الپوری ( نمائندہ 92نیوز) درہ آدم خیل کوئلہ کان حادثے میں جاں بحق مزدوروں کے ورثا نے احتجاجی مظاہرہ کیا ،مزدوروں کے ورثا کا کہنا تھا کہ کوئلہ کان کے حادثات معمول بن چکے ہیں اپنے کندھوں پر اپنے پیاروں کی لاشیں اُٹھا اُٹھا کر تھک چکے ہیں مزید لاشیں اس وقت تک نہیں دفنائیں جب تک کوئلہ کان کے مزدوروں کو تحفظ اور حکومت کی طرف سے پچاس لاکھ کا معاوضہ نہیں دیا جاتا ۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ غیر قانونی مائننگ کی جاتی ہے مزدوروں کے تحفظ کے لئے کسی قسم کے اقدامات نہیں کئے گئے ۔اس موقع پر صوبائی حکومت کے ترجمان شوکت یوسف زئی اور رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر عباداﷲ خان نے مظاہرین کو یقین دہانی کرائی کہ آپ کے مطالبات کو اسمبلی فلور پر اُٹھایا جائے گا۔