BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



’’امریکی خانقاہ‘‘

پیر 09 دسمبر 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
’’امریکی خانقاہ‘‘ سے مراد تصوّف اور خانقاہیت کا وہ ’’امریکی یا مغربی ماڈل‘‘ نہیں ہے ،جس کی بہت سے برانچیں آج ، کل پاکستان میں بھی نظر آنے کو بیتاب ہیں۔۔۔ ،جن کا بنیادی مقصد تصوّف کو دین سے الگ کرکے دنیا کے سامنے پیش کرنا اور صوفیا کے کلام کو حقیقت سے نکال کر مجاز کے رنگ ۔۔۔اور ان کے طرزِ حیات اور اسلوبِ زندگی کو دینی غیرت اور مِلّی حمیّت سے علیحدہ کر کے، متعارف کرواتے ہوئے ،ان کو رواداری ، انسان دوستی ،اور روشن خیالی کی ایسی علامت کے طور پر پیش کرنا۔۔۔ کہ جس کا
مزید پڑھیے


مومن کی فراست ہو تو کافی ہے اشارہ

پیر 09 دسمبر 2019ء
اوریا مقبول جان
امریکی تال پر رقص کرنے والے دنیا بھر کے تجزیہ نگار گزشتہ پندرہ سالوں سے افغانستان میں امریکی اور نیٹو فوج کی ناکامی کا ذمہ دار ایک تنظیم کو گردانتے بلکہ اس کی مسلسل گردان کرتے چلے آ رہے ہیں۔ یوں تو بذات خود یہ کوئی تنظیم، گروہ یا جتھہ نہیں ہے بلکہ افغانستان میں گزشتہ چالیس سالوں سے جاری معرکۂ حق و باطل میں سرفروشوں کا ایک گروہ ہے جو گیارہ نومبر1994ء کو ملا محمد عمر کی قیادت میں اماراتِ اسلامی افغانستان کے قیام کے لیے طالبان کا حصہ بن گیا تھا۔ اسے مغربی دنیا اور اس کے مرعوب
مزید پڑھیے


کاشانہ معاملہ کی جوڈیشل انکوائری کرانے کی ضرورت

پیر 09 دسمبر 2019ء
اداریہ
سابق سپرنٹنڈنٹ کاشانہ افشاں لطیف نے گزشتہ روز پریس کانفرنس میں الزام عائد کیا ہے کہ’’ نو لڑکیوں کو جو اہم معاملات کی گواہ تھیں انہیں کاشانہ سے غائب کر دیا گیا ہے۔ 5 برس میں 25 بچیوں کی جبری شادیاں کرائی گئی ہیں۔ حکومت پنجاب کے کاشانہ بنانے کا مقصد بے سہارا اور یتیم بچیوں کو چھت مہیا کرنے کے ساتھ ساتھ تحفظ فراہم کرنا تھا لیکن بدقسمتی سے یتیم بچیوں کو تحفظ کی بجائے ہراساں کیا جا رہا ہے۔ کاشانہ بلڈنگ میں کوئی بھی اجنبی آمی داخل نہیں ہو سکتا لیکن اب سی سی ٹی وی فوٹیج سے
مزید پڑھیے


کچھ دیجئے پھر لیجئے!

پیر 09 دسمبر 2019ء
اداریہ
ایف بی آر نے ٹیکس نیٹ کو وسیع کرنے کی منصوبہ بندی کرتے ہوئے ٹیکسی ڈرائیوروں، درزیوں، ڈاکٹروں، انجینئروں، کلینک منیجروں، ٹرانسپورٹ منیجروںسے لے کر غلہ منڈی کے آڑھتیوں تک 16 شعبوں کے پروفیشنلز کا ڈیٹا جمع کرنے کے لئے سروے کا فیصلہ کیا ہے۔ علاوہ ازیں دو بار بیرون ملک سفر کرنے والے افراد کو بھی ٹیکس نیٹ میں لانے کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے۔ یوں لگتا ہے کہ ایف بی آر پگڑی کو نہیں دیکھ رہی کہ کس کے لئے بنائی گئی بلکہ سر ڈھونڈ رہی ہے کہ جسے پوری آئے اسے پہنا دی جائے۔
مزید پڑھیے


آئی اے ای اے وفد کا دورہ پاکستان

پیر 09 دسمبر 2019ء
اداریہ
پاکستان کا دورہ کرنے والے انٹرنیشنل اٹامک انرجی ایجنسی کے وفد نے جوہری سلامتی کے ضمن میں پاکستان کے اقدامات کو قابل تعریف قرار دیا ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق آئی اے ای اے وفد کا دورہ نیو کلیئر سکیورٹی کو آپریشن پروگرام کا حصہ تھا۔انٹرنیشنل اٹامک انرجی ایجنسی کے وفد نے چار روزہ دورے کے دوران نیوکلیئر اتھارٹی اور جوہری توانائی کمیشن کے چیئرمین سے ملاقات کی۔ وفد نے کراچی میں نیوکلیئر پاور پلانٹ کا دورہ بھی کیا۔ آئی اے ای اے نے پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز کے ساتھ ایک معاہدہ کیا ہے جس
مزید پڑھیے


ابھی کوئی اچھی خبر نہیں ہے!

پیر 09 دسمبر 2019ء
سجاد میر
کبھی کبھی گماں ہوتا ہے، ملک کے حالات ٹھیک ہو رہے ہیں۔ خاص طور اقتصادیات کے میدان میں چند اشارے بتاتے ہیں کہ ہم بہتری کی طرف گامزن ہیں۔ یہ جو ریٹنگ کے عالمی ادارے ہیں انہوں نے بتایا ہے کہ پاکستان کی حقیقت اب منفی سے مستحکم ہو گئی ہے۔ اس کا مطلب کیا ہوتا ہے؟ تین سو روپے کلو ٹماٹر خریدنے والا عام پاکستانی یہ سوال اہل علم سے پوچھتا ہے بتائو کیا فرق آیا ہے۔ پہلے تو یہ بات اچھی طرح سمجھ لی جائے کہ ان اصطلاحوں کا درست مفہوم معلوم نہ ہو تو آدمی غلط مطلب
مزید پڑھیے


نوشتہ دیوار پڑ ھنے سے عاری؟

پیر 09 دسمبر 2019ء
عا رف نظا می
آج کل میاںشہباز شریف اور ان کے اہل خا نہ کی اربوں روپے کی مبینہ کرپشن حکومت کے اعصاب پر سوار ہے۔ اپوزیشن رہنماؤں کا میڈیا ٹرائل تو خاصے عرصے سے شدومد سے جاری ہے لیکن موجودہ ٹائمنگ اس لحاظ سے قابل غور ہے کہ اب میاں شہبازشریف دوبارہ بلکہ سہ بارہ ٹارگٹ کیوں؟۔ٹی وی چینلز اور پریس کانفرنسوں میں ان پر تابڑ توڑ حملے ہو رہے ہیں۔ مبصرین اس نئی حکمت عملی کا ناتا ملک کی تیزی سے بدلتی ہو ئی سیاسی صورتحال سے جوڑتے ہیں کیونکہ ماضی قریب کے برعکس اب چھوٹے میاں صاحب کا کلیدی رول حکمران
مزید پڑھیے


خدا کی بنائی دنیا

اتوار 08 دسمبر 2019ء
محمد عامر خاکوانی
سوشل میڈیا کی دو اہم ویب سائٹس میں فیس بک اور ٹوئٹر شامل ہیں۔ فیس بک استعمال کرتے مجھے دس سال گزر گئے، چند دن پہلے فیس بک نے اپنے ایک فیچر کے تحت پرانی پوسٹوں کی یاد دلائی تو پتہ چلا کہ نومبر 2009ء میں فیس بک جوائن کی تھی۔ اپنے دس سالہ سفر پر کبھی الگ سے کچھ لکھوں گا۔ ٹوئٹر میں استعمال کرتا ہوں، اگرچہ ہر کچھ عرصے کے بعد اس سے اکتا کر بریک لینا پڑتی ہے۔ فیس بک استعمال کرنے والوں کو شائد ٹوئٹر زیادہ پرکشش نہیں لگتا۔ٹوئٹر ویسے ون لائنر لکھنے والوں کا
مزید پڑھیے


لمحہ ’’فِقریہ‘‘

اتوار 08 دسمبر 2019ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
دوستو! اپنا تو پختہ عقیدہ ہے کہ موجودہ دور بلکہ ہر زمانے میں زندہ دل ہونا ، زندہ ہونے سے بھی زیادہ ضروری رہا ہے۔ مولانا ابوالکلام فر مایا کرتے تھے کہ قدرت نے یہ کائنات چہکتے ہوئے رنگوں، گنگناتی ہوئی فضاؤں اور مسکراتی ہوئی کرنوں سے تخلیق کی ہے، اُترے ہوئے چہرے اور بجھے ہوئے ارمانوں والا فرد، اس رنگین و حسین مرقعے میں کھپ ہی نہیں سکتا۔ ایک شاعر کے بقول: ع اُس دور میں جینا لازم ہے جس دور میں جینا مشکل ہو لیکن ہمارے نزدیک: ع اُس دور میں ہنسنا لازم ہے، جس دور میں ہنسنا مشکل
مزید پڑھیے


کینڈل مارچ کی نہیں انقلابی اقد ام کی ضرورت ہے !!!

اتوار 08 دسمبر 2019ء
عبدالرفع رسول
کاغذی ریکارڈاورانتظامی کارروائی میں کشمیر کو بھارت کا علاقہ دکھانے کے باوجودیہ ایک زندہ حقیقت ہے کہ کشمیر کے مقبول جذبات میںبھارت کے روّیے اور وابستگی کے خلاف ہمیشہ کی طرح آج بھی وہی دم خم ہے۔ کشمیر میں بھارت کاطلسم ٹوٹ چکاہے ۔تاہم افسوس سے کہناپڑتاہے کہ5اگست سے 5اکتوبرپورے دوماہ تک حکومت پاکستان کاکشمیرپر’’ہاہو‘‘بڑے زورشورسے جاری رہااوراس کے بعد حکمران ٹھنڈے پڑگئے ۔یہ صرف آج کی ہی بات نہیں بلکہ ماضی میں بھی ایساہی ہوتارہاہے۔ارباب پاکستان کے بشمول پاکستان کاالیکٹرانک میڈیابھی اس تاک میں رہتے ہیں کہ کب کشمیرمیں جنازے اٹھیں اوروہ ان پربین کرناشروع کردیںحالانکہ یہ صریحاََغلط سوچ
مزید پڑھیے


پاک امریکہ تعلقات اور خوابوں کی تعبیر

اتوار 08 دسمبر 2019ء
ذوالفقار چودھری
آج کی دنیا میں افراد ہوں یا ممالک تعلقات جذبات اور محبت پر نہیں مفادات کی بنیاد پر استوار کرنے کا چلن ہے۔اسے بدقسمتی کہا جائے یا موسموں کی شدت کا اثر کہ برصغیر آج بھی دماغ کے بجائے دل سے نہ صرف سوچتا ہے بلکہ تعلقات بھی مفادات کے بجائے محبت اور نفرت کی بنیادوں پر قائم کئے جا تے ہیں۔ ہمارے محبوب رانا محبوب اختر خطے کی قیادت کی اس روش کو برصغیر کی حماقت (Subcontinent's Stupidity) کہتے ہیں۔ بات صرف بھارت کے متعصب اور تنگ نظر بنیا حکمرانوں کی ہی نہیں پاکستان کی قیادت نے بھی عالمی
مزید پڑھیے


ماواں ٹھنڈیاں چھاواں

اتوار 08 دسمبر 2019ء
ظہور دھریجہ
اے پی این ایس کے جنرل سیکرٹری جناب سرمد علی کی والدہ ماجدہ انتقال فرما گئیں، انا للہ وانا الیہ راجعون ۔ مرحومہ کی وفات پر صدر ، وزیر اعظم، گورنر، وزراء اعلیٰ اور میڈیا سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے تعزیت اور صدمے کا اظہار کرتے ہوئے مرحومہ کی مغفرت اور لواحقین کے صبر و جمیل کیلئے دعا کی ہے۔ ہم سمجھتے ہیں کہ یہ صدمہ ہم سب کا مشترکہ صدمہ ہے کہ مائیں سب کی سانجھی ہوتی ہیں، یہ بھی حقیقت ہے کہ ماں رب کا روپ ہے، ماں مر کر بھی زندہ رہتی ہے۔ البتہ ماں
مزید پڑھیے


مولانا قیام الدین خادم کون تھے؟

اتوار 08 دسمبر 2019ء
محمد حسین ہنز ل
بیسویں صدی میں افغانستان کے ادبی افق پر جن چھ ادیبوں اورشعراء نے انمٹ نقوش چھوڑے ہیں، ادبی حلقوں میں وہ ستاروں کے نام سے مشہور ہیںان میں مولانا قیام الدین خادم بھی شامل ہے۔مولاناخادم ایک ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے کیونکہ وہ بیک وقت عالم دین بھی تھے ،پکے نیشنلسٹ بھی تھے ،شاعر وادیب اور ایک اچھے انسان بھی تھے۔ اُن کے نثری اور شعری فن پارے پڑھنے کے بعدقاری پہلی فرصت میں ان کی افغانیت،وطن دوستی اور ملی تفاخر کو بھانپ لیتا ہے اور ساتھ ساتھ ان کی انسان دوستی اور روشن فکری کامعترف بھی ہوجاتاہے۔پشتون ملاووں
مزید پڑھیے


جیلوںکو اصلاحی مراکز بنائیں

اتوار 08 دسمبر 2019ء
عدنان عادل
سابق وزیراعظم نواز شریف کواحتساب عدالت سے مجرم قرارپائے اورانہیں لاہور کو ٹ لکھپت جیل میںرکھا گیا تووہاں اُنہیں پُرآسائش سہولتیں فراہم گئیں‘ ائیر کنڈیشنر‘ ٹیلی ویژن‘ آرام دہ بیڈ اور گھر کے کھانے ۔جب وہ بیمار ہوئے توان کے علاج معالجہ کو اسپیشلسٹ ڈاکٹروں کی قطار لگ گئی۔مریض قیدی کے معائنے کو نصف درجن میڈیکل بورڈ بنے۔سرکاری خرچ پر ان کا ہربڑے سے بڑے سے بڑا میڈیکل ٹیسٹ ہوا۔اس پر یہ سوالات اُٹھنے لگے کہ جو سہولتیں نواز شریف کوجیل میں دی گئیں ان کا عشر عشیر بھی عام قیدی کو دستیاب نہیں۔ بلکہ عام لوگ تو بہت غیرانسانی
مزید پڑھیے


حوصلوں کی وہیل چیئر پر

اتوار 08 دسمبر 2019ء
سعدیہ قریشی
پارسی ناول نگار بیپسی سدھوا کو جب میں نے پہلی بار پڑھا تو معلوم نہیں تھا کہ وہ وہیل چیئر بائونڈ ہیں اور یہ حادثہ ان کے ساتھ اوائل عمری میں بھی پیش آیا۔ پولیو وائرس نے رفتہ رفتہ چلنے پھرنے سے معذور کر دیا۔ دوسری بار بیپسی سدھوا کو میں نے لنگوسٹکس پڑھتے ہوئے ان کے ایک ناول دی پاکستانی برانڈ پر پریذینٹیشن دینے کے لئے پڑھا تبھی ان کی زندگی کی کہانی کے بارے میں جانا۔ یہ بات بہت انسپریشنل تھی کہ بیپسی سدھوا اوائل عمری میں ہی معذوری کی وجہ سے باقاعدہ سکول نہیں جا سکیں لیکن انہوں
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ









سجاد میر
شہر آشوب

مستنصر حسین تارڑ
ہزار داستان

مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں


مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ


بشریٰ رحمان
چادر چاردیواری اور چاندنی

نو شی گیلا نی
کا لم کہا نی


افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے


رضا رومی
رومی نامہ

انجم نیاز
یادداشت از امریکا



خاور گھمن
گھمن گھیریاں


سعید خا ور
حر ف درما ں


راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ

ایچ اقبال
ایچ اقبال


قدسیہ ممتاز
حرف تازہ





سعود عثمانی
دل سے دل تک

اثر چوہان
سیاست نامہ

عامر متین
عامر متین

ارشاد محمود
بات یہ ہے


ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے



سعید خاور
حرفِ درماں


مظفر بخاری
گستاخی معاف

رعایت اللہ فاروقی
گفتار و پندار

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
کہانی کی کہانی

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

رحمت علی رازی
درون پردہ

وسی بابا
باتاں


راحیل اظہر
غبارِخاطر

محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم