BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



روشِ بندہ پروری

هفته 16 نومبر 2019ء
سجاد میر
تاریخ کی ایک فیصلہ کن جنگ اپنے عروج پر تھی۔ ایک طرف صلیبیوں کے بڑھتے ہوئے لشکر تھے اور دوسری طرف مسلمان سپاہ۔ غازی صلاح الدین کو اطلاع ملی کہ دشمن کا نامور جرنیل جسے مسلمان تاریخ دان بھی شیر دل کے لقب سے پکارتے ہیں۔ شدید علیل ہے۔ حکایت بیان کی جاتی ہے کہ صلاح الدین ایوبی نے نہ صرف جنگ روک دی بلکہ اپنا شاہی طبیب بھجوانے کی پیشکش کی تاکہ رچرڈ شیردل کا علاج ہو سکے۔ ایک روایت ہے طبیب کو بھجوا دیا اور ایک خبر ہے کہ طبیب کے بھیس میں خود جا پہنچا کہ اس
مزید پڑھیے


’’ بابریؔ مسجد کیس، رامؔ تیری گنگا میلی ؔ ہوگئی؟‘‘

هفته 16 نومبر 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔مَیں خرابیٔ صحت کی بنا پر بروقت کالم نہیں لِکھ سکا لیکن 9 نومبر کو بھارتی سپریم کورٹ کے ہندو چیف جسٹس مسٹر رنجن گوگی، کی سربراہی میں جسٹس شردھا وند بوبدے ، جسٹس دھننجیا یشونت چندراشُدھ ، جسٹس اشوک بھوشن اور (مسلمان) جسٹس عبداُلنذیر نے 6 دسمبر 1992ء کو ایودھیا کی ’’بابری مسجد ‘‘ کی شہادت اور متنازع ’’ رام مندر‘‘ کے حق میں فیصلہ کر کے جو، بھارت اور وِشنو دؔیوتا کے اوتار ، قدیم ایودھیا کے (268سے 330 قبل از مسیح تک )راجا رامؔ چندر کے نام کو جط طرح بدنام کِیا گیا ہے ، اُسے
مزید پڑھیے


فرقہ وارانہ نسل پرستی کے بعد نیا مشرقِ وسطیٰ

هفته 16 نومبر 2019ء
اداریہ
بیروت:اُس کی آواز میں لغزش تھی،زینب مرزا کا آنسوئوں پر قابو نہ رہاتھا۔۔یہ بیروت کی امریکی یونی ورسٹی میںسیاسی علوم کی لیکچرر ہے۔وہ لبنان کے بیدار ہونے کا رونا رورہی تھی،اُس کا کہناتھا کہ ’’ایک لحاظ سے دیکھا جائے توہم پہلے کومامیں تھے‘‘ بیروت سے بغداد تک لوگ سڑکوں پر ہیں ،وہ اقوام کے لیے آواز اُٹھارہے ہیں کہ فرقوں کو تبدیل کریں۔اُنہیں عراق میں بندوق کی گولیاں ملی ہیں۔اُنہیں لبنان میں ہنگامہ آرائی ملی ہے۔وہ ابھی تک وہاں ہیں۔ایک نئی نسل پرانے راستوں سے تنگ آچکی ہے۔یہ بات انقلاب کی ہے۔یہاں قوم اتحاد کی نشاندہی کرتی ہے ،قوم پرستی کی
مزید پڑھیے


جناب وزیر اعظم!چند لمحے

هفته 16 نومبر 2019ء
اشرف شریف
سینٹ کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے سمندر پار پاکستانیزکے سامنے ایک رپورٹ پیش کی گئی ہے۔ رپورٹ کیا ہے‘ سیدھی سیدھی ایف آئی آر کہیں جو ماضی کے حکمرانوں اور ان کی اولادوں پر بنتی ہے۔ وزارت خارجہ کے افسر سید زاہد رضا نے کمیٹی کو بتایا کہ بیرونی ممالک میں غیر قانونی قیام رکھنے والے پاکستانی وطن واپسی کی بجائے ان ممالک میں ذلت آمیز مزدوری اور جیل میں رہنے کو ترجیح دے رہے ہیں۔ کمیٹی کو بتایا گیا کہ بوسنیا ہرزگوینا کے جنگل کیمپ میں چار ہزار پاکستانی مقیم ہیں۔ یہ کیمپ بوسنیا میں پاکستانی مشن سے چار سو
مزید پڑھیے


پاک بھارت تعلقات ۔وزیراعظم کے خیالات

هفته 16 نومبر 2019ء
ظہور دھریجہ
گزشتہ روز اسلام آباد میں مارگلہ ڈائیلاگ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کشمیر کی وجہ سے خطرے میں ہے ۔ بھارت کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھانا مشکل ہو گیا ہے ۔وزیراعظم نے کہا کہ کرتار پور کھولنے کا اقدام اسلامی اصولوں اور قائد اعظم کے پر امن ہمسائیگی کے تصور کے عین مطابق کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کو کچھ امداد بھی ملی تھی تاہم ہم نے سبق سیکھا ہے کہ کسی اور کی جنگ کا حصہ نہیں بننا۔ آئندہ ہم
مزید پڑھیے


اجتماعی شعور اور ریاست کی ذمہ داری

هفته 16 نومبر 2019ء
قدسیہ ممتاز
ـوہ جس اعتماد سے بول رہی تھی مجھے خوشگوار حیرت ہوئی۔اعتماد اور اعلی تعلیم میری کمزوری رہی ہے، بالخصوص اگر کوئی خاتون ان اوصاف سے متصف ہو تو مجھے زیادہ خوشی ہوتی ہے۔یہ تو پھر ایک ننھی سی بچی تھی،بمشکل پندرہ سال کی بچی۔ وہ کہہ رہی تھی۔میرے ماں باپ پچھلے سال میری شادی کرنا چاہتے تھے کیونکہ میں ان کے کسی کام کی نہیں تھی۔میں نے انکار کردیا۔شادی ذمہ داری کا نام ہے۔ آخر اسلام بھی تو یہی کہتا ہے کہ شادی اٹھارہ سال کی عمر میں کرنی چاہئے۔مجھے علم نہیں پنجاب کے اس دورافتادہ دیہات کی معصوم
مزید پڑھیے


مولانا،نواز،عمران

هفته 16 نومبر 2019ء
عا رف نظا می
مولانا فضل الرحمن کا اسلام آباد میںدوہفتے سے جاری دھرنا بدھ کی رات اچانک جھاگ کی طرح بیٹھ گیا ۔جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ جو وزیراعظم عمران خان کے استعفے اور نئے عام انتخابات کا اعلان ہوئے بغیر ٹس سے مس ہونے کو تیار نہیں تھے اب اپنے پلان’’ بی‘‘ پر عمل پیرا ہیں جس کے مطابق ملک کی تمام اہم شاہراہوں اور ہائی ویز کو باقاعدہ پروگرام کے تحت بند کیا جائے گا ۔یہ تو وقت ہی بتائے گا کہ مولانا کا نیا منصوبہ پسپائی کی ایک آبرومندانہ شکل ہے یا واقعی وہ پورے ملک کو شٹ ڈاؤن
مزید پڑھیے


بیورو کریٹس بمقابلہ بیوروکریٹس

هفته 16 نومبر 2019ء
اسداللہ خان
دھرنا اپنے اختتام کو پہنچا ، جو تھوڑی بہت تحریک باقی ہے وہ مختلف سڑکوں کے کنارے دم توڑ دے گی، تقریبا وثوق سے کہا جا سکتا ہے کہ نتائج حاصل ہونے کا امکان نہیں ۔اس کا ہرگز مطلب نہیں کہ حکومت کے لیے چین کے دن آ گئے ہیں بلکہ یہ کہنا غلط نہ ہو گا کہ حکومت کے اپنے کام اور گورننس کی طرف لوٹنے کے دن آ گئے ہیں ۔گورننس جو شاید اس وقت داخلی طور پر حکومت کے لیے سب سے بڑا مسئلہ ہے ۔تعلیم ، صحت اور معیشت کے میدان میں اصلاحات کے ساتھ ساتھ
مزید پڑھیے


لوگ ٹیکس کیوں نہیں دیتے؟

هفته 16 نومبر 2019ء
آصف محمود
لوگ ٹیکس کیوں نہیں دیتے؟ آئیے آج اس سوال کا جائزہ لیتے ہیں۔ اس کی پہلی وجہ اس سماج کی نفسیاتی تشکیل کا عمل ہے جہاں آج تک ٹیکس دینے کو شعوری طور پر تسلیم نہیں کیا گیا۔یہ جاننے کے لیے ہمیں یہ دیکھنا ہو گا کہ برصغیر میں باقاعدہ ٹیکس کب لگا اور اس کی وجوہات کیا تھیں۔ یہ ٹیکس 1857ء کی جنگ آزادی کے بعد برطانیہ نے لگایا اور اس کی اعلانیہ وجہ یہ قرار دی گئی کہ عظیم برطانوی سلطنت کو چونکہ ہندوستان میں اس جنگ آزادی میں بھاری اخراجات کرنے پڑے اس لیے اس نقصان
مزید پڑھیے


میاں صاحب کا سیاسی سفر

هفته 16 نومبر 2019ء
مجاہد بریلوی
جس وقت یہ تحریر آپ کے ہاتھ میں ہوگی دعا گو ہوں اور خواہش رکھتا ہوں کہ اُس وقت تک ہمارے تین بار منتخب ہونے والے سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف لندن کے لئے محو ِ پرواز ہوچکے ہوں گے،یا حکومت سمیت تمام متعلقہ اور مقتدر ادارے اُن کی روانگی کے بارے میں ایک پیج پر آچکے ہوں گے۔ہمارے میاں نوا ز شریف اِ س وقت پاکستانی سیاست کے سب سے متنازعہ کردار بن گئے ہیں۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ آج اُن میں اور بانی ِ پیپلز پارٹی ذوالفقار علی بھٹو میں مجھے بڑی مماثلت نظر آرہی ہے
مزید پڑھیے


کیا سارے سیاسی فیصلے عدالتوں میں ہوں گے؟

هفته 16 نومبر 2019ء
ڈاکٹر حسین پراچہ
گزشتہ دنوں جب نیب کے زیر حراست میاں نواز شریف کی متعدد بیماریاں تشویشناک صورت اختیار کر گئیں تو انہیں فی الفور لاہور کے سروسز ہسپتال منتقل کیا گیا۔ اس موقع پر جناب وزیر اعظم عمران خان نے اپنی روایتی گرم گفتاری تج کر خالصتاً انسانی ہمدردی کا رویہ اختیار کیا اور پنجاب حکومت کو حکم دیا کہ ان کے علاج معالجے کے سلسلے میں ہر ممکن تعاون کیا جائے۔ جناب عمران خان نے شوکت خانم سے ایک ڈاکٹر کو بھیجا اور ایک ڈاکٹر کوکراچی سے بھی بلایا گیا۔ بعدازاں جب مختلف طبی رپورٹوں سے یہ واضح ہوا کہ پلیٹ
مزید پڑھیے


قوم کیا چیز ہے قوموں کی امامت کیا ہے

هفته 16 نومبر 2019ء
محمد اظہارالحق
اقبال نے کہا تھا ؎ کہتا ہوں وہی بات سمجھتا ہوں جسے حق نے اَبلہ مسجد ہوں نہ تہذیب کا فرزند تاریخ کی ستم ظریفی بے رحم ہے۔ آج یہ ملک دو پاٹوں کے درمیان پس رہا ہے۔ ابلہانِ مسجد اور فرزندان تہذیب کے درمیان! عمران خان کے دھرنے میں تہذیب کے فرزند یعنی مسٹر حضرات دھوکا کھا گئے ہم جیسے لکھاری بھی اس رَو میں بہہ گئے۔ اعلیٰ تعلیم یافتہ لوگ اندازہ نہ لگا سکے کہ پچاس لاکھ ملازمتیں اور لاکھوں مکان بننے کا امکان ہے نہ آئی ایم ایف کے چنگل سے رہائی پانے کی امید! مولانا کے
مزید پڑھیے


سندھ کے آفت زدہ علاقوں میں امداد کی ضرورت

هفته 16 نومبر 2019ء
اداریہ
ملک میں بارش والے سسٹم ’’انوپام‘‘ کے داخل ہونے سے سندھ کے کئی علاقوں میں بارشیں ہوئی ہیں اور اس دوران تھرپار ‘ کندھ کوٹ‘ سانگھڑ میں آسمانی بجلی گرنے سے 29افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہو گئے‘ جبکہ آسمانی بجلی گرنے سے 61مویشی بھی ہلاک ہو گئے۔ اگرچہ آسمانی بجلی ایک قدرتی آفت ہے جس سے بچا نہیں جا سکتا‘ اپنے پیاروں کا یوں لمحوں میں بچھڑ جانا لواحقین کے لئے صدمہ جانکاہ ہے جس کی تلافی ممکن نہیں لیکن پسماندہ علاقوں کے لوگوں کا مال مویشیوں کی صورت میں جو مالی نقصان ہوا ہے وہ بجائے خود
مزید پڑھیے


اسرائیل کے حملوں میں بے گناہ فلسطینیوں کی شہادتیں

هفته 16 نومبر 2019ء
اداریہ
غزہ پر اسرائیلی فوج کے فضائی حملوں میں ایک ہی خاندان کے 6افراد سمیت 9فلسطینی شہید ہو گئے ہیں۔ اسرائیل عالمی قوتوں بالخصوص امریکہ کی شہ پر فلسطینیوں کی نسل کشی کر رہا ہے۔ گزشتہ تین روز میں نہتے فلسطینیوں پر اسرائیل کی فوج نے 90حملے کئے ہیںجن میں 31فلسطینی شہید اور 100سے زیادہ زخمی ہو چکے ہیں ۔اسرائیل کو انسانیت سوز مظالم کی جرات اس لئے ہو رہی ہے کیونکہ اقوام متحدہ اور عالمی برادری کی طرف سے صیہونی ریاست کے جنگی جرائم پر مسلسل چشم پوشی کی جا رہی ہے۔ دنیا کی واحد سپر پاور نے عالمی معاہدوں
مزید پڑھیے


مہنگائی پر قابو پانے کی ضرورت

هفته 16 نومبر 2019ء
اداریہ
عالمی بنک نے کہا ہے کہ 2000ء سے 2015ء کے دوران غربت کم کرنے کے لیے جن 15ممالک نے انقلابی اقدامات کئے ان میں پاکستان بھی شامل ہے۔دنیا کے 114ممالک میں انتہائی غربت کی شرح میں سالانہ کمی کے اقدامات کے حوالے سے پاکستان 14ویں نمبر پر آگیا ہے۔ دوسری جانب وزیر اعظم عمران خان نے ایک بار پھر واضح کیا ہے کہ ہم مسئلہ کشمیر حل کر کے جنوبی ایشیا میں ماحولیاتی تبدیلی اور غربت کے خلاف مل کر جدوجہد کر سکتے ہیں۔ اس میں کوئی دورائے نہیں کہ غربت، مہنگائی اور کساد بازاری نے عام آدمی کا جینا
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ









سجاد میر
شہر آشوب

مستنصر حسین تارڑ
ہزار داستان

مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں


مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ


بشریٰ رحمان
چادر چاردیواری اور چاندنی

نو شی گیلا نی
کا لم کہا نی


افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے


رضا رومی
رومی نامہ

انجم نیاز
یادداشت از امریکا



خاور گھمن
گھمن گھیریاں


سعید خا ور
حر ف درما ں

راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ

ایچ اقبال
ایچ اقبال


قدسیہ ممتاز
حرف تازہ




سعود عثمانی
دل سے دل تک

اثر چوہان
سیاست نامہ

عامر متین
عامر متین

ارشاد محمود
بات یہ ہے


ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے



سعید خاور
حرفِ درماں

رعایت اللہ فاروقی
گفتار و پندار

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
کہانی کی کہانی

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

رحمت علی رازی
درون پردہ

وسی بابا
باتاں


راحیل اظہر
غبارِخاطر

محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم