اسلام آباد(خصوصی نیوز رپورٹر،92نیوزرپورٹ، نیوز ایجنسیاں )وفاقی حکومت نے 92نیوزسمیت 4 چینلزکو اشتہارات روکنے کی تحقیقات کااعلان کردیا۔وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے وفاقی وزیر توانائی حماداظہرکیساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا مریم نوازنے 10ارب روپے من پسند چینلزکودیئے ،جن چینلز کوپیسے دیئے گئے اورکن کوسزادی گئی انکے نام نہیں بتاسکتا، سابق دورمیں 15سے 18ارب روپے صحافیوں میں بانٹے گئے ،منظم طریقے سے صحافیوں کوخریداگیا،ان میں پیسے بانٹے گئے ،اپنے مخالف گروپوں کوسزائیں دی گئیں،یہ ایف آئی اے کے تحت بھی جرم بنتاہے ، پنجاب میں بھی اشتہارات کویہی سیل کنٹرول کر رہاتھا،پنجاب میں بھی تقریبااتنی ہی رقم اشتہارات کی مدمیں بانٹی گئی،جوگورکھ دھندہ یہاں کھیلاگیااس کی سب سے بڑی شہادت آج سامنے آئی، یہ ساراکام مریم نوازکررہی تھیں،پرویز رشیدتوکٹھ پتلی تھے ،پرویزرشیدکے دورمیں تووزارت اطلاعات کٹھ پتلیوں پرمشتمل تھی،ہم ان کے کیسز پربہت فوکسڈہیں،عام آدمی سمجھتا ہے سارے چوروں سے پیسے واپس آنے چاہئیں،ہم نے واضح کہاہے اگرآپ جیل نہیں جاناچاہتے توقوم کے پیسے واپس کر دیں،ہم سپریم کورٹ کے احکامات کے پابندہیں،اس معاملے پرہم نے سنجیدہ تحقیقات کرنے کافیصلہ کیاہے ،جن صحافیوں کوپلاٹس یاپیسے دیئے گئے ان کی تحقیقات کاآغازکیاگیاہے ،یہ ایک مجرمانہ فعل ہے ،عدالتوں سے بھی رجوع کر سکتے ہیں۔ حماد اظہر نے کہاقوم کے اربوں روپے میڈیاکوخاموش کرنے یاخریدنے پرخرچ کئے جس کاحساب ہوگا،مریم نوازنے اعتراف کیا یہ انکی ہی ویڈیوہے ،مریم نوازنے یہ نہیں بتایا وہ کون سے چینلزتھے جن کے پیسے روکے نہیں گئے ، انعام دیاگیا،ہم دیکھیں گے کن چینلزکونوازاگیا،کن کوخریداگیا، تمام حقائق اعدادوشمار کیساتھ قوم کے سامنے رکھیں گے ،ایسانہیں ہوسکتااشتہارات کو ہتھیار بنا کر میڈیا کو کچلاجائے جیسے انہوں نے کچلا،مریم نوازبتائیں وہ کونسے چینل ہیں جس پرمن پسند پروگرام کرائے جاتے تھے ،تمام سوالوں کاجواب لیکرقوم کے سامنے رکھیں گے ۔اپنے ٹویٹ میں وفاقی وزیر اطلاعات نے کہامریم نواز نے بڑے چینلز کے اشتہار کنٹرول کرنے کا اعتراف کیا جو سنگین مالی بے ضابطگیوں کا ایک اور اعتراف ہے ، امید ہے مریم نواز اپنی اور خاندان کی بیرون ملک جائیدادوں کا اعتراف بھی کرلیں گی۔وفاقی وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری نے کہاہے چلومریم نوازنے آخرکچھ توسچ بولا،سوال یہ ہے مریم نوازنے کس حیثیت میں چینلزکے اشتہارات روکنے کاحکم دیا؟ کیامریم نے سمجھ لیاتھانوازشریف اپنی بادشاہت چلارہے ہیں۔وزیراعظم کے ترجمان و معاون خصوصی ڈاکٹر شہبازگل نے کہا مریم نواز اداروں کو نشانہ بنا رہی ہیں ، جعلی ویڈیو آڈیو کا مقصد احتساب کے عمل کو سبوتاژ کرنا ہے ، جھوٹ بولنا اور دشنام ترازی کرنا ان کا پرانا وطیرہ ہے ۔ وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب اور پارلیمانی سیکرٹری برائے منصوبہ بندی ، ترقی و اصلاحات کنول شوزب کیساتھ مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا آپ نے کچھ چینلز کے ایڈ بند کرنے کی بات کی، آج بھی آپ نے اپنے پسندیدہ چینل کے رپورٹر سے سوال لیا ،مریم نواز آپ اسقدر بدتمیز ہیں آپکو معلوم نہیں ججز کے بارے میں بات کسطرح کرنی ہے ۔ یہ ازل کے جھوٹے ہیں، ان کو ان کے جھوٹوں پر سزا ملنی چاہئے ۔وزیرمملکت فرخ حبیب نے کہا مسلم لیگ ن کی جانب سے عدلیہ پر حملے آج بھی جاری ہیں، چاہے وہ جعلی ویڈیو ہوں یا ٹیپ سے ہوں، مریم صفدر نے تسلیم کرلیا میڈیا کو کنٹرول کرنے کیلئے اشتہارات بند کرنے والی آڈیو انکی ہے ، مریم صفدر کس حیثیت میں عوام کے ٹیکس سے دئیے جانے والے اشتہارات کو ذاتی مفاد اور چوری کے تحفظ کیلئے استعمال کررہی تھیں،میڈیا کی آزادی پرانکی منافقت کھل کر سامنے آگئی،یہ شریف خاندان کی ڈھٹائی ہے ہر غلط کام کا اعتراف ندامت کی بجائے فخر یہ انداز سے کر تے ہیں، مریم صفدر وزیراعظم ہاؤس میں بیٹھ کر ٹی وی چینلز کے اشتہارات بند کرکے صحافیوں کو بیروزگار کررہی تھی، ایک طرف میڈیاکی آزادی کاڈھونگ رچاتے ہیں دوسری جانب من پسند میڈیاکونوازنے اورصحافت کاگلا گھونٹے کیلئے اشتہار بند کرنے کی کوشش کرتے ہیں، یہ بنیادی طورپربڑا انکشاف ہے کہ کس طریقے سے اس وقت ایک فاشسٹ رجیم نوازشریف کی سربراہی میں موجودتھا،انکی بیٹی میڈیاکوکنٹرول کررہی تھی،جس کااعتراف انہوں نے پریس کانفرنس میں کیا،اب دیکھنا ہے صحافتی تنظیمیں اور میڈیا مالکان کی تنظیمیں اس پر کیا ردعمل دیتی ہے ، انکاسیاہ چہرہ سامنے آیاہے ،ہم دیکھتے ہیں کتنے احتجاج ہوتے ہیں۔ لاہور(92نیوزرپورٹ)پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹ نے مریم نوازکیخلاف سپریم کورٹ میں پٹیشن دائرکرنے کافیصلہ کرلیا۔صدرپی ایف یوجے جی ایم جمالی نے کہا آزاد ی صحافت پرحملہ کرنیوالوں کامحاسبہ کرینگے ،مریم نوازکااعتراف باقاعدہ اقبال جرم ہے ،عدلیہ کوسووموٹو لینا چاہئے ،پہلے مرحلے میں ہم قانونی راستہ اپنائیں گے ،امیدہے عدالتوں سے انصاف ملے گا،،ہم انٹرنیشنل فیڈریشن یونین آف جرنلسٹ کوبھی یہ بتائیں گے پاکستان میں میڈیاہائوسزکوکنٹرول کرنے کیلئے حکومتیں کسطرح کے ہتھکنڈے استعمال کرتی ہیں۔پہلے مرحلے میں عدالت جائیں گے اور دوسرے مرحلے میں پورے ملک میں احتجاج کرینگے ۔سیکرٹری جنرل پی ایف یوجے راناعظیم نے کہا پی ایف یوجے کی طرف سے مریم نوازکیخلاف سپریم کورٹ میں پٹیشن دائرکی جارہی ہے ،میں چیف جسٹس سپریم کورٹ کوبھی خط لکھوں گا،تمام انٹرنیشنل تنظیموں ،بارزکومریم نوازکے اعتراف سے متعلق خط لکھنے جارہاہوں،مریم نوازنے پاکستان کے آزادمیڈیا کیخلاف سازش کی،یہ آزادی صحافت پرحملہ کرنے کااقبال جرم ہے ، جن کے پاس کوئی عہدہ نہیں وہ وزیراعظم ہائوس میں بیٹھ کرمیڈیاکو کنٹرول کرتے ہیں،جوکنٹرول میں نہیں آتاانکے اشتہارات بندکرکے سزادیتے ہیں،مریم نوازنے صحافیوں کامعاشی قتل کیا۔ادھرماہرقانون اظہرصدیق ایڈووکیٹ نے 92نیوزسے گفتگوکرتے ہوئے کہاایک بات واضح ہے مریم نوازنے اپنے والد کے ایماپریہ اختیار استعمال کیا،یہ جرم کااقرار ہے ،بنیادی طورپردھوکہ دہی،فراڈ،فریب اوراگر دیکھاجائے تونوازشریف کے اختیارات مریم نوازنے استعمال کئے ، میری ذاتی رائے میں یہ نیب کاکیس بنتاہے ،حیران ہوں ابھی تک صحافتی تنظیمی خاموش کیوں بیٹھی ہیں، یہ فوجداری مقدمہ ہے ، حیران ہوں ابھی تک حکومت نے ایکشن کیوں نہیں لیا،سپریم کورٹ کومریم نوازکوطلب کرناچاہئے ،ان کیخلاف باقاعدہ کارروائی ہونی چاہئے ۔