BN

کالم


آج کے کالم 


  


کالم آرکیو


فرار الدولہ: اِک سُچا فن کار

اتوار 17 مئی 2020ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
بیسویں صدی اپنی آخری سانسیں لے رہی تھی، وطنِ عزیز کا ہر ادارہ ، ہر نظارہ،بھاری مینڈیٹ والی حکومت کے مترنم گیت اور متکلم گُن گانے میں مصروف تھا۔ کسی گُنی نے قوم کے کانوں میں کوئی ایسا سُریلا راگ چھیڑ دیا تھا کہ جس کے ترنم کی دُھن پہ رقصاں سکول کے بچے اپنا جیب خرچ اور بچوں کی مائیں بہنیں اپنے زیورات دھڑا دھڑ ’قرض اتارو، ملک سنوارو‘ کے نعرے پہ قربان کرنے پہ کمر بستہ تھیں ۔ سرکاری ملازم اپنی تنخواہیں کٹوانے اور عوام اپنی پلکیں بچھانے پہ دل و جان سے مائل تھے۔ بے چارہ، قسمت
مزید پڑھیے


پالیسی پیپر اور میز پوش

اتوار 17 مئی 2020ء
راوٗ خالد
قومی اسمبلی اور سینیٹ کے اجلاس ہوئے ، حسب توقع وہاں جوتیوں میں دال بٹی۔خیر سے پارلیمان کی ایک کمیٹی سپیکر قومی اسمبلی کی زیر نگرانی تشکیل کی گئی ہے جس نے کئی اجلاس کئے اس کا مقصد بھی کرونا کے حوالے سے ایک لائحہ عمل بنانا تھا اوروفاقی حکومت کی راہنمائی کرنا تھا بلکہ صوبائی حکومتوں کو بھی بتانا تھا کہ اس صورتحال میں کس طرح عوام اور ملک کو معاشی، معاشرتی اور صحت کو درپیش مشکلات سے نبر د آزما ہونا ہے۔ اسکے پہلے ہی اجلاس میں وزیر اعظم اپنی غزل سنا کر چلے گئے ۔اس کے بعد
مزید پڑھیے


وبا کے دنوں میں دہشت گردی کا خطرہ

اتوار 17 مئی 2020ء
محمد عامر رانا
اس وقت جب دنیا کورونا کی وبا کے خلاف جنگ میں مصروف عمل ہے‘ اقوام اور عالمی تنظیمیں وبا کے انسانوں ‘معیشت اور سماج اور نفسیات پر منفی اثرات کا جائزہ لینے میں جتی ہوئی ہیں‘وبا کے خوف کے سایے میں بھی سکیورٹی خطرات موجود ہیں گو غیر روایتی سکیورٹی چیلنجز پر دنیا کی توجہ کم ہے۔ مثال کے طور پر کورونا وبا کے دوران بھی دہشت گردی کے خطرے میں کوئی کمی نہیں دکھائی دیتی بلکہ کچھ علاقوں میں تو دہشت گردی کے واقعات میں اضافہ ہوا جیسا کہ افغانستان کی مثال ہمارے سامنے ہے ۔عالمی برادری افغانستان پر
مزید پڑھیے


کپڑوں سے اٹی خالی الماریاں

اتوار 17 مئی 2020ء
سعدیہ قریشی
ہفتے میں چار دن کاروباری سرگرمیاں شروع ہونے اور لاک ڈائون کھلنے سے بازار بھیڑ سے بھر چکے ہیں۔ سماجی دوری اور باہمی فاصلے کا اصول ہوا ہو چکا ہے کئی ہفتوں کے لاک ڈائون میں شاپنگ کو ترسی ہوئی بیبیاں رسے تڑوا کر گھروں سے خریداری کی مہم پر نکل کھڑی ہوئیں ہیں۔سماجی دوری‘ باہمی فاصلہ ،ایس او پیز کس چڑیا کے نام ہیں۔ وہ شاپنگ کے ہیجان میں مبتلا ان بیبیوں کو خبر نہیں اور تو اور اپنے ساتھ اپنے چھوٹے بچوں کو بھی بازاروں میں لیے گھومتی پھرتی ہیں۔ اپنے تئیں یہ یقین کر چکی ہیں کہ
مزید پڑھیے


دور فتن میں یورپ کے مسلمانوں کا مستقبل (آخری قسط)

اتوار 17 مئی 2020ء
اوریا مقبول جان
یورپ میں مسلمانوں سے نفرت کی ایک تاریخ ہے جو صدیوں پر محیط ہے۔ قدیم روم کی سلطنت کے زیر نگیں ایشیا اور افریقہ کے سرسبز علاقے شام، فلسطین، مصر، لیبیا، تیونس اور الجیریا آتے تھے۔ یہاں سے خوراک اور غلام برآمد کیے جاتے اور روم کی سلطنت کے خواص و عوام خوشحال اور خوش و خرم زندگی گزرتے۔ ایشیاء اور افریقہ کے یہ تمام علاقے صدیوں سے عیسائیت کا مرکز تھے۔ مسلمانوں کی ابتدائی یلغار انہی علاقوں پر ہوئی اور دیکھتے ہی دیکھتے چند سالوں میں یہ تمام مراکز جو دراصل مسیحی روم کے استحصال میں کچلے ہوئے
مزید پڑھیے


ٹڈی دل کا فصلوں پر حملہ‘ حکومت خاموش

اتوار 17 مئی 2020ء
اداریہ
اٹھارہ ہزاری‘ شور کوٹ‘ سندھیلیانوالی‘ گڑھ مہاراجہ اور دیگر علاقوں میں10کلو میٹر طویل ٹڈی دل نے شدید حملہ کر کے تباہی مچانا شروع کر دی۔ ٹڈی دل ایک عرصے سے پاکستانی زراعت پر حملہ آور ہے۔کبھی سندھ میں فصلوں کو غارت کرتا ہے تو کبھی پنجاب پر یلغار کرتا ہے۔ کسان اس کے سامنے بے بس ہیں جبکہ حکومت صرف زبانی وعدوں تک اس کا مقابلہ کرتی نظر آتی ہے۔ وفاقی حکومت نے فصلوں پر سپرے کرنے کے لئے ترکی سے طیارہ بھی لیا ہے لیکن ابھی تک وہ طیارہ کسی جگہ پر سپرے کرتا نظر نہیں آیا۔ حکومت نے
مزید پڑھیے


خلاف ضابطہ تعیناتیوں پر وزیراعظم کا نوٹس

اتوار 17 مئی 2020ء
اداریہ
وزیراعظم نے سکروٹنی کا دائرہ کار وسیع کرتے ہوئے مختلف سرکاری عہدوں پر ریگولر، عارضی اور اضافی چارج کی آڑ میں من پسند افراد کو کمپنیوں کے بورڈز میں وفاقی کابینہ کی منظوری کے بغیر ڈائریکٹرز تعینات کرنیکی تفصیلات طلب کر لی ہیں۔ تحریک انصاف میرٹ اور شفافیت کے نعرہ کی بدولت اقتدار میں آئی ہے۔ بدقسمتی سے وزیراعظم عمران خان اپنی مدت کا نصف مکمل کرنے کو ہیں مگر ابھی تک بیوروکریسی کو کنٹرول کرنے میں کامیاب دکھائی نہیں دیتے ۔ افسر شاہی کی من مانیوں کا یہ عالم ہے کہ وفاقی کابینہ سے ایسے معاملات کی منظوری
مزید پڑھیے


بھاشا ڈیم کی تعمیر:چین کا بھارت کو جواب

اتوار 17 مئی 2020ء
اداریہ
چین نے دیا مر بھاشا ڈیم کی تعمیر پر بھارتی اعتراض کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کے مابین تعاون کا مقصد مقامی معاشی نمو کو بڑھانا ہے۔ چینی وزارت خارجہ کے ترجمان زاولی جیان نے بیجنگ میں ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران کہا کہ دیا مر بھاشا ڈیم کی تعمیر سے عام لوگوں کی زندگی میں بہتری آئے گی۔ گزشتہ ہفتے وزیر اعظم عمران خان نے گلگت بلتستان کے علاقے میں دیامر بھاشا ڈیم فوری طور پر تعمیر کرنے کی ہدایت کی تھی جس کے بعد بھارت نے حسب سابق ایک بار پھر اسے
مزید پڑھیے


’’چی گویرا کے مرید‘ ‘

اتوار 17 مئی 2020ء
احسان الرحمٰن
ترکی سے درآمد ہونے والے ’’ارطغل‘‘ نے مرچوں کا بھاؤ بڑھا دیا ہے وہ سیکولر ،لبرل دوست جو سر پر ترچھی سرخ ٹوپی جمائے گول گلے کی چی گویرا والی ٹی شرٹ پہنے مسلمانوں پر انتہا پسندی کی پھبتیاںکستے نہیں تھکتے وہ انتہاکی فصیل پر آستینیں چڑھائے کھڑے دکھائی دے رہے ہیں ، ایک ترک ڈرامے نے ان کی تیوریوں پر بل ڈال دیئے ہیں وہ باؤلے ہوئے پھر رہے ہیں کسی ’’چی گویرا‘‘ کے مرید کو اس میں میں کشت وخون نظر آرہا ہے او ر کسی کو ثقافت کی عزت تار تا ر ہونے کا خطرہ دکھائی دے
مزید پڑھیے


بے تیغ لڑنے والوں کی بپتا

اتوار 17 مئی 2020ء
ذوالفقار چودھری
محبت کسی قانون کی پابند نہیں ہوتی یہی اس کی سب سے بڑی کمزوری بن جاتی ہے۔ وطن اور ہم وطنوں کی محبت کا معاملہ بھی کچھ مختلف نہیں۔ اسی جذبے کے زیر اثر 12اپریل کو بے تیغ لڑنے والے مجاہد کے عنوان سے انہی صفحات پہ کالم لکھا۔ مضمون شائع ہونے کے بعد دوستوں کی طرف سے واہ واہ کے کمنٹس اور عام قاری کی جانب سے تعریفی اور تنقیدی کلمات بھی معمول کی بات ہے۔ اس لیے کالم کے بعد ایک قاری کی تنقید بھی اس معمول کی نذر ہو گئی۔ ایک ماہ کے بعد گزشتہ روز ڈاکٹر
مزید پڑھیے


املتاس کے پیلے پھول

اتوار 17 مئی 2020ء
سعد الله شاہ
خواب کمخواب کا احساس کہاں رکھیں گے اے گل صبح تری باس کہاں رکھیں گے پیلے پھولوں سے لدے رہتے ہیں جو راہوں میں ہم وہ چاہت کے املتاس کہاں رکھیں گے صاحبو!بات کچھ یوں ہے کہ مئی کے مہینے میں جوبن دکھانے والے املتاس کے پھول جو اپنے درختوں سے گہنوں کی طرح لٹکتے ہیں ہماری بھی کمزوری ہیں۔ ویسے تو ہر پھول ہی ہمیں بھاتا ہے خواہ وہ گوبھی ہی کا کیوں نہ ہو۔ مگر میں پودوں پر کھلنے والے پھولوں کی بات کر رہا ہوں ۔سخن گسترانہ بات اس میں یہ آپڑی کہ ہمارے خیال میں ہم اس منظر کو اچھی
مزید پڑھیے


وہ تین راتیں اورڈاکٹر محمد اسلم بھلر

اتوار 17 مئی 2020ء
احمد اعجاز
وہ سال اُنیس صدستانوے ،مہینا دسمبر کا اور شدید پالے پڑنے کے دِن تھے۔یہ سردی پڑتی کہ ہڈیوں کے گُودے میں اُتر جاتی۔گہری دُھند،جو ماہِ نومبر سے شروع ہوگئی تھی ،نے دِن اور رات کی تمیزمٹاڈالی تھی۔دِن دوسے تین کے درمیان ذرادیر کو سورج دُھندسے جھانکتا پھر غائب ہوجاتا۔اِن خوف ناک شب وروز میں سے کوئی ایک لمحہ تھا کہ مجھے بخار نے آلیا۔بخار نے پہلا حملہ میری نیند پر کیا۔اُس شام جب ہم چولہے والے کمرے سے اُٹھ کر سونے والے کمرے میں گئے توآٹھ بج رہے تھے۔سب اپنے اپنے بستروں میں دُبک گئے۔تھوڑی دیر بعد خراٹوں سے کمرہ
مزید پڑھیے


عورت پر ظلم کب تک ؟

اتوار 17 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
ایک خبر کے مطابق دائرہ دین پناہ میں زمانہ جاہلیت کی یاد تازہ ہو گئی ، جن نکالنے کے بہانے جعلی پیر تشدد کرنے کے ساتھ گرم راڈ سے عورت کے جسم کے مختلف اعضا داغتا رہا ، عورت چیخ پکار کرتی تو خاوند تشدد کے ذریعے چُپ کرانے کی کوشش کرتا رہا ۔ حالت غیر ہونے پر خاوند اپنی بیوی کو والدین کے گھر چھوڑ کر فرار ہو گیا ۔ اس دردناک واقعے کی تفصیل اس طرح ہے کہ تھانہ دائرہ دین پناہ ضلع مظفر گڑھ کے موضع کھائی سوئم کی زاہدہ بی بی کی شادی اعجاز بریار نامی
مزید پڑھیے


ملک لیڈر کا متلاشی!

هفته 16 مئی 2020ء
عا رف نظا می
جوں جوں کورونا وائرس پاکستان میں جنگل کی آگ کی طرح پھیل رہا ہے،اموات کی تعداد میں بھی مسلسل اضافہ ہو رہاہے۔رواں ماہ کے آغاز میں ملک بھر میں کورونا کے 16473کیسز تھے جو15مئی تک بڑھ کر قریباً 37000تک پہنچ گئے۔ یہ کوئی حسن اتفاق نہیں ہے کہ پاکستان چند روز میں ہی کورونا وائرس سے متاثرہ ملکوں میں 24ویں سے 19ویں نمبر پر آ گیا ہے۔ جب سے کورونا وائرس نے پاکستان کا رخ کیا ہے،لاک ڈاؤن پر متذبذب پالیسی کے باوجود حکومتی زعما بالخصوص وفاقی وزرا رطب اللسان ہیں کہ ہم تو مقدور بھر کوشش کر رہے
مزید پڑھیے


مکالمہ

هفته 16 مئی 2020ء
سجا د جہانیہ
انسان جب موت کو لبیک کہتا ہے تو کیا ہوتا ہے؟ وہ کہاں چلا جاتا ہے؟ یہ ایسے سوال ہیں جن کے جواب انسانی عقل و دانش ایک مدت سے تلاش کررہی ہے۔ اتنے طویل علمی سفر کے بعد تین چار بڑے بڑے نظریات سامنے آئے ہیں۔ ایک تو مذہبی ہے جو زرتشت سے لے کر ادیان ابراہیمی تک مماثل چلا آتا ہے کہ دنیا دارالامتحان ہے، یہاں اپنے عمل سے جو لکھا اس کے نتائج ایک خاص دن کو نکلیں گے جب پھر سے زندہ کر کے اٹھایا جائے گا اور پھر جنت یا جہنم کی مکانیت میں ایک
مزید پڑھیے





کالم نگار

اداریہ
اداریہ





سجاد میر
شہر آشوب




مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں

مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ



افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے

رضا رومی
رومی نامہ




سعید خا ور
حر ف درما ں


راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ





ارشاد محمود
بات یہ ہے

عا بد قر یشی
تجا ہل عا دلا نہ




ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

عابد قریشی
تجاہل عادلانہ

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے


سعید خاور
حرفِ درماں


مظفر بخاری
گستاخی معاف

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
دروا‍‌زہ

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

وسی بابا
باتاں


محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم