بیجنگ ، ( نیوزایجنسیاں ) کرونا وائر س سے 24گھنٹوں میں مزید 121افراد ہلاک ہوگئے ۔ہلاکتوں کی مجموعی تعداد2250ہو گی جبکہ 1465نئے کیس سامنے آئے ہیں۔ چین میں مزید 118مریض دم توڑ گئے جس سے ہلاکتوں کی تعداد 2236ہو گئی جبکہ 1316نئے کیس سامنے آئے ہیں۔جنوبی کوریا میں93نئے کیس رپورٹ ہوئے جبکہ ایک اور مریض ہلاک ہو گیا۔ایران میں مزید2مریض چل بسے جبکہ 13نئے کیس رپورٹ ہوئے ۔جاپان میں14،امریکہ میں 12،اٹلی5،آسٹریلیا4،تائیوان، یو اے ای میں 2،2، سنگاپور، کینیڈامیں مزید ایک ایک کیس سامنے آگیا۔کرونا اسرائیل اور لبنان بھی پہنچ گیا جہاں ایک ایک کیس رپورٹ ہوا ہے ۔ متاثرہ ممالک کی تعداد 32ہو گئی جہاں متاثرین کی تعداد 77,253ہو گئی جن میں سے 18,909مریض صحتیاب ہو چکے جبکہ 12,071 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے ۔چین میں جیلوں میں کرونا وائرس کے مریض سامنے آنے کے بعد صدر شی جن پنگ نے انتباہ کیا کہ وائرس مزید پھیل سکتا ہے ، صورتحال ابھی تک گھمبیر ہے ، متاثرہ علاقوں میں وائرس سے نمٹنے کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کئے جانے چاہئیں۔چین میں ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی مدد سے کرونا وائرس کے علاج کیلئے 2 ادویہ کی آزمائشی جانچ شروع کر دی گئی ہے ، ان ادویہ کے نتائج 3 ہفتوں میں سامنے آئیں گے ۔ کرونا وائرس کے باعث ایشیا کی فضائی کمپنیوں کو 27 ارب ڈالر سے زیاد نقصان کا خدشہ ہے ۔روئٹرز کے مطابق متاثر ہونے والی فضائی کمپنیوں میں سے بیشتر کا تعلق چین سے ہے ۔آئی اے ٹی اے کے اندازے کے مطابق چین کی فضائی کمپنیوں کے آپریشنز میں 80 فیصد کمی واقع ہوئی ہے ۔ کرونا وائرس کے باعث جرمنی کی برآمدات بھی متاثر ہوئی ہیں۔کرونا وائرس کے باعث چین سے درآمدات میں کمی کی وجہ سے ایک ماہ کے دوران موبائل اسسریز کی قیمتوں میں30فیصد تک اضافہ دیکھا گیا ہے اور مزید اضافے کا بھی امکان ہے ۔