BN

کالم



آج کے کالم 


  


کالم آرکیو



شام روتے ہوئے جنگل سے ہوا آئی ہے

هفته 05 اکتوبر 2019ء
ہارون الرشید
کہیں مودی آگئے کہیں ڈونلڈ ٹرمپ ، حادثے پہ حادثہ ہے۔ بگٹٹ ،آدم کی ساری اولاد بستیوں کو جنگل بنانے پہ تلی ہے۔حادثے پہ حادثہ۔فرمایا :سب خشکی اور تمام تری فساد سے بھر گئی اور یہ آدم زاد کی اپنی کمائی ہے۔ میانوالی کے اس دور دراز گائوں میں ، گائوں کے باہر ،بکائن کے درختوں کی چھائوں میں ہم لیٹ رہے۔اسد الرحمان نے کہا:اتنا گھنا سایہ ہے کہ ہلکی بارش ہو تو ایک بوند بھی نہیں گرتی۔’’ہوا کیسی ہے ؟ ‘‘۔اسد نے پوچھا’’شاندار‘‘۔شاندار نہیں خمار انگیز، حیرت ناک۔ ہے ہوا میں شراب کی تاثیر بادہ نوشی ہے باد پیمائی چک نمبر بیالیس جنوبی
مزید پڑھیے


جے یو آئی کا بے وقت کا مارچ اور دھرنا

هفته 05 اکتوبر 2019ء
اداریہ
جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے 27اکتوبر کو اسلام آباد کی طرف مارچ اور ڈی چوک میں دھرنے کا اعلان کر دیا۔ ان کا دعویٰ ہے وہ اس دھرنے سے حکومت کو چلتا کرینگے۔ اگرچہ جمہوری معاشروں میں اختلاف رائے پر کوئی قدغن نہیں لگائی جاسکتی لیکن بعض اوقات ملک کی سلامتی، بقا اور تحفظ کے لئے ضروری ہوتا ہے کہ اپنے اختلافات کو کسی اور مناسب وقت کے لئے اٹھا رکھا جائے۔ اس وقت کشمیر کے حوالے سے ملک کو جس کشیدہ صورتحال کا سامنا ہے اس کا تقاضا ہے کہ ملک کے تمام طبقات اتحاد
مزید پڑھیے


بیت المال فنڈز کی قلت سے مریضوں کو پریشانی

هفته 05 اکتوبر 2019ء
اداریہ
پاکستان بیت المال کا بجٹ کم ہونے کے باعث پنجاب کے چار شہروں کا فنڈ تین ماہ میں ختم ہو گیا۔ ریاست مدینہ کے معاشی نظام میں بیت المال کو مرکزی حیثیت حاصل تھی۔ رسول اللہؐ کے زمانے میں بھی بیت المال سے ضرورت مندوں‘ ناداروں اور بے سہارا لوگوں کی مدد کی جاتی تھی۔ خلافت راشدہ کے دور میں زکوٰۃ، عشر، خراج اور جذیہ کی رقوم بیت المال میں جمع کرائی جاتی تھیں، جہاں سے غریبوں، یتیموں، بے سہارا اور ناداروں کے مسائل حل کیے جاتے تھے۔ پاکستان میں بیت المال کو زکوٰۃ کی رقم کے علاوہ حکومت بھی
مزید پڑھیے


کاروباری مشکلات اور وزیر اعظم کی یقین دہانی

هفته 05 اکتوبر 2019ء
اداریہ
وزیراعظم عمران خان نے نمایاں کاروباری شخصیات سے ملاقات کے دوران نیب کی کارروائیوں کے متعلق ان کے خدشات کودور کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ وزیر اعظم نے کاروباری شخصیات پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے۔ جو تاجروں کی شکایات کا جائزہ لے گی۔رواں برس اگست میں وفاقی کابینہ نے کاروباری سرگرمیوں میں ضابطہ جاتی رکاوٹیں دور کرنے کے لئے نیب کے طریقہ کار میں بعض تبدیلیوں کا فیصلہ کیا تھا۔قبل ازیں اہم تاجر افراد کا وفد آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے حکومتی اقدامات کے باعث کاروبار کے متاثر ہونے کی شکایت کر
مزید پڑھیے


دوستیاں،میرٹ،تبدیلیاں

هفته 05 اکتوبر 2019ء
عا رف نظا می
کشمیر پر کامیاب سفارتکاری اور اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں شعلہ نوا تقریر کے بعد وزیراعظم عمران خان جب وطن واپس پہنچے تو یقینا ان کے ذہن میں یہ بات گردش کر رہی تھی کہ ملک بالخصوص پنجاب میں گورننس کا حال پتلا ہے لہٰذا انھوں نے واپس آ تے ہی اپنا پہلا دن بھرپور قسم کی سیاسی اور انتظامی سرگرمیوں میں گزارا ۔ پہلا کام تو سب سے بڑے صوبے پنجاب کے اپنے ’’وسیم اکرم پلس ‘‘ کو جواب طلبی کے لیے اسلام آباد طلب کر لیا ، اس کے ساتھ ہی اقوام متحدہ میں مستقل مندوب ملیحہ
مزید پڑھیے


27اکتوبر‘ یوم سیاہ اور مولانا

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
ارشاد احمد عارف
مولانا فضل الرحمن نے مسلم لیگ کی سنی نہ پیپلز پارٹی کی مانی اور 27 اکتوبر کو آزادی مارچ کا اعلان کر دیا۔27اکتوبر کو کشمیری عوام یوم سیاہ طور کے پر مناتے ہیں یہ وہ منحوس دن ہے جب جموں و کشمیر کے راجہ ہری سنگھ نے اپنے عوام سے غداری کی‘ الحاق کی جعلی دستاویز پر دستخط کئے اور بھارت نے فوجیں بھیج کر مسلم اکثریتی ریاست پر قبضہ کیا‘ کشمیری عوام اسی باعث گزشتہ بہتر سال سے دنیا بھر میں 27اکتوبر کو یوم سیاہ مناتے ہیں‘ آج کل کشمیری عوام 1947ء کی طرح بھارتی فوج کے محاصرے میں
مزید پڑھیے


"Love Export Policy of China!"

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ یکم اکتوبر کو پاکستان کے عظیم دوست ’’ عوامی جمہوریہ چین‘‘ نے اپنی 70 ویں سالگرہ منائی۔ پاکستان میں بھی حکومتِ پاکستان اور ہر سطح پر اہلِ پاکستان نے اپنے اپنے انداز میں ، عوامی جمہوریہ چین کی حکومت اور عوام کے ساتھ دوستی کے رشتوں کو مضبوط کرنے کے لئے جوش و جذبے کا اظہار کِیا۔ ’’ پیغمبرِ انقلاب‘‘ صلی اللہ علیہ و آلہ وَسلم نے اپنے دَور میں چین کا تعارف کراتے ہُوئے مسلمانوں کو تلقین کی تھی کہ ’’ علم حاصل کرو ، خواہ تمہیں چینؔ ہی کیوں نہ جانا پڑے؟‘‘۔ اُس وقت چین
مزید پڑھیے


فیصل آباد کا ماڈل مدرسہ

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
ظہور دھریجہ
گزشتہ روز فیصل آباد اپنے چھوٹے بھائی ایاز لاشاری کے ہاں جانا ہوا۔انہوں نے بتایا کہ روزنامہ 92 نیوز میں آپ کے کالم دلچسپی سے پڑھ رہے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمارے محکمے میں روزنامہ 92 نیوز کو بہت مقبولیت حاصل ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ روزنامہ 92 نیوز کے مالکان کا تعلق فیصل آباد سے ہے ‘ ان پر سرکار مدینہ ؐ کی بہت سی نوازشات ہیں ، جن میں سے ایک روزنامہ 92 نیوز کا اجراء بھی ہے۔فیصل آباد کی ایک مذہبی شخصیت صاحبزادہ عطا المصطفیٰ نوری ؒ تھے ۔ نوری صاحب کا اس
مزید پڑھیے


بکھیڑے

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
سعدیہ قریشی
بعض اوقات کالم لکھنے کے لئے بیٹھیں تو کئی مختلف طرح کے خیالات ذہن کی سطح پر تیرتے رہتے ہیں اور کبھی کسی تازہ پڑھی ہوئی کتاب کی گونج ذہن میں بازگشت کرتی ہے تو کبھی کسی پسندیدہ شخصیت سے گفتگو کی سرخوشی سے سوچ کا آنگن مہکاہوتا ہے۔ کالم نگار کو مگر حالات حاضرہ پر سوچنا اور لکھنا پڑتا ہے کم از کم 90فیصد کالم سیاسی حالات جو سماج کو متاثر کرتے ہیں انہی پر لکھنا پڑتاہے۔ آج بھی کچھ ایسا ہی دن ہے۔ خوب صورت اور باوقار شاعرہ عنبرین صلاح الدین کی کتاب ’’صدیوں جیسے پل‘‘ زیر مطالعہ تھی اس
مزید پڑھیے


بڑا آدمی کون!

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
سعد الله شاہ
اپنا مسکن مری آنکھوں میں بنانے والے خواب ہو جاتے ہیں اس شہر میں آنے والے شکریہ تیرا کہ تونے ہمیں زندہ رکھا ہم کو محرومی کا احساس دلانے والے ویسے یہ محرومی بھی ایک عجب شے ہے کوئی اسے سمجھ لے تو یہ طاقت بن جاتی ہے کبھی کبھی مجھے یہ احساس اس کمی کی طرح لگتا ہے جہاں ہوا گرم ہو کر اوپر اٹھتی ہے تو ادھر ادھر کی بلکہ اردگرد کی ہوا خالی جگہ لینے کی کوشش کرتی ہے اور اس طرح بگولہ وجود میں آتا ہے۔ شاید گرداب کا بننا بھی اس سے ملتا جلتا ہو گا کہ گہرائیوں میں
مزید پڑھیے


مولانافضل الرحمن سیاسی دوراہے پر

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
محمد عامر خاکوانی
مولانا فضل الرحمن اس بار ایک عجیب مشکل سے دوچار ہیں۔وہ اپنی سیاسی زندگی کی سب سے مشکل جنگ کے چیلنج سے نبردآزما ہیں۔ ایسی لڑائی جس میں جیت شکست کے مترادف ہے اور شکست تو خیر تباہ کن ہو گی ہی۔ ستم ظریفی یہ کہ ان کے لئے اب اسی جگہ پر رکے رہنا بھی مشکل ہے ۔انہوں نے ایسی لہر پیدا کی ہے جو بتدریج آگے کی طرف ہی بڑھے گی، اسے جامد کر دینا آسان نہیں رہا۔ مولانا فضل الرحمن کے بارے میں جس کسی سے بات کی جائے ، ان کی سمجھداری، دانشمندی اورذہانت کی تعریف
مزید پڑھیے


کیا انٹر نیشنل لاء کشمیریوں کو مسلح جدوجہد کی اجازت دیتا ہے؟

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
آصف محمود
بھارت کے بڑھتے ہوئے مظالم اور اقوام عالم کی لاتعلقی سے تنگ آ کر کشمیری اگر بندوق اٹھانے کا فیصلہ کر لیتے ہیں تو کیا انٹر نیشنل لاء کی روشنی میں یہ ایک جائز اقدام ہو گا؟میں اس وقت حکمت عملی اور زمینی حقائق کی بات نہیں کر رہا ، میرے پیش نظر صرف معاملے کا قانونی پہلو ہے۔1949 ء کے جنیوا کنونش کے ایڈیشنل پروٹوکول 1کے آرٹیکل 1 کی ذیلی دفعہ 4 میں اس حق کو تسلیم کیا گیا ہے۔یہ پروٹوکول بین الاقوامی سطح پر ہونے والے مسلح تصادم اور جنگوں کے متاثریں کے تحفظ سے متعلق ہے اور
مزید پڑھیے


مولانا برہم کیوں!

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
راوٗ خالد
دھرنا ہو گا یا نہیں، مولانا فضل الرحمٰن حکومت کوہٹانے کی تحریک شروع کرنے کے لئے دوسری جماعتوں کو راضی کر پاتے ہیں یا نہیں لیکن ایک بات عیاں ہے کہ وہ شدید برہم ہیں۔ کسی حکومت سے نہیں، نہ ہی اسٹیبلشمنٹ سے ان کو کوئی بڑا گلہ ہے، برہمی انکی سیاسی بیچارگی کی وجہ سے ہے جس کا وہ 2018 ء کے انتخابات کے بعد شکار ہوئے ہیں۔اس کی ایک نہیں بہت سی وجوہات ہیں۔ اول تو انہیں یہ بات ستاتی ہو گی کہ وہ بہت عرصے بعد پارلیمنٹ میں موجود نہیں ہیں، خیر اس بات سے وہ
مزید پڑھیے


مہنگائی کی ذمہ دار بیورو کریسی

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
حکومت پر جہاں تنقید ہونی چاہیے وہاں اس کے اچھے کاموں بلکہ کارناموں کو سراہنا بھی ضروری ہے تو یہ چند سطریں درمدح حکومت بر تقاضائے انصاف سمجھیے۔ اچھی خبر یہ ہے کہ اس سال سموگ بہت کم ہو گی ۔ یعنی ہو گی تو ضرور لیکن شدت نہیں ہو گی اور اس کا کریڈٹ موجودہ حکومت کو جاتا ہے۔ وجہ یہ بیان کی گئی ہے کہ سموگ کارخانوں کے دھوئیں سے اس وقت پیدا ہوتی ہے جب وہ فوگ سے مل جاتا ہے۔ آدھا دھواں بھارتی کارخانوں سے آتا ہے اور وہ تو آئے گا‘ آدھا جو پاکستانی کارخانوں کی
مزید پڑھیے


شہر اور سماج

جمعه 04 اکتوبر 2019ء
خاور نعیم ہاشمی
جب ہم نے شہر گردی شروع کی،لاہور اس وقت تک آلودہ نہیں ہوا تھا، سارا شہر گھر کی مانند تھا۔ ایک دوسرے پر اعتماد کا عالم یہ کہ اگر کوئی مہمان دروازے پر کھڑا ہو کر اندر آنے کی اجازت طلب کر لیتا تو گھر والے برا مناتے، اسے کہا جاتا کہ تم کوئی غیر تو نہیں ہو، آ جاؤ اندر ۔ کسی کو بھوک لگتی تو وہ کسی بھی جاننے والے کے گھر چلا جاتا ، کوئی دکھاوا نہیں ہوا کرتا تھا۔ جو بھی روکھی سوکھی ہوتی سب مل کر کھا لیا کرتے۔ میکلوڈ روڈ پر نان چنے
مزید پڑھیے






کالم نگار

اداریہ
اداریہ









سجاد میر
شہر آشوب

مستنصر حسین تارڑ
ہزار داستان

مجاہد بریلوی
شہر ناپرساں


مبشر لقمان
کھرا سچ

عبداللہ طارق سہیل
وغیرہ وغیرہ


بشریٰ رحمان
چادر چاردیواری اور چاندنی

نو شی گیلا نی
کا لم کہا نی


افتخار گیلانی
مکتوب دہلی

خاور نعیم ہاشمی
پردہ اٹھتا ہے


رضا رومی
رومی نامہ

انجم نیاز
یادداشت از امریکا



خاور گھمن
گھمن گھیریاں


سعید خا ور
حر ف درما ں

راوٗ خالد
رولا رپہ



اشرف شریف
شہر نامہ

ایچ اقبال
ایچ اقبال


قدسیہ ممتاز
حرف تازہ




سعود عثمانی
دل سے دل تک

اثر چوہان
سیاست نامہ

عامر متین
عامر متین

ارشاد محمود
بات یہ ہے


ناصرخان
فرنٹ لائن

عدنان عادل
امروزوفردا

ذوالفقار چودھری
تیسری آنکھ

شاہین صہبائی
چلتے چلتے


رعایت اللہ فاروقی
گفتار و پندار

یوسف سراج
نقش قدم


عمر قاضی
لالہ صحرائ

عبدالرفع رسول
مکتوب سری نگر

احمد اعجاز
کہانی کی کہانی

خالد ایچ لودھی
دل کی باتیں

رحمت علی رازی
درون پردہ

وسی بابا
باتاں


راحیل اظہر
غبارِخاطر

محمد عامر رانا
اقلیم در اقلیم