیں
مزید پڑھیے


لاڑکانہ،یہ بے حسی کیوں؟

پیر 21 جون 2021ء
احسان الرحمٰن
مجھے اندازہ تو تھا کہ لاڑکانہ میں کون سی دودھ شہد کی نہریں بہہ رہی ہیں لیکن جو لاڑکانہ میرے سامنے تھا وہ میرے وہم و گمان میں بھی نہ تھامیں حیران تھا کہ یہ اس بھٹو کا لاڑکانہ ہے جس کے نام پر ووٹ لے کر پیپلز پارٹی سندھ پر راج کرتی چلی آرہی ہے؟ یہ سولی پر جھول جانے والے اسی بھٹو کا لاڑکانہ ہے جسے اس نے پیرس بنانے کا وعدہ کیا تھا؟ بھٹو سولی نہ چڑھتا تو شائد نہیں یقینا لاڑکانہ کی یہ حالت نہ ہوتی ،میں تب ایک نیوز چینل سے وابستہ تھا مجھے بے
مزید پڑھیے