BN









کالم


آج کے کالم 


  


کالم آرکیو


کورونا: دوسری لہر‘احتیاط کی ضرورت

جمعه 16 اکتوبر 2020ء
اداریہ
کورونا کی مہلک وبا سے پاکستان میں مزید 14افراد جاں بحق ہو گئے ہیں۔ جس کے بعد اموات کی تعداد 6601ہو گئی ہے۔ اسلام آباد کے مزید 2تعلیمی اداروں کو 5کورونا کیسز کی تصدیق پر بند کر دیا گیاجبکہ کورونا وار کے پیش نظر فیڈرل ڈائریکٹوریٹ ایجوکیشن کو بھی سیل کر دیا گیا ہے۔ کورونا وائرس کے پھیلائو کو روکنے کے لئے حکومت پاکستان نے سخت احتیاطی اقدامات کئے تھے، جس کے بعد پاکستان ایسی تباہی سے بچا رہا،جو اس موذی وائرس نے ہمارے پڑوسی ممالک بھارت‘ایران ‘چین سمیت یورپی ممالک اور امریکہ میں پھیلائی۔حکومت پاکستان نے ہیلتھ ایمرجنسی کا نفاذ
مزید پڑھیے


کون اس شہر میں سنتا ہے فغانِ درویش

جمعه 16 اکتوبر 2020ء
ارشاد احمد عارف
دمشق میں شیخ سعدی شیرازی نے قحط سے گھبرا کر لوگوں کو عشق بھولتے بھلاتے دیکھا اور پکار اٹھے ؎ چناں قحط سالے شد اندر دمشق کہ یاراں فراموش کروند عشق پاکستان میں اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے قحط کے آثار ہیں نہ اشیائے خورو نوش کی قلت‘ زرعی ملک میں جہاں بارشیں امسال اور سال گزشتہ وقت پر ہوئیں‘اجناس کی پیداوار بھی تسلی بخش ہے قحط ہونا بھی نہیں چاہیے‘ مہنگائی مگر حکومت کے قابو میں آرہی ہے نہ حکمران عوام کو حقیقی اسباب بتانے کے قابل ہیں‘ مہنگائی کے سبب تحریک انصاف کے ووٹروں
مزید پڑھیے


کچھ نہ کچھ ہو رہا ہے

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
سعد الله شاہ
کسی کی نیند اڑی اور کسی کے خواب گئے سفینے سارے اچانک ہی زیر آب گئے ہمیں زمیں کی کشش نے کچھ اس طرح کھینچا ہمارے ہاتھ سے مہتاب و آفتاب گئے ٹائٹینک نے Titanicکے ڈوبنے کا منظر تو آپ سب نے دیکھا ہو گا۔وہ اگرچہ فلم ہے پھر بھی ہولناکی دیکھی نہیں جاتی۔ میں آپ کو اداس نہیں کرنا چاہتا۔اخبار تو مجھے پڑھنا پڑتا ہے اور کافی کچھ دیکھنا ہوتا ہے کہ اگر آپ پڑھ کر کالم نہیں لکھتے تو آپ کو بھی کوئی نہیں پڑھتا۔زیادہ پڑھ پڑھ کر آنکھیں تھک جاتی ہیں۔ آنکھوں کے سامنے دھند سی آنے لگی ہے شاید آنکھیں
مزید پڑھیے


امریکی انتخابات: بھارتی اور یہودی کمیونٹی کی اہمیت

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
افتخار گیلانی
ہاں، حقوق انسانی کے حوالے سے ڈیموکریٹک پارٹی کا موقف سخت ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ خطے میں بھارت کی اہمیت کے پیش نظر بائیڈن کی پالیسی ہمہ جہتی ہوگی اور چین سے نمٹنے کیلئے چار ملکی اتحاد آسٹریلیا، جاپان، بھارت اور امریکہ کو مزید جہت ملے گی۔بھارت کے تئیں بائیڈن کی خدمات کا ذکر کرتے ہوئے کپور کا کہنا ہے کہ 1975میں پہلے جوہری دھماکوں کے بعد جب امریکی کانگریس میں بھارت پر اقتصادی پابندیاں لگانے کی قرار داد پیش ہوئی توبس ایک ووٹ سے مستر د ہوئی ۔ وہ ایک ووٹ، جس نے بھارت کو پابندیوں سے
مزید پڑھیے


اپوزیشن اتحاد سے حکومت کو کتنا خطرہ؟

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
احمد اعجاز
اپوزیشن جماعتوں نے اپنے اتحادکو ،پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) کا نام دیا اور یہ اتحاد’’جمہوریت کو خطرہ ہے‘‘کے نام پر قائم ہوا۔پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے گوجرانوالہ میں کل جلسہ ہوگا۔گوجرانوالہ ،مسلم لیگ ن کا شہر سمجھا جاتا ہے۔اس شہر کا انتخاب بھی اس لیے کیا گیا کہ جلسے میں لوگوں کی زیادہ سے زیادہ تعداد کی شمولیت کی بِنا پر کامیاب قراردیا جاسکے۔جلسے جلوسوں کے پہلے مرحلے میں پی ڈی ایم لوگوں کی بڑی تعداد کو ہی اپنی تحریک کی کامیابی پر اکتفا کرے گی،اس کے علاوہ پہلے مرحلے کے جلسے جلوسوں کا منتہااور کچھ نہیں۔پی
مزید پڑھیے


جماعت اسلامی نے مولانا فضل الرحمان سے راہیں کیوں جداکیں؟

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
اصغر خان عسکری
جولائی 2018 ء میں قومی انتخابات میں شکست کے فوری بعد جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سینیٹر سراج الحق نے اسلام آباد میں کارکنوں کا ایک اہم اجلاس ایک ہوٹل میں طلب کیا تھا۔ اس اجتماع میں بعض مرکزی قائدین کے ساتھ اسلام آباد اور پنجاب کے صوبائی ذمہ دار بھی شریک تھے۔محفل میں موجود کارکنوں نے اظہار خیال کرتے ہوئے خوب اپنے دل کی بھڑاس نکال لی ۔انھوں نے انتخابات سے چند مہینے قبل ایم ایم اے میں شمولیت پر ناراضی کا اظہار کیا۔ محفل میں موجود کارکن اس حد تک جذباتی ہوگئے تھے کہ وہ روتے ہوئے اپنا
مزید پڑھیے


اسلامی نظریاتی کونسل کے پیٹ کے کیڑے

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
آصف محمود
جس وقت میں یہ سطور لکھ رہا ہوں ، اسلامی نظریاتی کونسل ایک اہم علمی معاملے پر غوروخوض فرما رہی ہے۔ امید ہے جب تک یہ کالم شائع ہو گا اسلامی نظریاتی کونسل کے بزرگان اور اکابرین قوم کی رہنمائی کا فریضہ ادا کر چکے ہوں گے۔ کیا آپ جاننا چاہیں گے وہ اہم علمی اور فکری مسئلہ کیا ہے جس کی ملک کے طول و عرض سے تشریف لانے والے یہ اہل فکر و دانش مل جل کر گتھیاں سلجھا رہے ہیں؟یہ مسئلہ ہے : بچوں کے پیٹ میں کیڑے۔ روایت ہے :’’ تقریب میں وزارت صحت
مزید پڑھیے


جنات امریکی ہیں یا پاکستانی؟

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
اسداللہ خان
اگر اتفاق فائونڈری چلائی جا سکتی ہے تو سٹیل مل کیوں نہیں چلائی جا سکتی۔ عمران خان کی جانب سے ماضی میں دی گئی اس دلیل کو مستعار لے کر کیا ہم کہہ سکتے ہیں کہ اگر نمل اور شوکت خانم چلایا جا سکتا ہے تو روزویلٹ کیوں نہیں چلایا جا سکتا ؟ یہ مارچ 2016 کی بات ہے جب قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران ممبر قومی اسمبلی ساجدہ بیگم نے سوال کیا تھا کہ کیا روز ویلٹ ہوٹل منافع کما رہا ہے ؟ اگر ہاں تو کتنا؟متعلقہ ادارے کی طرف سے جواب ملا کہ پچھلے پانچ سال میں 16ملین
مزید پڑھیے


جمہوریت اور اکثریت کا حقِ استحصال

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
اوریا مقبول جان
جمہوریت کی فطرت میں یہ انسانی جبلّت بھی پیوست ہے کہ جو کوئی بھی جمہوری اصولوں کی بنیاد پر’’ اکثریت کا ووٹ‘‘ لے کر برسرِ اقتدار آتا ہے، اس کے اندر چھپا بیٹھا ’’آمر‘‘ اچانک بیدار ہو جاتاہے۔’’ اکثریت‘‘ کا غرور اس میں سمایا ہوتا ہے، اقتدار کے ایوانوں کا نشہ اس غرور کی پرورش کرتا ہے اور پھر ایک دن وہ ایک بہت بڑے’’ عفریت‘‘ کی صورت سامنے آجاتا ہے۔ جو معاشرہ جس قدر عدم برداشت اور مخالفین کو کچلنے والے جذبات سے معمور ہوگا، یہ عفریت اسی قدر خونی اور بے رحم ہوگا۔ دنیا کی قدیم ترین جمہوریتوں
مزید پڑھیے


اچھائی بمقابلہ برائی

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
موسیٰ رضا آفندی
مقابلہ آدمی کی سرشت میں داخل ہے ۔ پیدائش کے وقت بچے کا رونا مقابلے کا اعلان ہوتاہے۔ رونا اُس کے وجود کی پہچان ہوتاہے کیونکہ ابھی قوت بیان سے عاری ہوتاہے ۔ زندگی نام ہی مقابلے کا ہے۔ یہ مقابلہ گود سے لحد تک جاری رہتاہے ۔اس مقابلے میں اُس کے ساتھی او رمخالف ہر وقت اُس کے اردگرد رہتے ہیں۔ مقابلہ انسانی وجود کی ضرورت ہے جس کی صلاحیت اُسے پیدائش کے وقت سے ودیعت ہوتی ہے۔ مقابلے کی ابتدا رزق کے حصول کے لئے ماں کی چھاتیوں کی طرف لپکنے سے شروع ہوتی ہے جو وقت
مزید پڑھیے


وہ دن ہوا ہوئے کہ پسینہ گلاب تھا

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
ہارون الرشید
کپتان کا سنہری دور ختم ہو چکا۔ وہ دن ہوا ہوئے کہ پسینہ گلاب تھا۔ اب ان کے لیے بہت تھوڑی سی مہلت باقی ہے کہ موزوں حکمتِ عملی کا تعین کر لیں یا پھسل کر گر پڑیں۔زمانہ کسی پہ مہرباں یا نا مہرباں نہیں ہوتا۔ ہر ایک کو وہی کاٹنا ہوتاہے، جو اس نے بویا ہو۔ اب دو محاذوں کا سامنا ہے۔زندگی اجیرن کرتی مہنگائی اوراپوزیشن کا بڑھتا ہوا دباؤ، جو 16اکتوبر کو گوجرانوالہ کے جلسہ ء عام میں متشکل ہوگا۔خان کے بارے میں حسنِ ظن بہت تھا لیکن تابہ کے؟ یہ احساس بھی تھا کہ پہلوں نے کرپشن کی
مزید پڑھیے


ناجائز منافع خوری کیخلاف سخت اقدامات

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
اداریہ
وزیر اعظم عمران خان نے بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں خصوصاً گندم اور چینی کی عدم دستیابی اور قیمتوں پر قابو پانے کے حوالے سے کہا ہے کہ ذخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع خوری کیخلاف سخت ایکشن کو یقینی بنایا جائے۔ صورتحال یہ ہے کہ ماضی کی قریباً ہر حکومت ناجائز منافع خوری اور ذخیرہ اندوزی کے خلاف ایسے ہی سخت اقدامات کی ہدایات دیتی رہی ہے۔ ان اقدامات کے نتیجہ میں آج تک نہ صرف کوئی بہتری نظر نہیں آئی‘ بلکہ ضروری اشیاء خصوصاً‘ گندم‘ چینی ‘آٹے کی قیمتیں شیطان کی آنت کی طرح ہمیشہ بڑھتی ہی رہی
مزید پڑھیے


اربوں روپے کی ریکوری میں حکم امتناعی

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
اداریہ
پبلک اکائونٹس کمیٹی کو بتایا گیا ہے کہ 1856ارب روپے کی ٹیکس ریکوری عدالتی مقدمات اورحکم امتناعی کی وجہ سے رکی ہوئی ہے۔ کمیٹی میں متفقہ طور پر ریکوری کے لئے پارلیمنٹ میں مثبت کردار اد کرنے کافیصلہ ہوا ہے۔ پاکستان کو شدید معاشی بحران کا سامنا ہے۔ حکومت غیر ملکی قرضوں کے سود کی ادائیگی کے لئے مزید قرضے لینے پر مجبور ہے۔ حکومت نے 2020-21ء کے بجٹ میں ملکی وسائل بڑھانے کے لئے 53سو ارب روپے کا ٹیکس ہدف مقرر کیا ہے۔ معاشی کساد بازاری کی وجہ سے حکومت کو مقررہ اہداف حاصل کرنے میں مشکلات
مزید پڑھیے


مذاکرات: بھارتی پیغام پر پاکستان کا اصولی مؤقف

جمعرات 15 اکتوبر 2020ء
اداریہ
وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے بھارتی صحافی کرن تھاپرکو انٹرویو دیتے ہوئے انکشاف کیا ہے کہ بھارت نے کشمیر پر پاکستان کو مذاکرات کا پیغام بھیجا ہے۔ وزیر اعظم کے معاون خصوصی کا کہنا ہے کہ پاکستان دہشتگردی سمیت ہر مسئلے پر بات کرنے کے لیے تیار ہے۔ ان کے مطابق پاکستان امن کا خواہاں ہے اور ہم آگے بڑھنا چاہتے ہیں۔معید یوسف نے اپنی ٹویٹ میں اس انٹرویو پر تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ انھوں نے خطے میں امن قائم کرنے سے متعلق بات کی ہے اور بھارت کی طرف سے پاکستان
مزید پڑھیے


چند مشہور مفروضے جوسائنسی طور پر غلط ہیں

بدھ 14 اکتوبر 2020ء
محمد عامر خاکوانی
اپنے پچھلا کالم ٹرو /فالس لکھتے ہوئے ارادہ تھا کہ اسے ہمارے ہاں کے چند معروف سیاسی تصورات پر منطبق کیا جائے۔ بات مگر لمبی ہوگئی اور اس طرف محض اشارہ ہی کیا جا سکا۔ آج کا کالم بھی اس پر نہیں لکھ سکوں گاکہ بعض قارئین نے باقاعدہ ای میلز اور ٹیکسٹ میسجز بھیج کر استفسار کیا ہے کہ ایسے کون سے مشہورِعام مفروضے ہیں جو درحقیقت درست نہیں۔ سچی بات ہے کہ میں ایسی چیزوں کے حوالے سے ماہر نہیں، میری تحقیق بھی انکل گوگل کی محتاج ہے۔نیٹ پر کچھ دیر گزارنے کے بعد ایسے کئی مفید آرٹیکلز
مزید پڑھیے