BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



قیدیوں کی بھی فکر کیجیے

منگل 31 مارچ 2020ء
ڈاکٹر حسین پراچہ
زنداں کے ساتھیوں نے قید خانے میں حضرت یوسفؑ سے خوابوں کی تعبیر پوچھی جو آپ نے وضاحت و صراحت کے ساتھ بتا دی۔ پھر قرآن کے الفاظ میں سنیے کہ حضرت یوسف نے کیا فرمایا۔پھر ان میں سے جس کے متعلق خیال تھا کہ وہ رہا ہو جائے گا۔ اس سے یوسف علیہ السلام نے کہا’’اپنے رب(شاہ مصر) سے میرا ذکر کرنا مگر شیطان نے اسے ایسا غفلت میں ڈالا کہ وہ اپنے رب(شاہ مصر) سے اس کا ذکر کرنا بھول گیا اور یوسفؑ کئی سال قید خانے میں پڑا رہا۔ موت کا ذائقہ تو ہر انسان نے چکھنا ہے
مزید پڑھیے


نیرو، وائرلوجسٹ سے گفتگو ، صحت و قومی سلامتی

منگل 31 مارچ 2020ء
افتخار گیلانی
کہتے ہیں کہ شہنشاہ نیرو کے زمانے میں سلطنت روم میں سخت قحط آن پڑا۔ نیرو کا 13سالہ دور حکومت54)سے 68عیسوی) اسکی اپنی والدہ و اہلیہ کے قتل، بے جا اسراف، شہر روم کی آگ زنی کیلئے تاریخ میں خاصا بدنام ہے۔ قحط کا مقابلہ کرنے کیلئے عمائدین نے بادشاہ کو مشورہ دیا کہ بحری جہازوں کو مصر اور دیگر ممالک میں بھیج کر گندم منگوائی جائے، تاکہ فاقہ زدہ عوام کو راحت مل سکے۔ جہاز روم سے روانہ تو ہوئے، مگر واپسی پر ان پر گندم کے بجائے، مصر کے ریگستانوں کی باریک ریت لدی ہوئی تھی
مزید پڑھیے


زنجیریں پگھل سکتی ہیں

منگل 31 مارچ 2020ء
ہارون الرشید
سمت نصیب ہو تو ابتلا سے قومیں اور بھی طاقتور بن کے ابھرتی ہیں۔ زخم ہی نہیں دھلتے بلکہ نئے جہان نمودار ہوتے ہیں۔صدیوں سے چلی آتی زنجیریں پگھل جاتی ہیں۔ آدمی اپنے رجحانات کا اسیر ہوتاہے۔ کوئی بڑا خوف،خطرہ اور دھچکا ہی ذہن کے منجمد سانچے پگھلاتا ہے۔ کبھی کسی نے کہا تھا:I have grown a jungle in my mind'I dare not to enter in۔ اپنے سر میں ایک جنگل میں نے اگا لیا ہے، جس میں داخل ہونے کی ہمت نہیں پاتا۔ نفی ء ذات کی ضرورت یہیں ہوتی ہے۔عارف نے کہا تھا:زیاں بہت ہے، انسانی زندگی میں زیاں
مزید پڑھیے


راشن تقسیم کمیٹیاں

منگل 31 مارچ 2020ء
اداریہ
پنجاب حکومت نے مستحقین میں مفت راشن کے لئے رقم تقسیم کرنے کے لئے کمیٹیاں قائم کر دی ہیں جن کے ذریعے 48گھنٹوں میں 4ہزار روپے فی گھر مستحقین کی دہلیز پر تقسیم کئے جائیں گے۔ حکومت کرونا وائرس کے پھیلائو کو روکنے کیلئے ملک بھر میں مکمل لاک ڈائون سے اس لئے گریزاں تھی کہ ایسا کرنے سے لوگ گھروں میں فاقوں پر مجبور ہو جائیں گے۔ وزیر اعظم عمران خاں بھی متعدد بار مکمل لاک ڈائون سے پہلے لوگوں کے گھروں میں کھانا پہنچانے کا بندوبست کرنے کی بات کرتے رہے ہیں اس مقصد کے لئے وزیر اعظم
مزید پڑھیے


خون کی بیماریوں میں مبتلا بچوں کو نہ بھولیے!

منگل 31 مارچ 2020ء
اداریہ
کرونا وائرس سے لوگوں کی سرگرمیاں اور آمدورفت محدود ہو نے کے باعث خون کا عطیہ کرنے والوں کی تعداد بھی کم ہو گئی ہے۔ اس صورتحال میں تھیلسیمیا، ہیموفیلیااور دوسرے ایسے مریض بچوں کی جان پر بن آئی ہے جنہیں وقفے وقفے سے خون ملنا ضروری ہوتا ہے۔ روزنامہ 92 نیوز کی رپورٹ کے مطابق تعلیمی ادارے، فیکٹریاں، دفاتر اور کام کی دیگرجگہیں چونکہ بند ہیں اسلئے خون عطیہ کرنے والے بھی گھروں تک محدود ہو کر رہ گئے ہیں۔ اس وقت صورتحال یہ ہے کہ بہت سی این جی اوز خون کی بیماریوں میں مبتلا بچوں کیلئے اپنے
مزید پڑھیے


تعمیراتی اور مال برداری سیکٹر کو فعال کرنے کا فیصلہ

منگل 31 مارچ 2020ء
اداریہ
وفاقی حکومت نے تعمیراتی صنعت کو فوری طور پر فعال کرنے‘ مال بردار گاڑیوں کے لئے شاہراہیں کھولنے‘فوڈ سپلائی چین بحال کرنے اور سرمایہ کاروں کو تعمیراتی شعبے میں رعایت دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیر اعظم نے ساتھ ہی ذخیرہ اندوزوں کو انتباہ کیا ہے کہ وہ اگر اپنے مذموم کام سے باز نہ آئے تو ان پر سختی کی جائے گی۔کرونا وائرس کی وجہ سے تمام شعبے دبائو کا شکار ہیں اندریں حالات اگر بہتری کے لئے کچھ تدابیر اختیار کی جا سکتی ہیں تو ان سے ضرور رجوع کیا جانا چاہیے۔ حکومت کی طرف سے ابتدائی فیصلوں
مزید پڑھیے


رحم کر اپنے نہ آئینِ کرم کو بھول جا

منگل 31 مارچ 2020ء
ارشاد احمد عارف
حکومت پر تنقید بہت ہو چکی‘ کرونا کی وبا سے نمٹنے میں کس سے کہاں غلطی ہوئی؟سب عیاں ہے ۔اجتماعی اور انفرادی سطح پر توبہ و استغفار کا سلسلہ جاری ہے ۔گھروں اور مساجد میں رات کے وقت اذانوں کی دیرینہ روائت کا احیا ہوا ۔بیت اللہ‘ مسجد نبویؐ اور دنیا کے ایک کونے سے دوسرے کونے تک پھیلی مساجد کی بندش سے اہل ایمان کو یہ پیغام ملا کہ پہلے اللہ تعالیٰ موذن کے ذریعے ہر کلمہ گو کو اپنے گھر بلاتا تھا مگر غافل‘ کاہل اور زود فراموش انسان نے اس بلاوے کی پروا نہ کی اب لوگ
مزید پڑھیے


زندگی محفوظ ہے

منگل 31 مارچ 2020ء
سعد الله شاہ
انسان کے بس میں کچھ بھی نہیں‘ بس جستجو واجب ہے مالی دا کم پانی لانا بھر بھر مشکاں پاوے۔ مالک دا کم پھل پھل لانا لاوے یا نہ لاوے۔ قدرت نے فطرت میں بہت کچھ رکھا ہے۔ یہ دوست بھی اور استاد بھی۔انسان کی افتاد طبع بھی مگر عجیب ہے ۔بے نیازی‘ لاپرواہی یا بغاوت اس کی زنبیل میں مگر ناکامیاں ہیں اور اس کے سامنے ابدی پیغام بھی ہے کہ وہ خسارے میں ہے وہ کرے بھی تو کیا کرے کہ صنوبر باغ میں آزاد بھی ہے پابہ گل بھی ہے اور پھر غالب کے بقول مرنے اور
مزید پڑھیے


گھاٹے کا سودا کیوں؟

پیر 30 مارچ 2020ء
اشرف شریف
وپرو گروپ اپنے کاروباری حجم میں کافی بڑا ہے۔یہ خالص کاروباری لوگ ہیں، سرمایہ کاری کرتے ہیں، منافع لیتے ہیں، اچھی زندگی گزارتے ہیں۔ اپنے اردگرد کو صاف، صحتمند اور آسودہ رکھنے کیلئے خاصا خرچ کرتے ہیں۔ اس گروپ کے چیئرمین عظیم پریم جی نے کرونا سے مقابلے کے لئے بھارتی حکومت کو 50ہزار کروڑ روپے عطیہ کیے ہیں۔ اس رقم کو اربوں روپے میں پڑھنے کی قابلیت مجھ میں نہیں ۔ اپنے کیلکولیٹر پر ضربیں دیں، رقم پڑھ سکیں تو پڑھ لیں۔ عظیم پریم جی کمپنی میں اپنے 34فیصد حصص پہلے ہی عطیہ کر چکے ہیں۔ یہ 34فیصد حصص
مزید پڑھیے


کرونااور سمجھدار میڈیا

پیر 30 مارچ 2020ء
عبداللہ طارق سہیل
عشرے بیت گئے یا پھر صدیاں گزر گئیں‘ یا شاید ابھی کل ہی کی بات ہے۔ بہرحال سکول کے دن تھے کہ خبر آئی اسرائیل سے جنگ میں مصر کے جزیرہ نما سینائی پر یہودیوں کا قبضہ ہو گیا۔ جنگ کراچی میں اس سانحے پر نظم چھپی جس کا بس ایک ہی مصرع یاد رہ گیا ہے ع آج سینائی کی مسجدیں بے اذاں جس نے پڑھی‘ رو دیا۔شاعر نے اپنا دکھ ظاہر کیا تھا ورنہ حقیقت میں سینائی(سویز) کی کوئی مسجد بے اذان نہیں ہوئی تھی۔ بدستور نمازیوں سے آباد تھی۔ لیکن آج زمانے نے وہ ناقابل یقین
مزید پڑھیے


یہ وقت بھی گزرجائے گا

پیر 30 مارچ 2020ء
ارشاد محمود
گزشتہ چندہفتوں میں دنیا کی ہیت ہی بدل گئی۔ عالم انسانیت پر قیامت ٹوٹ پڑی ہے ۔رنگ ونسل ،امیر غریب کی تمیز باقی نہ رہی۔ گھروں میں لوگ محصور ہوگئے اور شہر سنسان۔ گویا کہ قیامت سے پہلے قیامت برپا ہوچکی ہو ۔ تین چار ہفتوں کی تنہائی نے انسانوں کو اپنے طرزفکر اور رویوں پر ازسر نو غور کا موقع بھی دیا ۔ آخر ایسا کیا ہوا کہ بنی نوع انسان پر ایک عالمگیر افتاد آن پڑی ۔ ایک ایسی افتاد جس کے سامنے طبی ماہرین ہی نہیں جدید سائنس کے عقبری بھی ہاتھ باندھے بے بسی کی تصویر
مزید پڑھیے


مدارس دینیہ میں ’’تصوف‘‘ کی تدریس…(1)

پیر 30 مارچ 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
قومی اور بین الاقوامی سطح پر ’’دینی مدرسہ سسٹم‘‘ کو بے شمار چیلنجز درپیش ہیں۔ ایک طرف دہشت گردی اور انتہا پسندی کے تانے دینی مدارس سے منسلک کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے‘ جبکہ دوسری طرف دینی مدارس کے فارغ التحصیل۔ دور حاضر میں دینی اور عصری تقاضوں سے عہدہ برآ ہونے کو تیار نہ ہیں۔ جدید عصری تناظر میں صاحبان محراب و منبر‘ اصحاب سجادہ و ارباب مسند تدریس کو اخلاص‘ محبت ‘ رواداری‘ انسان دوستی اور تحمل و برداشت جیسے جذبوں سے سرشار ہونے کی اشد ضرورت ہے‘ جس کے لئے ’’صوفیانہ انداز فکر و عمل‘‘
مزید پڑھیے


ستاروں کی چھاؤں میں

پیر 30 مارچ 2020ء
ہارون الرشید
آدمی کیسا کٹھور ہے۔ کس چیز کے لیے کیسی نادر زندگی وہ قربان کر دیتا ہے۔ تہذیب کی چوکھٹ پر کتنے سچے لوگ، کتنا اجالا اور کتنی روشنی بھینٹ چڑھا دی جاتی ہے۔ بھولے بسرے زمانے جب جاگ اٹھتے اور ٹلنے سے انکار کر دیتے ہیں۔ ماضی نہ مستقبل، وہ ایک ساعت ہر چیز کو ڈھانپ لیتی ہے۔ دل اس کی گرفت میں کیسا تڑپ اٹھتا ہے۔ احمد جاوید سے میں نے کہا تھا: اب کی بار صحرا کا قصد ہو تو مجھے ساتھ لے جائیے گا۔ میری کتنی ہی یادیں روہی کے ریگزار سے وابستہ ہیں... وہی احمد جاوید جنہوں نے
مزید پڑھیے


میڈیا کارکنوں کے لئے حفاظتی کٹس

پیر 30 مارچ 2020ء
اداریہ
وفاق، صوبوں، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے اطلاعات کے وزراء نے کرونا وائرس کو شکست دینے کیلئے صحافیوں کو حفاظتی کٹس فراہم کرنے اور جھوٹی خبروں کے تدارک پر اتفاق کیا ہے۔ طبی اور حفاظتی عملے کی طرح اطلاعاتی شعبے سے وابستہ افراد بھی عوام تک درست خبریں پہنچانے کیلئے کوشاں ہیں لیکن بدقسمتی سے اطلاعاتی شعبے سے وابستہ افراد کے پاس حفاظتی کٹس موجود نہیں ہیں ۔جس کے باعث تین صحافی بھی اس وائرس میں مبتلا ہو گئے ہیں۔ اب وفاق سمیت چاروں صوبوں بشمول آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے تمام وزراء اطلاعات نے فرنٹ لائن پر
مزید پڑھیے


پنجاب حکومت کا خوش آئند پیکیج

پیر 30 مارچ 2020ء
اداریہ
پنجاب حکومت نے کرونا وائرس کی وجہ سے پیدا ہونے والی معاشی صورتحال کے پیش نظر صوبے میں 18 ارب روپے کے صوبائی ٹیکسز معاف کر دیئے ہیںجبکہ روزگار کی بندش سے متاثر ہونے والے 25 لاکھ گھرانوں کو 4 ہزار روپے فی گھرانہ ادا کئے جائیں گے۔ کرونا کی وبا روکنے کیلئے حکومت نے ملک بھر میں لاک ڈائون کر رکھا ہے جس کا مقصد لوگوں کو گھروں میں محفوظ رکھ کر اس وبا کو پھیلنے سے روکنا ہے۔ ظاہر ہے لاک ڈائون سے روزی روٹی کے مسائل جنم لے رہے ہیں۔ دیہاڑی دار طبقے کی پریشانیاں بڑھ رہی
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ





سجاد میر
شہر آشوب




مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں

مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ



افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے

رضا رومی
رومی نامہ




سعید خا ور
حر ف درما ں


راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ





ارشاد محمود
بات یہ ہے

عا بد قر یشی
تجا ہل عا دلا نہ



ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

عابد قریشی
تجاہل عادلانہ

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے


سعید خاور
حرفِ درماں


مظفر بخاری
گستاخی معاف

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
دروا‍‌زہ

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

وسی بابا
باتاں


محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم