BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



سنسان گھڑی

اتوار 29 مارچ 2020ء
راوٗ خالد
گھر سے دفتر کی مسافت ایک ہفتہ قبل بیس منٹ تھی لیکن اب یہ سمٹ کر دس منٹ رہ گئی ہے لیکن گھر والوں اور دوستوں کے درمیان فاصلے بڑھ گئے ہیں۔ کیا خبر تھی کہ ایک وباء ایسی بھی ہو گی کہ جب وصال سے زیادہ ہجر زندگی کی ضمانت ہو گا۔اسلام آباد جہاں چوبیس گھنٹے زندگی رواں دواں تھی چند گھنٹے کی مہلت رہ گئی ہے جس میں آپ ضرورت کا سامان خرید سکتے ہیں اور چند لوگوں کو بیک وقت کچھ فاصلے پر ہی سہی اکٹھا کھڑا دیکھ سکتے ہیں۔پہلے دل بہلانے کو ہرکسی کی
مزید پڑھیے


کرونا لوجی

اتوار 29 مارچ 2020ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
سیانے کہتے ہیں گھر بیٹھے ہوئے شاعر اور شوہر دونوں بہت خطرناک ہوتے ہیں۔ دونوں کا دماغ یا تو چل جاتا ہے یا پینسٹھ کلومیٹر کی رفتار سے چل پڑتا ہے۔ اس بات کے واضح ثبوت گزشتہ دو ہفتوں سے ان ہر دو طرح حضرات کے ارشادات و فرمودات سے لبالب سوشل میڈیا ہے۔ سماجی تنہائی، شخصی گوشہ نشینی یا سوشل ڈسٹنس کے حوالے سے نئے سے نئے موضوعات کا ایسا پنڈورا بکس کھلا ہے کہ بند ہونے میں نہیں آتا۔ تحقیق میں دانش و بینش کے ایسے ایسے در وا کیے جا رہے ہیں کہ بڑے بڑے محقق
مزید پڑھیے


عبرت پکڑو ۔ اے صاحبانِ بصیرت

اتوار 29 مارچ 2020ء
اوریا مقبول جان
کہاں ہیں وہ سیکولر، لبرل ملحدین جو کہا کرتے تھے کہ یہ اگر اللہ کا عذاب ہے تو امریکہ اور مغربی دنیا میں کیوں نہیں آتا، جہاں فحاشی، عریانی اور جنسی بے راہ روی سمیت تمام برائیاں عروج پر ہیں۔ کدھر ہیں وہ دانشور جو اللہ کے فیصلوں پر طعن وتشنیع کرتے ہوئے کہتے تھے کہ اللہ کا عذاب صرف غریبوں پر ہی کیوں آتا ہے۔ دیکھو!جن ملکوں نے زلزلوں سے بچنے کے لیے انتظامات کرلیے ہیں، وہاں اللہ کا عذاب اگر زلزلے کی صورت آ بھی جائے تو وہ انکا کچھ نہیں بگاڑ سکتا۔ لیکن آج تو اس ٹیکنالوجی
مزید پڑھیے


پنجاب میں دکانیں 8بجے بند کرنے کا فیصلہ

اتوار 29 مارچ 2020ء
اداریہ
وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ جنرل سٹورز اور کریانہ دکانیں صبح 8سے رات 8بجے تک کھلی رہیں گی۔ فیصلے پر آج سے عملدرآمد ہو گا، کسی کو خلاف ورزی کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ حکومت نے ماضی میں کئی مرتبہ بازار شام 8بجے بند کرانے کی کوشش کی تاکہ توانائی کے بحران پر قابو پا لے لیکن یہ کوشش کامیاب نہ ہو سکی۔ اب کرونا وائرس کے پیش نظر حکومت نے صبح 8بجے سے رات آٹھ بجے تک دکانیں بند کرانے کے احکامات جاری کئے ہیں۔ اس سے نہ صرف لوگ گھروں میں
مزید پڑھیے


برآمد ی شعبوں کے لئے ریلیف پیکیج

اتوار 29 مارچ 2020ء
اداریہ
حکومت نے ٹیکسٹائل ‘سپورٹس گڈز، سرجیکل آلات سازی، گارمنٹس اور قالین بافی کی صنعتوں کے لئے 23ارب کے ریلیف پیکیج کی منظوری دی ہے۔ پاکستان کی مجموعی قومی پیداوار میں ٹیکسٹائل کے شعبہ کا حصہ 8.5فیصد ہے جو ملک کی افرادی قوت کے 38فیصد حصہ کو روزگار بھی فراہم کر رہا ہے مگر توانائی بحران کے باعث گزشتہ دو دہائیوں سے یہ اہم شعبہ مسلسل تنزلی کا شکار چلا آ رہا ہے ماضی کی حکومتوں نے اگر قطر سے مہنگی ایل این جی امپورٹ کر کے بجلی اور گیس کی بلا تعطل فراہمی کو یقینی بنایا بھی تو
مزید پڑھیے


بروقت فیصلے ضروری ہیں

اتوار 29 مارچ 2020ء
اداریہ
وزیر اعظم نے کھانے پینے کی اشیا کی قلت کے خدشے سے ملک بھر میں گڈز ٹرانسپورٹ بحال کرنے کی ہدایت کی ہے۔ لاک ڈائون کے دوران عوام کو ضروریات زندگی کی فراہمی کے لئے انہوں نے ٹائیگر فورس قائم کرنے اور ریلیف فنڈ قائم کرنے کا اعلان بھی کیا ہے۔ ٹائیگر فورس کے ساتھ رضا کارانہ خدمات انجام دینے کے آرزو مند نوجوانوں سے کہا گیا ہے کہ وہ 31مارچ سے سٹیزن پورٹل پر اپنی رجسٹریشن کرا سکتے ہیں۔ ٹائیگر فورس کے نوجوان شہریوں کے گھروں تک کھانا پہنچائیں گے۔ وزیر اعظم نے کرونا ریلیف فنڈ سے متعلق بتایا
مزید پڑھیے


کارپوریٹ سیکٹر کا سانڈ

هفته 28 مارچ 2020ء
سجاد میر
کئی دن سے ایسی باتیں میں سن رہا تھا‘ مگر اب اس پر حسین ہارون کی تفصیلی گفتگو سنی ہے تو بات کرنے میں جو ہچکچاہٹ تھی وہ دور ہو گئی ہے۔ سوچتا تھا یہ بات زباں پر نہ لائوں‘ وگرنہ لوگ اسے سازشی تھیوری قرار دے کر طعن و تشنیع شروع کر دیں گے۔ یہ حسین ہارون اقوام متحدہ میں پاکستان کے سفیر رہے ہیں۔ سندھ اسمبلی کے سپیکر بھی رہ چکے ہیں۔ میرے لئے ان کا تعارف یہ ہے کہ یہ ڈان گروپ کے حمید ہارون کے بھائی ہیں اور تحریک پاکستان کے ممتاز قائد عبداللہ ہارون کے پوتے
مزید پڑھیے


الکیمسٹ

هفته 28 مارچ 2020ء
اسداللہ خان
آفاقی زبان کے وجود پر یقین، غیبی اشاروں کی سمجھ،خوابوں کی تعبیر پانے کی خواہش، خواہش کی تکمیل کے لیے کوشش، مطالعہ کی عادت ، جد و جہد مسلسل اور خود پر کامل یقین۔ یہ کہانی ہے الکیمسٹ کی۔ پائولو کوئیلہو کا ناول الکیمسٹ بہت پہلے پڑھا، پچھلے چار دن سے گھر میں رہنے کے باعث اُن کتابوں کی دوبارہ ورق گردانی کی جو بہت پہلے پڑھی تھیں اور دماغ سے محو ہو رہی تھیں۔ انہی میں پائولو کوئیلہو کا شہر ہ آفاق ناول الکیمسٹ بھی تھا۔ الکیمسٹ کی کہانی ایک گڈریے کے گرد گھومتی ہے جس کا نام سینٹیاگو ہے
مزید پڑھیے


کرونا سیاست

هفته 28 مارچ 2020ء
اشرف شریف
کرونا ایک سیاسی بیماری ہوتی تو آل پارٹیز کانفرنس میں بیٹھے مستند ڈاکٹر صاحبان کی مہارت سے ضرور فائدہ اٹھایا جاتا۔ یہ ایک مرض‘ ایک وبا ہے‘ جس سے تین فریقوں نے لڑنا ہے۔ حکومت نے وسائل فراہم کرنا ہیں‘ ڈاکٹروں نے علاج کرنا ہے اور عوام نے حکومت اور ڈاکٹروں کی ہدایات پر عمل کر کے خود کو محفوظ بنانا ہے۔ وزیر اعظم ‘ وزراء اور مشیر اپنا کام کر رہے ہیں۔ آئسولیشن وارڈ بن رہے ہیں‘ سکریننگ ہو رہی ہے‘ متاثرہ افراد کو گھروں سے منتقل کرنے کا نظام فعال ہو چکا ہے‘ عوام کے لئے 1000ارب روپے
مزید پڑھیے


کرونا : وائرس یا ورلڈ آرڈر؟

هفته 28 مارچ 2020ء
آصف محمود
کرونا سے اگر ہم نے احتیاط کی تو یہ محض ایک وائرس ہے جو انشاء اللہ ایک دن ختم ہو جائے گا،ہم اس سے خوفزدہ ہو گئے تو یہ ایک ورلڈ آرڈر ہے جو سب کچھ تہس نہس کر دے گا۔یہ وہ بات ہے جوا فراد کو بھی سمجھ لینی چاہیے اور دنیا بھر کی حکومتوں کو بھی۔ خوف کیا ہوتا ہے؟ معاشی تناظر میں سمجھنا ہو تو جان لیجیے یہ خوف کارپوریٹ دنیا کی مبادیات میں سے ایک ہے۔اس بات کو یوں سمجھیے کہ نلکے کے پانی سے بھلے ہم کبھی بیمار ہوئے ہوں یا نہیں لیکن اس کا خوف
مزید پڑھیے


3ہزار روپے۔ ۔ ۔ بجٹ بھی بناکے دیں

هفته 28 مارچ 2020ء
مجاہد بریلوی
وزیر اعظم پاکستان محترم عمران خان نے قوم سے اپنے دوسرے خطاب میں خوشخبری دی تھی کہ وہ عوام کو ایک بڑا ریلیف پیکج دینے جارہے ہیں۔اس سے پہلے وہ اس حقیقت کا اعتراف کرچکے تھے کہ پاکستان میں مکمل لاک ڈاؤن اور کرفیو نافذ کرنا اس لئے ممکن نہیں کہ 25فیصدپاکستانی عوام daily wagesیعنی دیہاڑی پر کام کرتے ہیں۔وزیر اعظم نے یہ بھی کہا تھا کہ انہیں کرونا وائرس سے زیادہ اس بات کا خو ف ہے کہ کہیں یہ لوگ جن کا سارا گذر بسر روزانہ کی آمدنی پر ہے ،ملک میں ایک بڑی افراتفری کا باعث نہ
مزید پڑھیے


کیا آخری کڑی ٹوٹ چکی ہے

هفته 28 مارچ 2020ء
اوریا مقبول جان
دنیا کے ہر ضروری سمجھے جانے والے کاروبارِ زندگی کو معمول کے مطابق چلانے کے لئے ''کرونا'' کی اس خوفناک وبا میں بھی انتظامات کیے جا رہے ہیں۔ حتیٰ کہ پوری دنیا پر غیر محسوس طریقے سے حکومت کرنے والے میڈیا کا کسی بھی ملک میں ایک ٹیلی ویژن چینل، ایک ریڈیو سٹیشن یا آباد نشریاتی ادارہ بند نہیں کیا گیا۔ حرمِ کعبہ، مسجد نبوی، کربلا، مشہد، جامعہ مسجد دہلی، الازہر، بادشاہی مسجد لاہور سے لے کر مسلم دنیا میں لاتعداد مساجد کے پہلو میں بے شمار ٹیلی ویژن چینل مسلسل اپنی نشریات جاری رکھے ہوئے ہیں۔ دنیا بھر کی
مزید پڑھیے


خواتین اور نوعمرقیدیوں کی ضمانت کی درخواستیں

هفته 28 مارچ 2020ء
اداریہ
چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے کرونا وائرس کے پھیلائو کے خدشہ کے حوالہ سے فیصلہ سناتے ہوئے خواتین ‘ کم عمر اور معمولی جرائم میں ملوث قیدیوں کی ضمانت کے لئے درخواستیں دائر کرنے کا حکم دیاہے۔ اس سلسلہ میں ڈی جی ڈسٹرکٹ جوڈیشری نے صوبے کے تمام سیشن ججز ‘اعلیٰ پولیس حکام‘ ڈپٹی کمشنروں‘ ڈی پی اوز کو مراسلہ بھیجا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ معمولی نوعیت کے مقدمات میں قید ملزموں کی ضمانت کی درخواستیں متعلقہ سپرنٹنڈنٹس جیل متعلقہ عدالتوں میں فوری طور پر دائر کریں۔ اس میں شبہ ہی نہیں کہ ملک بھر کی
مزید پڑھیے


پانی ذخیرہ کرنے کے منصوبے

هفته 28 مارچ 2020ء
اداریہ
مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کی زیر صدارت ایکنک کے اجلاس میں قلعہ سیف اللہ میں 4ارب 90کروڑ روپے سے توئیوار‘ بنوزئی سٹوریج ڈیم کی منظوری دیدی گئی ہے۔ جبکہ بارانی علاقوں میں 25ارب 34کروڑ روپے سے کمانڈ ایریا بڑھانے کے پروگرام کی منظوری دی گئی ہے جس سے 2664فارم تالاب تعمیر کئے جائیں گے۔ پاکستان زیر زمین پانی کا استعمال کرنے والا دنیا کا چوتھا بڑا ملک ہے ،جہاں 60سے 70فیصد آبادی بالواسطہ یا بلاواسطہ ضروریات زندگی کے لئے پانی پر انحصار کرتی ہے لیکن بدقسمتی سے پاکستان میں زیر زمین پانی کی قلت پیدا ہو رہی ہے۔ ماضی
مزید پڑھیے


ڈالر کی قدر میں اضافہ کیوں؟

هفته 28 مارچ 2020ء
اداریہ
وبا کے دنوں میں ہر کاروبار بند ہونے کے باوجود ڈالر کی قدر میں اضافہ تعجب خیز معاملہ ہے۔ بدھ کے روز پاکستان میں ڈالر 165روپے کے برابر جا پہنچا۔ یہ اب تک ملک میں ڈالر کی بلند ترین قدر ہے۔ رپورٹس کے مطابق امریکی نقدی کی قدر میں 3روز کے اندر 8.45روپے کا اضافہ ہوا ہے۔ اس اضافے سے ملک پر قرضوں کا بوجھ 600ارب روپے بڑھ گیا ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے اس صورت حال کا نوٹس لے کر سٹیٹ بنک کو تحقیقات کا حکم دیا ہے۔ کمزور انتظامی گرفت اور مطلوبہ فنی قابلیت سے محروم افراد کی
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ





سجاد میر
شہر آشوب




مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں

مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ



افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے

رضا رومی
رومی نامہ




سعید خا ور
حر ف درما ں


راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ





ارشاد محمود
بات یہ ہے

عا بد قر یشی
تجا ہل عا دلا نہ



ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

عابد قریشی
تجاہل عادلانہ

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے


سعید خاور
حرفِ درماں


مظفر بخاری
گستاخی معاف

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
دروا‍‌زہ

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

وسی بابا
باتاں


محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم