ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں بھارت نے پاکستان کو چھ رنز سے حیران کن شکست دی ہے۔120رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستانی ٹیم سات وکٹ پر113رنز بناسکی۔پاکستان کرکٹ ٹیم کی دفاعی حکمتِ عملی نے پاکستان ٹی ٹوئنٹی ٹیم کو تباہ کردیا ہے۔پہلے نو مولود امریکی ٹیم سے شکست فاش کھائی اب دیرینہ حریف بھارت کے سامنے گھٹنے ٹیک کر قوم کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ۔بالروں نے خوب محنت کی اور بھارتی سورمائوں کو 119پر ڈھیر کر دیا ،اس سے پاکستانی عوام کے حوصلے بلند ہوئے کہ رنز کم ہیں ،ہمارے بلے بازوں نے قوم کے ارمانوں پر پانی پھیر دیا۔ناکام بیٹنگ ،سفارشی سلیکشن ، ناقص مینجمنٹ اور نا اہل پی سی بی نے کرکٹ ٹیم کو تجربوں کی آماجگاہ بنا دیا ہے ۔ امریکہ سے لے کر دنیا بھر میں مقیم کروڑوں پاکستانی پی سی بی کو کسی صورت معاف کرنے کے لیے تیار نہیں ۔ وزیر اعظم پاکستان محمد شہباز شریف پی سی بی کے پیٹرن انچیف ہونے کے ناطے قوم کے جذبات کو سمجھیں اور پی سی بی کا چیئرمین کم ازکم کسی ایسے آدمی کو بنائیں جس کا کرکٹ سے تعلق ہو ۔کوچ بھی کسی اردو دان کو بنائیں کیونکہ آدھے کھلاڑیوں کو انگلش نہیں آتی ،وہ انگلش کوچ سے کیسے سیکھ سکیں گے ۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کی مسلسل دوسری شکست ہے ۔اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو ورلڈ کپ کوالیفائی کے لیے میچز کھیلنے پڑیں گے ۔جو ٹیم کے لیے مشکل ثابت ہو سکتے ہیں ۔ کسی میچ میں بائولر نہیں چلتے تو کسی میں بلے باز، اور یہ دونوں چل پڑیں تو فیلڈنگ ناکام ہو جاتی ہے ۔ٹیم میں بڑی سرجری کی ضرورت ہے ،اس کے بغیر کام نہیں چلے گا ۔