BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



نہیں !عالی مرتبت! نہیں!

هفته 10  اگست 2019ء
محمد اظہارالحق
کون سا خربوزہ میٹھاہے؟ کون سا تربوز اندر سے پھیکا ہے؟ اوپر سے سب ایک جیسے ہیں۔ تربوز بیچنے والا ایک کو ٹوہتا ہے‘ پھر دوسرے کو! تیسرے پر ہاتھ مار کر آپ کو دے دیتاہے آپ مطمئن ہو جاتے ہیں۔ شاید اسے یہی گُر بتایا گیا ہے کہ گاہک کی تسلی کے لئے ایک تربوز پر ہاتھ مارو‘ پھر دوسرے پر‘ تیسرا گاہک کو پیش کر دو! خوش ہو کر خرید لے گا! انسان باہر سے ایک جیسے ہیں! وہی سر‘ سر کے اگلے حصے پر پیشانی! پیشانی کے نیچے ناک نقشہ! ہائے افسوس! یہی تو المیہ ہے ! اسی کا تو رونا ہے۔
مزید پڑھیے


شہ رگ کشمیر سے کب تک خون بہتا رہے گا؟۔۔۔2

هفته 10  اگست 2019ء
مجاہد بریلوی
’’آپ ہی بتائیں میں کیا کروں ؟ بھارت پر حملہ کر دوں؟ ‘‘ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان کی بیچارگی اور جھنجھلاہٹ اپنے عروج پر تھی جب اپوزیشن کے سینیٹرز اور اراکین اسمبلی کے پہ در پہ حملوں کے بعد خان صاحب نے جس طرح بھارت پر حملہ کرنے کا اظہار کیا اس سے لگا کہ واقعی وہ ابھی تک کرکٹ کی کپتانی سے نہیں نکلے ورنہ اس بیچارگی اور بے بسی سے بھارت پر حملے کا اظہار نہ کرتے۔ اسکرینوں سے لگے کروڑوں پاکستانی عوام پچھلے بہتر گھنٹے سے بے زاری کی
مزید پڑھیے


ایک سپاہی کی یاد

هفته 10  اگست 2019ء
ہارون الرشید
کیا ہمارے لکھنے والوں نے پاک فوج کے باطن میں جھانکنے کی کبھی زحمت کی ہے؟ کیسا کیسا گوہرِ تابدار ہیروں کی اس کان میں تھا اور اب بھی ہے۔ فاروق گیلانی کے لہجے میں وہ سرشاری تھی، جو ایک دریافت سے جنم لیتی ہے... حیرت اور اشتیاق۔ انہوں نے ایک سبکدوش فوجی افسر کے بارے میں بتایا ''ہم وزارتِ زراعت والے جنگل اگاتے ہیں‘‘ انہوں نے کہا ''ادائیگی مشروط ہے کہ خاردار تارچاروں طرف ہو اور اسّی فیصد پودے سلامت ‘‘۔ بریگیڈیئر صاحب سے انہوں نے پوچھا: کتنے فیصد؟ جواب ملا: سوفیصد۔ حیرت سے انہوں نے سوال کیا کہ
مزید پڑھیے


شناختی کارڈ کی شرط موخر کرنے کا ناقابل فہم فیصلہ

هفته 10  اگست 2019ء
اداریہ
چیئرمین ایف بی آر اور تاجروں کے درمیان ٹیکس امور پر مذاکرات کے بعد حکومت نے 30ستمبر تک شناختی کارڈ کی شرط موخر کرنے کا اعلان کیا ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت نے ملکی معیشت کو اپنے پائوں پر کھڑا کرنے کے لئے اپنے پہلے بجٹ میں شناختی کارڈ کی شرط سمیت متعددٹیکس اصلاحات کا اعلان کیا تھا۔ جن میں تاجر برادری کی ٹیکس حکام کے ہراساں کرنے کی شکایات کے ازالے کے لئے خود کار نظام کے تحت ٹیکس ادائیگی اور ٹیکس اہلکاروں کے چھاپے مارنے کے اختیار کو محدود کرنا شامل تھا۔ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ
مزید پڑھیے


قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی ‘کیا یہ مسائل کا حل ہے؟

هفته 10  اگست 2019ء
اداریہ
قومی اسمبلی کے رواں اجلاس میں گزشتہ چند روز سے جس ہنگامہ آرائی ‘ شور و غوغا نعرے بازی اور ایوان کے باہر گتھم گتھا ہونے کے واقعات ہو رہے ہیں اس سے عوام کے منتخب ارکان کی حالات کی سنجیدگی کے حوالے سے عدم حساسیت کا پتہ چلتا ہے۔ ملک و قوم کو آج مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور دیگر بیرونی چیلنجوں کی وجہ سے جس مشکل کا سامنا ہے اس کا تقاضا تو یہ ہے کہ قومی اسمبلی جیسے فورم کو مسائل کو حل کرنے ان پر اتفاق رائے اور اتحاد و تنظیم کی فضا بنانے کے لیے
مزید پڑھیے


تنازع کشمیر اور اقوام متحدہ کا کردار

هفته 10  اگست 2019ء
اداریہ
سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ انٹونیوگوگرس نے بھارت کے یکطرفہ اقدام پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ تنازع کشمیر کا فیصلہ اقوام متحدہ کے چارٹر کے مطابق ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کا کشمیر پر موقف سلامتی کونسل کی قرار دادوں اور ادارے کے چارٹر میں بتائے گئے اصولوں پر مبنی ہے۔ شملہ معاہدے کی اہمیت پر بات کرتے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کہا کہ اس معاہدے کی رو سے مسئلے کا حل پرامن طریقے سے تلاش کیا جانا تھا۔ پاکستان اور بھارت کی آزادی کو قاعدے قانون کے مطابق نہ رکھنے کی ذمہ
مزید پڑھیے


کہاں جائیں؟

هفته 10  اگست 2019ء
عا رف نظا می
بدھ کا روز مقبوضہ کشمیر سے متعلق سرگرمیوں کے حوالے سے بہت اہم تھا۔پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں اس مسئلے پر سیر حاصل بحث،متفقہ خصوصی قرارداد اور پھر قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں اہم فیصلے کئے گئے۔مشترکہ اجلاس اس لحاظ سے خصوصی اہمیت کا حامل تھا کہ اکادکا ارکان کے علاوہ عمومی طور پر اپوزیشن اور حکومت کے ارکان پارلیمنٹ کشمیر کے حوالے سے ایک ہی صفحے پر نظر آئے۔اگرچہ وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری حکومتی بینچوں میں بیٹھنے کے باوجود سینیٹر مشاہد اللہ کی تقریر میں رخنہ اندازی کرتے رہے جس کا مشاہد اللہ نے بھی ترکی
مزید پڑھیے


حکومتؔ اور اپوزیشنؔ، غزوۂ تبوک ؔسے روشنی لے !

جمعه 09  اگست 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ خرابیٔ صحت کی بنا پر مَیں چند دِن تک کالم نہیں لکھ سکا ۔مودی حکومت کی طرف سے صدارتی فرمان کے تحت بھارتی آئین میں مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آرٹیکل 370 اور 35 A ختم کرنے کے نتیجے میں مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کرنے کے واقعہ کے ردِ عمل میں مقبوضہ کشمیر میں حریت پسندوں کی سرگرمیاں تیز سے تیز تر ہوگئی ہیں ۔فی الحقیقت عالمی ضمیر جاگ اُٹھا ہے اور شاید اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل کا بھی ؟۔ 5 اگست کو وزیراعظم عمران خان کی صدارت میں قومی سلامتی
مزید پڑھیے


یہ گھڑی محشر کی ہے

جمعه 09  اگست 2019ء
ارشاد احمد عارف
بھارت نے اپنے پائوں پر کلہاڑی مار دی ہے‘ بھارت سیاسی محاذ پر جتنا آج منقسم ہے‘ صرف اندرا گاندھی کی طرف سے ایمرجنسی کے نفاذ کے موقع پر تھا‘ اس سے کبھی پہلے نہ بعد۔ کانگریس نے مودی کے اقدامات کو یکسر مسترد کیا۔ اس منافق جماعت کو مسلمانوں سے کوئی ہمدردی نہیں‘ وہ بھارتی سیکولرازم کو خطرے میں محسوس کر رہی ہے جو ہندو توا کاپُر فریب چہرہ ہے۔ جموں و کشمیر پر فوجی قبضہ کانگریسی وزیر اعظم جواہر لال نہرو کے دور میں ہوا اور سب سے زیادہ ہندو مسلم فسادات بھی نہرو اور ان کی پتری
مزید پڑھیے


اے اقوام متحدہ محصورین کشمیرکے احوال کی ذرا خبرلیجئے

جمعه 09  اگست 2019ء
عبدالرفع رسول
سوموار5اگست کوبھارتی آئین میںمقبوضہ کشمیرکی امتیازی حیثیت اور خصوصی درجے کے خاتمے کے اعلان کے بعدمقبوضہ وادی کشمیراورجموں کے پیرپنچال اورچناب کے مسلم اکثریتی علاقے تادم تحریر مسلسل چاردنوں سے ایک دوسرے اور باقی پوری دنیا سے کٹے ہوئے ہیں۔اتوار4اگست کی شب مقبوضہ کشمیر میں ٹیلیفون، موبائل نیٹ ورک اور انٹرنیٹ بند ہوئے تھے وہ تاحال بند ہیں اور پوری وادی اورجموں کے مسلم علاقے بھارت کی سفاک فوج کے زبردست حصاراورنرغے میں ہیں۔ کسی کو نہیں پتا کہ کیا چل رہا ہے۔ ہر جگہ خار دار تاریں لگی ہیں اور ہرطرف فوج ہی فوج موجود ہے۔
مزید پڑھیے


ادبی اداروں کی اہمیت

جمعه 09  اگست 2019ء
ظہور دھریجہ
پچھلے دنوں پنجاب انسٹیٹیوٹ آف لینگویج آرٹ اینڈ کلچرلاہور (پلاک) کی سربراہ محترمہ صغریٰ صدف ملتان آئیں ، سرکٹ ہائوس میںاجلاس سے خطاب کرتے ہوئے محترمہ نے کہا کہ وسیب کے ادیب ، شاعر اور دانشورتعاون کریں کہ ملتان آرٹس کونسل میں پنجاب رنگ کے نام سے پروگرام کرا رہے ہیں ، اس موقع پر میں نے عرض کیا کہ یہ وہی جگہ ہے جہاں پلاک کے قیام سے قبل ڈاکٹر شہزاد قیصر ملتان تشریف لائے ، وسیب کے شاعروں ، ادیبوں اور دانشوروں کو بلایا گیا اسی سرکٹ ہائوس میں اجلاس ہوا، ڈاکٹر شہزاد قیصر نے اس موقع پر
مزید پڑھیے


لیرو لیر۔ کشمیر!

جمعه 09  اگست 2019ء
سعدیہ قریشی
کشمیری تو سات دہائیوں سے قسمت کے الٹے توے پر پڑے سلگ رہے ہیں اور ہمارے ان بہن بھائیوں کی زندگی مسلسل سلگتی چلی جا رہی ہے۔ ظلم کی اس الائو میں کبھی بھڑکائو پیدا ہوتا ہے تو کبھی ہلکے ہلکے یہ سلگتا رہتا ہے۔ بجھتا کبھی نہیں۔ امن کے پانیوں کے چھینٹوں کو ترستے ہوئے کشمیری زندگی کو اسی ڈھنگ میں جیتے رہے ہیں۔ ہم اور آپ زندگی کے اس بھیانک رخ کا تصور بھی ذہن میں نہیں لاسکتے اور اگر ہم تصور کرنے کی کوشش کریں کہ ایک ایسی زندگی کہ جو مسلسل موت ‘ عدم تحفظ‘ عصمت
مزید پڑھیے


شہ رگ ِ پاکستان سے کب تک خون بہتا رہے گا؟

جمعه 09  اگست 2019ء
مجاہد بریلوی
’’19اکتوبر 1947کی درمیانی شب کا یہ واقعہ ہے کہ چھاپہ مار بجلی کی سرعت کیساتھ دشمن کے علاقے میں داخل ہوئے۔ان کی تیز رفتاری کا اندازہ اس سے لگایا جاسکتا ہے کہ وہ ایک سو پندرہ میل کا فاصلہ پانچ روز میں طے کرتے ہوئے سرینگر سے صرف چارمیل کے فاصلے پر پہنچ گئے جہاں سے سرینگر کی ٹمٹماتی ہوئی روشنیاں صاف نظر آرہی تھیں۔وہ بارہ مولا 30میل پیچھے چھوڑ آئے تھے اور یہاں تک پہنچتے پہنچتے ان کی تعداد تین ہزار تھی۔مہاراجہ کشمیر سرینگر سے فرار ہوکر دہلی پہنچ گیا تھا۔اور بھارتی حکومت سے مدد کی
مزید پڑھیے


جو ستر سال میں نہ ہوا

جمعه 09  اگست 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
ترک وزیر اعظم کے حوالے سے یہ خبر آئی ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر کو ضم کرنے کے بھارتی فیصلے پر بھارت سے بات کریں گے۔ معاملات کی شکل نو کے بعد یہ پہلا حرف نیم تسلی ہے جو ہمیں سننے کو ملا ہے۔ نیم تسلی اس لئے کہ ترکی نے ابھی تک بھارتی اقدام کی مذمت نہیں کی اور ناقابل یقین حد تک یہ بھی کہ اس نے ہمارا ساتھ دینے کا اعلان بھی نہیں کیا۔ پاکستانی وزیر اعظم نے ترک وزیر اعظم کو فون کیا تو جواب میں انہوں نے کہا کہ معاملات کو ترکی غور سے دیکھ
مزید پڑھیے


مکہ کی شہری ریاست اور----’’حج‘‘

جمعه 09  اگست 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
"92"کے "نور ِقرآ ن "کی لائیو ٹرانسمیشن میں ایک کالر نے سوال پوچھا لیا کہ ـ"ریاست مدینہ "کی بات تو ہوتی ہے لیکن کیا"مکہ کی شہری ریاست "کابھی کہیں کوئی ذکرملتا ہے ---؟کیا یہاں بھی کوئی حکومتی نظم ونسق اور قانون کی عملداری تھی ---؟سوال اپنی جگہ صائب تھا ۔ رمضان المبارک 8ہجری میں فتح مکہ کا عظیم معرکہ سَرہوا، اور یہ خطہ بھی "ریاست مدینہ " کی عملداری میںعملاً شامل ہوگیا، نبی اکرم ﷺ نے فتح مکہ کے بعد پندرہ روز یہاں قیا م فرمایا ۔ عتاب بن اُسید ،کو مکہ کا گورنر بنایااور فرمایا ،"میں نے اللہ کے
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ





سجاد میر
شہر آشوب




مستنصر حسین تارڑ
ہزار داستان

مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں


مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ


بشریٰ رحمان
چادر چاردیواری اور چاندنی

نو شی گیلا نی
کا لم کہا نی


افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے


رضا رومی
رومی نامہ

انجم نیاز
یادداشت از امریکا



خاور گھمن
گھمن گھیریاں


سعید خا ور
حر ف درما ں

راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ

ایچ اقبال
ایچ اقبال


قدسیہ ممتاز
حرف تازہ




سعود عثمانی
دل سے دل تک

اثر چوہان
سیاست نامہ

عامر متین
عامر متین

ارشاد محمود
بات یہ ہے


ناصرخان
فرنٹ لائن


عدنان عادل
امروزوفردا

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

رعایت اللہ فاروقی
گفتار و پندار

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
کہانی کی کہانی

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

رحمت علی رازی
درون پردہ

وسی بابا
باتاں


راحیل اظہر
غبارِخاطر

محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم