BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



مشکوک شناختی کارڈوں کا معاملہ

منگل 12 نومبر 2019ء
اداریہ
فیصل آباد سے روزنامہ 92 نیوز کی رپورٹ کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں کی رپورٹس کے تناظر میں ڈیڑھ لاکھ سے زائدشناختی کارڈں کو بلاک کر دیا گیاہے اور بلاک کئے جانے والے شناختی کارڈرکھنے والے افراد کو نادرا دفاتر میں پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے۔ نادرا کا قیام 21 سال پیشتر 1998ء میں عمل میں آیا تھا، تب سے اب تک اس کی کارکردگی بہت سی شکایات کے باوجود عمومی طور پر بہتر رہی ہے تاہم شناختی کارڈوں کے اجراء کے ضمن میں کچھ ایسے سقم ضرور موجود ہیں جو نہ صرف قابل اصلاح ہیں
مزید پڑھیے


برصغیر کا امن و ترقی کشمیر سے مشروط

منگل 12 نومبر 2019ء
اداریہ
وزیر اعظم عمران خان نے کرتار پور میں سکھ یاتریوں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے اس بات کی یاددہانی کرائی کہ برصغیر میں ترقی کے لئے تنازع کشمیر کا حل ناگزیر ہے۔ یہ کہا اس لئے بھی درست معلوم ہوتا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان جب کبھی مذاکرات کا سلسلہ چلا اور اس کے نتیجے میں سی بی ایم کئے گئے تو کسی معمولی سے واقعے نے ساری محنت پر پانی پھیرتے دیر نہیں لگائی۔ اعتماد سازی کی ہر تدبیر ریت پر لکھی تحریر ثابت ہوئی جو پانی کی کمزور سی لہر کے ساتھ بہہ گئی۔ دنیا کئی
مزید پڑھیے


لبر ل بھی خفا مجھ سے ہے ملا بھی ہے ناخوش

منگل 12 نومبر 2019ء
قدسیہ ممتاز
سیرت النبی ﷺ کانفرنس سے خطاب میں وزیر اعظم عمران خان نے بڑی اہم اور قابل غور گفتگو کی جبکہ ان کے خلاف ایک مذہبی جماعت تن تنہا دھرنا دیے بیٹھی ہے اور اس کے دوسرے دور میں داخل ہو چکی ہے۔ برسبیل تذکرہ باوثوق ذرائع کے مطابق عائشہ گلالئی پشاور موڑ پہ ہی دھرنا دینے کا ارادہ باندھے بیٹھی ہیں جو مبینہ طور پہ اس ماہ کے آخری عشرے میں شروع ہوگا۔یہ یاد رہنا چاہیے کہ عائشہ گلالئی نے وزیر اعظم پہ اخلاقی حوالے سے الزامات عائد کئے تھے اور ان کی کردار کشی میں قابل ذکر حصہ ڈالا
مزید پڑھیے


خانپور کی تاریخی اہمیت

منگل 12 نومبر 2019ء
ظہور دھریجہ
پچھلے دنوں خانپور کی نواحی بستی دھریجہ نگر میں جھوک پبلی کیشن کی سالگرہ تھی ۔ ممبر صوبائی اسمبلی میاں شفیع محمد سمیت وسیب کے ادیبوں ، شاعروں اور فنکاروں نے شرکت کی ۔ مقررین نے خانپور کی تاریخی ‘ ثقافتی حیثیت کے ساتھ ساتھ معاشی پسماندگی کا بھی جائزہ لیا ۔ مقررین نے کہا کہ یہ غنیمت ہے کہ خانپور کا واحد صنعتی ادارہ حمزہ شوگر مل خانپور کی سماجی ترقی میں اپنا کردار ادا کر رہا ہے اور کاشتکاروں کو بھی اسکا فائدہ ہو رہا ہے۔ مگر ضرورت اس بات کی ہے کہ خانپور میں مزید صنعتیں قائم
مزید پڑھیے


مسئلہ کشمیر۔ مولانا کی سفارتی خدمات

منگل 12 نومبر 2019ء
ارشاد احمد عارف
مولانا فضل الرحمن کا دھرنا جاری ہے اور وہ ہر روز مسئلہ کشمیر ‘کرتار پور راہداری‘ تحفظ ناموس رسولؐ قانون اور ملکی معیشت کے حوالے سے عمران خان کی خوب درگت بنا رہے ہیں ۔مولانا عرصہ دراز تک بطور چیئرمین خارجہ امور کمیٹی و امور کشمیر کمیٹی(قومی اسمبلی) خدمات انجام دے چکے‘ ان کی غیر معمولی صلاحیتوں اور خدمات کے حوالے سے پاکستان کے سابق سفارت کارکرامت غوری نے اپنی کتاب ’’بار آشنائی‘‘ میں اظہار خیال کیاہے ۔ کرامت غوری لکھتے ہیں! ’’مولانا فضل الرحمن (بحیثیت چیئرمین خارجہ اُمور کمیٹی)کویت کے سرکاری دورہ پر تشریف لائے۔ ان کی آمد سے
مزید پڑھیے


12ربیع الاول محض ایک تہوار نہیں

اتوار 10 نومبر 2019ء
سعدیہ قریشی
یہ سوال میرے آٹھ سالہ بیٹے نے کل مجھ سے کیا۔’’ماما ہم 12ربیع الاول کو کیسے مناتے ہیں‘‘ میں ایک لمحے کو چونک گئی اور سوچا کہ اس معصومانہ مگر اہم سوال کا کیا جواب دوں کیا 12ربیع الاول محض ایک تہوار ہے۔؟ جسے ایک روز منا کر ہم نے اپنا فرض پورا کر لیا۔کیا صرف گھروں ومکانوں ‘ بازاروں‘ دفتروں ‘ گلی محلوں پر چراغاں کرنا‘ دیگیں پکوا کر بانٹنا یا حسب توفیق کچھ بھی بانٹنا ہی 12ربیع الاول کو منانا ہے۔ مجھے میرے بیٹے نے کہا کہ ہم بھی گھر پر لائٹس لگوائیں گے کیونکہ پیارے نبیؐ کا
مزید پڑھیے


بھارت کی جنگی تیاریاں

اتوار 10 نومبر 2019ء
عدنان عادل
بھارت کے لیے اس سے زیادہ خوشی کی بات کیا ہوگی کہ جب اس نے مقبوضہ کشمیر کو ہڑپ کیا تو پاکستان سیاسی خلفشاراور انتشار میں مبتلا ہے۔ افواج پاکستان سرحد پر دشمن کے آگے بند باندھے کھڑی ہیں‘ آئے روز ہمارے جوان شہید ہورہے ہیں جبکہ قوم کے نام نہاد رہنما اقتدار کے گھنائونے کھیل میں مصروف ہیں۔ بلاشبہ بھارت اور پاکستان جنگ کے دہانے پر بیٹھے ہیں۔کشمیر کی سرحد پر کشیدگی بڑھتی جارہی ہے۔ لائن آف کنٹرول پر فائرنگ ‘ گولہ باری کا تبادلہ ہوتا رہتا ہے۔بھارتی جارحیت کے نتیجہ میںدرجنوںکشمیری شہری اور فوجی شہید ہوچکے ہیں۔ کچھ عرصہ
مزید پڑھیے


مولانا بندگلی میں جا چکے ہیں؟

اتوار 10 نومبر 2019ء
محمد عامر خاکوانی
مولانا فضل الرحمن اپنی سیاسی زندگی کے اہم ترین چیلنج سے نبردآزما ہیں۔ ان کی کامیابی ہی سیاسی ساکھ اور عوامی پزیرائی کی ضامن ہوگی ،جبکہ اندازے کی غلطی ، کوئی ایڈونچر انہیں ہیرو سے زیرو بنا سکتا ہے۔ شائد یہی احساس مولاناکے اعصاب پر بھی اثرانداز ہو رہا ہے۔ وہ ایک گھاگ، تجربہ کار ، گرم سرد چشیدہ سیاستدان ہیں۔ سوچ سمجھ کر قدم اٹھاتے ہیں، واپسی کا راستہ کھلا رکھتے اور سیاسی یوٹرن لینے میں عار نہیں سمجھتے ۔ اگرچہ ہرسمجھدار آدمی کی طرح وہ اسے یوٹرن نہیں کہتے اور نہ اس کا دفاع کرنے کی غلطی کرتے
مزید پڑھیے


نواز شریف پر پھر ڈیل کا الزام

اتوار 10 نومبر 2019ء
خاور نعیم ہاشمی
میرا یقین تو اب تک کامل ہے کہ نواز شریف واقعی علیل ہیں اور ان کی بیماری اس خطرناک موڑ تک پہنچی ہوئی ہے جہاں،، کچھ ،،بھی ہو جایا کرتا ہے، لیکن ,,میرے اس یقین کا کسی ڈیل کے ہونے یا نہ ہونے سے کوئی تعلق نہیں ہے، بتایا جا رہا ہے کہ میاں صاحب آج شہباز شریف کے ساتھ لندن روانہ ہو رہے ہیں، میں میاں صاحب کی علالت اور ان کی بیرون ملک روانگی کو علیحدہ علیحدہ منظر میں دیکھتا ہوں اور سمجھتا ہوں کہ وزیر اعظم عمران خان نے انہیں خود باہر چلے جانے کی ،، اجازت،،
مزید پڑھیے


جانا ٹھہر گیا!

اتوار 10 نومبر 2019ء
راوٗ خالد
نواز شریف جا رہے ہیں اورپتہ نہیں مجھے کیوں لگ رہا ہے کہ مولانا فضل الرحمٰن بھی اسی ہفتے چلے جائیں گے اور شاید دسمبر تک آصف زرداری بھی خود ساختہ جلا وطنی اختیار کر لیں۔ کیا مولانا فضل الرحمٰن کا اس ساری سیاسی ہجرت کے اہتمام سے کوئی تعلق ہے، شاید ابھی یہ ثابت کرنا مشکل ہو لیکن مولانا فضل الرحمٰن جس شدّ و مد سے نواز شریف اور آصف زرداری کی کرپشن مقدمات میں گرفتاری اور سزا کے حوالے سے کنٹینر پر کھڑے ہو کر بات کرتے ہیں اس سے انکا اپنے ان دو پرانے حکومتی
مزید پڑھیے


صلی اللہ علیہ وسلّم

اتوار 10 نومبر 2019ء
محمد اظہارالحق
ابھی آپ نے اس تحریر کا پہلا فقرہ ہی پڑھا ہے۔ ان چند لمحوں میں کتنے افراد نے صلی اللہ علیہ وسلّم کہا ہو گا؟ لاکھوں کروڑوں نے! اس وقت دنیا کے مختلف خطوں میں ہزاروں لاکھوں اذانیں ہو رہی ہوں گی! کہیں صبح کی‘ کہیں ظہر کی کہیں عصر کی!کہیں غروب آفتاب کے بعد مغرب کی اذان ہو رہی ہو گی۔ کہیں عشا کی نماز کھڑی ہوئی ہو گی اور تکبیر کہہ رہے ہوں گے! یہ سب اشہدان محمد الرسول اللہ کہہ رہے ہیں! کیا تاریخ انسانی میں ایسی کوئی مثال اور بھی ہے؟ کیا کسی اور ہستی پر چوبیس گھنٹوں
مزید پڑھیے


حکومت کا ریلیف پیکیج

اتوار 10 نومبر 2019ء
اداریہ
چیئرمین یوٹیلیٹی کارپوریشن ذوالقرنین علی خان نے کہا ہے کہ وزیراعظم سے پانچ بنیادی اشیاء پر ریلیف دینے پر بات ہوئی، پیر تک 6 ارب روپے یوٹیلیٹی سٹورز کو ٹرانسفر ہو جائیں گے۔ پٹرولیم مصنوعات، بجلی اور گیس مہنگی ہونے سے اشیاء خورو نوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کر رہی ہیں۔ اس وقت روزمرہ استعمال کی اشیاء جن میں آٹا، چینی، دال، چاول اور گھی ہے، یہ پانچوں اشیاء دیہاڑی دار مزدور طبقے کی دسترس سے دور ہوتی جا رہی ہیں جس بنا پر غریب کا سانس لینا بھی محال ہو چکا ہے۔ اب حکومت نے ان پانچ بنیادی
مزید پڑھیے


بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر کا متعصبانہ فیصلہ

اتوار 10 نومبر 2019ء
اداریہ
بھارتی سپریم کورٹ کے 5رکنی بنچ نے بابری مسجد کی جگہ رام مندر تعمیر کرنے کا متعصبانہ فیصلہ سنایا ہے۔ مغل بادشاہ ظہیرالدین بابر کے نام سے منسوب بابری مسجد کو 1528ء میں تعمیر کیا گیا تھا۔1853ء میں ایک ہندو گورو نے دعویٰ کیا تھا کہ بابری مسجد جس جگہ پر تعمیر کی گئی یہ جگہ نہ صرف ہندوئوں کے دیوتا شری رام کا جنم استھان ہے بلکہ مسجد کی تعمیر سے پہلے اس جگہ رام مندر تھا۔ اس بے سروپا دعویٰ کے بعدبرطانوی حکومت نے مسلم ہندو تنازع کو دیکھتے ہوئے مسجد کے چاروں اطراف خار دار باڑ لگا
مزید پڑھیے


عہد حاضر اور سیرت طیبہ ؐسے رہنمائی

اتوار 10 نومبر 2019ء
اداریہ
تمام جہانوں کو مبارک ہو کہ آج رحمت للعالمین ؐکی دنیا میں تشریف آوری کا روز سعید ہے۔ اللہ نے اپنے آخری نبیؐ کے ذریعے دین مکمل ہونے کی خبر دی۔ ساڑھے چودہ سو سال ہوئے مسلمان اللہ کی وحدانیت اور خاتم النبین ؐکی تعلیمات کو سینے سے لگائے ہوئے ہیں۔ آپؐ کی تشریف آوری سے قبل کا معاشرہ اپنی غیر اخلاقی اور ناپسندیدہ رسوم کے باعث عہد جاہلیت کہلاتا ہے۔ حکمران رعایا کے مالک کہلاتے تھے۔ اللہ کریم کی فرمانبرداری کی بجائے بہت سے لکڑی ‘ پتھر اور آٹے کے بنے بت خدا بنا لئے گئے تھے۔ بیٹی ہوتی
مزید پڑھیے


گوشت کوترسنے والا افغان بچہ

اتوار 10 نومبر 2019ء
محمد حسین ہنز ل
حاجی سید احمد سیلاب افغانستان میں ایک فلاحی تنظیم چلا رہے ہیں-یہ مشفق اوردرددل رکھنے والاانسان اُن تمام افغانوں سے مالی تعاون کرنا اپنی زندگی کا مشن بناچکے ہیں جوچالیس سالہ فسادات، طویل خانہ جنگی اور بیرونی یلغارکے نتیجے میں لاکھوں کی تعداد میں اپاہج ، یتیم ، بے گھراور بے آسرا ہوچکے ہیں۔ویسے توسچ یہ ہے کہ افغان وطن ہرروز دل فگار خبروں کی زد میں رہتا ہے لیکن بعض اوقات اس ملک میں رونما ہونے والے کچھ واقعات دیر تک سوچنے اور رُلانے پر مجبور کر دیتے ہیں-پچھلے دنوں مجھے حاجی سید احمد سیلاب کی زبانی ایک ایسی
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ









سجاد میر
شہر آشوب

مستنصر حسین تارڑ
ہزار داستان

مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں


مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ


بشریٰ رحمان
چادر چاردیواری اور چاندنی

نو شی گیلا نی
کا لم کہا نی


افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے


رضا رومی
رومی نامہ

انجم نیاز
یادداشت از امریکا



خاور گھمن
گھمن گھیریاں


سعید خا ور
حر ف درما ں

راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ

ایچ اقبال
ایچ اقبال


قدسیہ ممتاز
حرف تازہ




سعود عثمانی
دل سے دل تک

اثر چوہان
سیاست نامہ

عامر متین
عامر متین

ارشاد محمود
بات یہ ہے


ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے



سعید خاور
حرفِ درماں

رعایت اللہ فاروقی
گفتار و پندار

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
کہانی کی کہانی

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

رحمت علی رازی
درون پردہ

وسی بابا
باتاں


راحیل اظہر
غبارِخاطر

محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم