کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



جینوسائڈ واچ کی تحقیق اورآج کاہندوستان (آخری قسط)

اتوار 19 جنوری 2020ء
عبدالرفع رسول
کل کے شمارے میں ہم نے جینوسائڈ واچ کی تحقیقی اورآج کاہندوستان پربات کرتے ہوئے اس امرکاجائزہ لینے کی کوشش کی تھی کہ کیسے ظالم حکمران اپنے ہی ملک کی اقلیتوں کے خلاف پہلے سازشیں رچاکران کاقتل عام کرتے ہیں اورکسی طرح زندہ بچ جانے والوں کو بالآخرملک بدرکرتے ہیں۔آج کے ہندوستان کی صورت حال جینوسائڈ واچ کی تحقیق کے پس منظرمیں ایک بہت بڑے خوفناک انسانی المیے کی طرف بڑھ رہی ہے۔جس دس ادوارکاجینوسائڈ واچ کی تحقیق میں تذکرہ کیاجاچکاہے اسے سامنے رکھتے ہوئے یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں جس طرح فاشسٹ طاقتوں کے لیے یہ صورت حال’’
مزید پڑھیے


’’میجر جنرل آصف غفور ۔۔۔ماننا ہوگا‘‘

اتوار 19 جنوری 2020ء
احسان الرحمٰن
پاکستان کے کسی بھی نیوز چینل کا اسائمنٹ ایڈیٹر دفتر میں کام کا آغاز کرتے ہی سب سے پہلے افواج پاکستان کی ویب سائٹ پر جاتا ہے یا پھر آئی ایس پی آر کے رپورٹرسے اسکا پہلا سوال یہی ہوتا ہے…’’ہاں بھئی !کچھ ہے تو نہیں ؟‘‘ اس مختصر سوال کا مطلب افواج پاکستان کے ترجمان ادارے کی کسی ممکنہ نیوز کانفرنس پریس بریفنگ یااس ادارے کی جاری ہونے والی کسی خبر کے بارے میں جاننا ہوتا ہے کہ اگر ایسی کوئی سرگرمی ہو تو وہ کیمرا مین، فوٹو گرافر اور رپورٹر کو وہاں جانے کے لئے ابھی سے پابند کر
مزید پڑھیے


خوش فہمی کی دھوپ میں روشن جھوٹی آس

اتوار 19 جنوری 2020ء
ذوالفقار چودھری
عوام نے تحریک انصاف کو اعتزاز احسن کے ’’ماں کے جیسی ریاست‘‘ کے خواب کو سچ کرنے کے لئے ووٹ دیئے تھے ایسی ریاست جہاں سب کو تعلیم‘ صحت روزگار اور انصاف کے یکساں مواقع ملنا تھے عمران خاں کو سوئس بنکوں سے پاکستان سے لوٹے 200ارب ڈالر وطن واپس لا کر ملکی قرضے اتارنا اور دودھ اور شہد کی نہریں بہانا تھیں مگر سلیم انصاری نے کہا ہے نا کہ: خوش فہمی کی دھوپ میں روشن جھوٹی آس اندھیارے میں رینگتا ہر سچ کا وشواس حکومت کے ابھی دو سال مکمل نہیں ہوئے عمران کا بے رحم احتساب کا خواب عذاب بن
مزید پڑھیے


صحت کی صورت حال اور ابّا

اتوار 19 جنوری 2020ء
سعد الله شاہ
سخت مشکل تھی مگر نام خدا سے پہلے رکھ دیے ایک طرف میں نے سہارے سارے آج میرا دل چاہا کہ میں آپ کے ساتھ نہایت ہی دلچسپ معلومات شیئر کروں تجربہ بتاتا ہے کہ ایک اچھا ڈاکٹر آپ کو کئی برے ڈاکٹروں سے بچا دیتا ہے مگر اس ڈاکٹر کو آپ اپنا دوست رکھتے ہوں ۔تو جب علی الصبح میں سیر کو نکلا تو معروف عالم دین اور دانشور ڈاکٹر خضر یاسین مل گئے وہ برہان احمد فاروقی کے شاگرد خاص تھے۔ مجھ سے والد گرامی کی علالت کے بارے میں پوچھنے لگے تو میں نے کہا کہ چھوٹا بھائی احسان
مزید پڑھیے


بات آگے نکل چکی ہے

اتوار 19 جنوری 2020ء
احمد اعجاز
یہ سیاست دانوں کی خوش بختی ہے کہ عوام کی جانب سے،اُنہیں کبھی اور کسی بڑے امتحان میں نہیں ڈالا گیا۔البتہ ہر دَور میں حکمران خود اور عوام کوامتحانات میں ڈالتے چلے آئے ہیں ۔سیاسی حکمرانوں نے اپنے عمل سے بارہا عوام کے حوصلے کا امتحان بھی لیاہے اورنئے تنازعہ میں اُلجھایا بھی ہے۔ا س ملک یا عوام پر جس قدر بحران نازل کیے گئے وہ سارے کے سارے حکمرانوں کی کج فہم عمل کا نتیجہ ہی تو تھے۔عوام نے اگر کسی حکمران کی غلطی کا ردِ عمل دیا بھی تو محض علامتی نوعیت کے احتجاج کی صورت ۔ا س
مزید پڑھیے


لیبیا کی خانہ جنگی

اتوار 19 جنوری 2020ء
عدنان عادل
لیبیا میں صدرمعمر قذافی کی حکومت ختم ہوئے آٹھ برس ہوگئے لیکن یہ ملک آج تک بدامنی‘ خانہ جنگی کا شکار ہے ۔داخلی جنگ و جدل میں اب تک دو ہزار افراد ہلاک ‘ لاکھوں بے گھر ہوچکے ہیں۔ یہ ملک انسانی اسمگلنگ کا مرکز بن چکا ہے۔بعض علاقوں میں عورتیں بازاروں میں فروخت کی جاتی ہیں۔یہ وہ تحفہ ہے جو امریکہ اور یورپ نے آمریت سے نجات اور جمہوریت کے قیا م کے نام پرلیبیا کی عوام کودیا ۔صدر قذافی نے شمالی افریقہ میں واقع اس ملک کے مختلف قبائل کو اپنے ایک مخصوص نیم آمرانہ نظام حکومت
مزید پڑھیے


احتساب دے چیف کمشنر صاحب بہادر۔!

اتوار 19 جنوری 2020ء
سعدیہ قریشی
چند روز سے میرے ہاتھ میں منو بھائی کی کتاب ہے۔ جس کا نام ہے’’ جنگل اداس ہے‘‘ یہ ان کے کالموں کا انتخاب ہے، اس کتاب میں ہمیں اصلی منو بھائی دکھائی دیتے ہیں۔ پاکستان کے عام آدمی کی محرومیوں پر نوحہ کناں‘ اور اس کی حسرتوں کی لاش پر ماتم کرتا ہوا۔ دھاڑیں مار کر روتا ہوا منو بھائی جس کے بارے میں جاوید شاہین نے کہا کہ۔ منو بھائی کی خوبی یہ ہے کہ وہ کسی واردات یا تجزیے میں قاری کو اس حد تک شریک کر لیتا ہے کہ اسے سب کچھ اپنی ذات کا حصہ معلوم
مزید پڑھیے


عمران خان اور سیاسی مشکلات

اتوار 19 جنوری 2020ء
راوٗ خالد
سیاسی منظر نامے پر ایک قضیہ ختم ہوتا ہے، کوئی نیا جنم لے لیتا ہے۔گزشتہ دو تین ماہ خاص طور پر سیاسی گہما گہمی سے زیادہ، سیاسی اور عدالتی جھٹکوں کے تھے جس سے حکومتی اور ادارہ جاتی چولیں ہلی نہیں تو تھوڑی تھوڑی کھسکی ضرور ہیں۔موجودہ سیاسی ہلچل کی بنیاد بھی انہی عوامل کے باعث پیدا ہو رہی ہے۔ اپوزیشن اور خاص طور پر حکومتی اتحادیوں کا خیال ہے کہ اس وقت حکومت وقت کمزور پچ پر ہے اس لئے اس پر دبائو بڑھا کربہت سی ایسی رعائیتیں حاصل کی جا سکتی ہیں جو پہلے ممکن نہیں تھا۔ مسلم
مزید پڑھیے


شاہی خاندان میں ایک اور بغاوت

اتوار 19 جنوری 2020ء
خاور نعیم ہاشمی
آنجہانی لیڈی ڈیانا کا بیٹا شہزادہ ہیری جس طرح اپنی بیوی میگھن مارکل کے ساتھ شاہی محل سے فرار ہوا اس نے پوری دنیا کو چونکا کر رکھ دیا، گھر سے فرار اور وہ بھی بیوی کے ساتھ ایسا تو جھونپڑیوں میں بھی شاذ و نادر ہی ہوتا ہے، ملکہ نے پوتے کے اس اقدام کا برا منایا ، بہت غصے میں آئیں پورے شاہی خاندان کا اجلاس طلب کر لیا لیکن بالآخر اپنے پوتے کو معاف کر دیا اور اسے آزادی کے ساتھ زندہ رہنے کی اجازت دیدی، کیونکہ باغی شہزادے کی رگوں میں اس کا اپنا خون
مزید پڑھیے


کپتان کا اصل قصور

اتوار 19 جنوری 2020ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
’’یار تم نے بانوے کے ورلڈ کپ کا ٹاس دیکھا تھا؟‘‘ ’’اس میں کیا خاص بات تھی؟‘‘ ’’اس میں عمران خان اور گراہم گوچ کی باڈی لینگوئج دیکھنے والی تھی۔‘‘ ’’مطلب ؟‘‘ ’’ مَیں نے کسی جگہ پڑھا ہے کہ دنیا کے ہر طبقے کے لوگوں، کیا کھلاڑی، کیاطالب علم، کیافن کار، سب میں انیس بیس کا فرق ہوتا ہے۔ اصل کمال ذاتی صلاحیتوں پہ اعتماد، اور ان کے مناسب استعمال کا ہوتا ہے۔ مَیں جب بھی بانوے کے ورلڈ کپ کے فائنل میچ کے ٹاس کی ریکارڈنگ دیکھتا ہوں ، تو انگلینڈ جیسی ورلڈ کپ کی مضبوط ترین ٹیم اور پورے ٹورنامنٹ کی
مزید پڑھیے


کب تک؟ آخر کب تک؟

اتوار 19 جنوری 2020ء
ہارون الرشید
کس چیزکا انتظار؟ آخر کس چیز کا؟ کب تک ‘ آخر کب تک؟ فراری ذہنیت کی کوئی آخری حد ہوتی ہے‘ بے حسی اور سنگ دلی کی کوئی انتہا! عمران حکومت کے باب میں کوئی چیز اس قدر حیرت زدہ نہیں کرتی‘ جتنا کہ مقبوضہ کشمیر پہ اس کا رویّہ۔ جبر اور سفاکی کی کوئی جہت نہیں جو بروئے کار نہ آئی ہو۔ ستم کے پہاڑ توڑے گئے اور وحشت اپنی انتہا کو پہنچی۔ شاید ہی کوئی گھر بچا ہو۔ شاید ہی کوئی بچہ‘ بوڑھا‘ خاتون اور نوجوان ہو ‘جو انتقام کا نشانہ نہیں بنا۔ اس کے باوجود کوئی لائحہ عمل
مزید پڑھیے


سندھ میں 52ہزار ایکڑ اراضی کی لیز منسوخ

اتوار 19 جنوری 2020ء
اداریہ
حکومت سندھ نے نیب کی کارروائی کے خدشہ سے اہم سیاسی شخصیات کو الاٹ کی گئی 52ہزار ایکڑ اراضی کی لیز منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ سندھ میں قیمتی سرکاری زمینوں کی بندربانٹ کے سکینڈل سامنے آنا معمول بن چکا ہے۔ صرف کراچی کے ضلع ملیر میں 252ایکڑ اراضی اونے پونے داموں بااثر افراد کو دے دی گئی تھی۔بدقسمتی سے نا صرف پارٹی بلکہ سرکاری افسران بھی سندھ کی سرکاری املاک کو پیپلز پارٹی کی قیادت کی ذاتی ملکیت تصور کرنا شروع ہو گئے ہیں ۔ یہاں تک کہ سابق چیف جسٹس کو ونڈ پاور پروجیکٹ کے لئے
مزید پڑھیے


بی آئی ایس پی جعلسازی میں ملوث چار افسران معطل

اتوار 19 جنوری 2020ء
اداریہ
بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سے جعلسازی کے ذریعے رقم بٹورنے والے سرکاری افسروں کے گرد گھیرا تنگ ہو گیا۔ افسروں کو جواب دینے کے لئے 10روز کی مہلت دے دی گئی۔ تسلی بخش جواب نہ دینے والے افسروں کو ملازمتوں سے برطرف کر دیا جائے گا۔ جبکہ چار افسران کو معطل بھی کر دیا گیا ہے۔ پیپلز پارٹی نے 2008ء میں اقتدار میں آنے کے بعد غریب‘ نادار اور کسمپرسی کی زندگی گزارنے والے افراد کے لئے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کا اجرا کیا تھا جس کا مقصد پسے ہوئے اور محروم طبقے کی مدد کرنا تھا۔ لیکن بدقسمتی سے
مزید پڑھیے


چیف الیکشن کمشنر اور ارکان کی تقرری پر تازہ مشاورت

اتوار 19 جنوری 2020ء
اداریہ
وزیر اعظم عمران خان نے قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو چیف الیکشن کمشنر اور الیکشن کمشن کے دو ارکان کے نام تجویز کر کے آئینی طریقہ کار کے مطابق ان تعیناتیوں سے متعلق اپنی ذمہ داری پوری کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے‘ وزیر اعظم نے اپنے خط میں جمیل احمد‘ فضل عباس میکن اور سکندر سلطان راجہ کے نام پیش کئے ہیں۔ آئین کی شق 213کی ذیلی شق 2اے کے تحت چیف الیکشن کمشنر اور اراکین الیکشن کمشن کی تقرری کے لئے وزیر اعظم قومی اسمبلی میں لیڈر آف دی اپوزیشن سے مشاورت کے پابند
مزید پڑھیے


ملفوظات

اتوار 19 جنوری 2020ء
محمد عامر خاکوانی
پچھلے کالم میں احمدپورشرقیہ کے ممتاز عالم دین اور مدرس علامہ عبداللہ کا ذکر آیا۔ مولانا عبداللہ کی کتابوں کے حوالے سے گزشتہ نشست میں لکھا تھا۔ ان کا مجموعہ ’’تالیفات علامہ عبداللہ‘‘کے نام سے شائع ہوا ہے۔خلافت وملوکیت پر نقد کے حوالے سے ان کی کتاب’’ صحابہ کرامؓ پر تنقید‘‘ مشہور ہوئی۔مولانا عبداللہ نے’ ’خطبات بہاولپور کا علمی جائزہ‘‘کے نام سے ڈاکٹر حمیداللہ کے مشہور خطبات میں بیان کئے گئے بعض علمی تفردات پر گرفت کی اور حق ادا کر دیا۔ مولانا عبداللہ کے سوانح اور افکار کی تفصیل ’’تذکرہ مولانا عبداللہ ‘‘ کے نام سے ایک کتاب میںموجود
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ









سجاد میر
شہر آشوب

مستنصر حسین تارڑ
ہزار داستان

مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں


مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ


بشریٰ رحمان
چادر چاردیواری اور چاندنی

نو شی گیلا نی
کا لم کہا نی


افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے


رضا رومی
رومی نامہ

انجم نیاز
یادداشت از امریکا



خاور گھمن
گھمن گھیریاں


سعید خا ور
حر ف درما ں


راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ

ایچ اقبال
ایچ اقبال


قدسیہ ممتاز
حرف تازہ





سعود عثمانی
دل سے دل تک

اثر چوہان
سیاست نامہ

عامر متین
عامر متین

ارشاد محمود
بات یہ ہے

عا بد قر یشی
تجا ہل عا دلا نہ


ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے



سعید خاور
حرفِ درماں


مظفر بخاری
گستاخی معاف

رعایت اللہ فاروقی
گفتار و پندار

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
دروا‍‌زہ

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

رحمت علی رازی
درون پردہ

وسی بابا
باتاں


راحیل اظہر
غبارِخاطر

محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم