واشنگٹن( ندیم منظور سلہری سے ،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں )وائٹ ہائوس میں تبدیلی آگئی، نو منتخب صدر جو بائیڈن اور نائب صدر کملا ہیرس نے اپنے عہدوں کا حلف اٹھا لیا۔ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس جان رابرٹ نے ڈیموکریٹ پارٹی کے جوبائیڈن سے امریکہ کے 46ویں صدرکی حیثیت سے حلف لیا۔لاطینی خاتون جج جسٹس سونیاسوٹومیئرنے نائب صدر کملا ہیرس سے 49ویں نائب صدر کا حلف لیا۔تقریب حلف برداری میں شرکت کیلئے سابق صدرباراک اوباما اہلیہ کیساتھ کیپٹل ہل پہنچے ، سابق صدربل کلنٹن،ہیلری کلنٹن اورجارج ڈبلیوبش بھی تقریب میں شریک تھے ۔ امریکی تاریخ میں پہلی بارروایات کے برخلاف سبکدوش ہونے والے صدرٹرمپ تقریب میں شریک نہ ہوئے ۔ٹرمپ انتظامیہ کے نائب صدر مائیک پنس تقریب میں موجود تھے ۔ سینٹ اورکانگریس کے ارکان نے بھی تقریب میں شرکت کی،امریکی تاریخ کی سخت ترین سکیورٹی میں تقریب حلف برداری ہوئی۔واشنگٹن ڈی سی میں 25ہزارنیشنل گارڈزتعینات کئے گئے تھے ،کیپٹل ہل بلڈنگ کے اطراف میں دھاتی تارنصب کی گئی تھی۔واشنگٹن ڈی سی کی سڑکوں پرہوکاعالم تھا۔تقریب حلف برداری سے قبل امریکی سپریم کورٹ کو بم دھمکی دی گئی تھی لیکن سکیورٹی اہلکاروں کو کچھ نہ ملا۔تقریب حلف برداری میں گلوکارہ لیڈی گاگا اور جنیفرلوپیزنے پرفارم کیا۔جوبائیڈن نے حلف اٹھانے سے پہلے چرچ میں حاضری دی،اپنی ٹویٹ میں بائیڈن نے کہایہ امریکہ میں نیادن ہے ،بعدمیں نومنتخب صدراور انکی نائب نے کیپٹل ہل کی سیڑھیوں پرکھڑے ہوکرہاتھ ہلایا۔حلف اٹھانے کے بعد خطاب کرتے ہوئے جوبائیڈن نے کہا آج امریکہ کادن ہے ،آج جمہوریت کادن ہے ،امریکہ کومختلف چیلنجزکاسامناہے جن کا مقابلہ کرینگے ،بہت کچھ درست اور بہت سے زخموں پر مرہم رکھنا ہے ، جمہوریت ایک بارپھربچ گئی،کچھ دن پہلے کیپٹل ہل پرحملے نے جمہوریت کی بنیادیں ہلادیں،آج شخصیات کی نہیں جمہوریت اورجمہوری عمل کی فتح ہوئی،میں امریکی آئین کی طاقت پریقین رکھتاہوں،اپنی پارٹی کے پہلے دوصدورکی گرانقدرخدمات کوسراہتاہوں،امریکہ نے اب بہت آگے جاناہے ،امریکہ کی کہانی کسی ایک پرنہیں ہم سب پرمنحصرہے ، سفیدفام نسل پرستی کوشکست دینگے ،کورونانے امریکہ کوبری طرح متاثرکیا،بیروزگاری بڑھی،کورونانے جتنے امریکیوں کی جانیں لیں اتنانقصان جنگ میں نہیں ہوا،آج پورے امریکہ کومتحدکرنے کادن ہے ،ہمیں نفرت ،تعصب،نسل پرستی اورانتہا پسندی کامقابلہ کرناہے ،ہمیں اختلافات کوجنگ میں نہیں بدلنا چاہئے ،ہم نسل پرستی اورشدت پسندی کوشکست دینگے ،ماضی کی طرح آج بھی ہم سب ملکرامن کوممکن بناسکتے ہیں،جوہم پریقین رکھتے ہیں انکی امیدوں پرپورااتریں گے ، متحد ہو کرہی دہشتگردی اورکوروناجیسی وباکامقابلہ کرسکتے ہیں، ایک بارپھرامریکہ کواچھائی کی سب سے بڑی طاقت بنائیں گے ،تمام امریکیوں کاصدربن کردکھاؤں گا، تشددکے بغیرتحمل اور برداشت سے مسائل حل ہوسکتے ہیں، جومیرے خلاف ہیں ان سے کہناچاہتاہوں مجھ سے بات کریں،ہمیں رنگ ونسل،تعصبات،مذہب سے بالاترہوکر عظیم قوم بننا ہے ، امن اورسلامتی کے فروغ میں بڑھ چڑھ کرحصہ لیں گے ۔قبل ازیں جوبائیڈن نم آنکھوں کیساتھ ڈیلاویر میں واقع اپنے گھرکو الوداع کہہ کر ایئرفورس کے خصوصی طیارے سے ایوان صدرپہنچے ۔وہ اپنی رہائشگاہ کے باہر جب میڈیا سے بات کر رہے تھے تو بار بار ان کی آنکھوں میں آنسو اترآتے ۔ واشنگٹن روانگی سے قبل وہ اپنے بیٹے کی قبر پر بھی گئے ۔جوبائیڈن نے ڈیلاویرکو مخاطب کرتے ہوئے کہا مجھے معاف کردو۔ میں مر بھی گیا تو ڈیلاویر میرے دل میں نقش رہے گا۔ مگر مجھے ایک بات کا افسوس ہے کہ میرا بیٹا یہاں نہیں ہے ۔نو منتخب امریکی نائب صدر کملا ہیرس نے انسٹاگرام پوسٹ میں لکھا ہم دیہاڑی دار مزدوروں کو درپیش چیلنجز، قوم کو درپیش انتہائی سنگین بحرانوں سے نمٹنے کیلئے عزم و استحکام کیساتھ قیادت کریں گے ۔ حلف برداری کا دن قوم کو متحد کرنے ، درپیش چیلنجز اور امریکہ کی بہتری کیلئے کیے وعدوں کی تجدید کا دن ہے ۔ادھر ڈونلڈ ٹرمپ مدت صدارت ختم ہونے سے چند گھنٹے پہلے ہی اہلیہ میلانیا کیساتھ وائٹ ہاؤس سے فلوریڈا اپنی رہائشگاہ چلے گئے ۔ ٹرمپ نے تقریب حلف برداری ٹی وی پر دیکھی۔وائٹ ہاؤس چھوڑنے سے پہلے ٹرمپ نے بطور صدر اپنا آخری خطاب یوٹیوب پرجاری کیا۔ ٹرمپ نے کہا انہیں فخر ہے وہ دہائیوں میں پہلے امریکی صدر ہیں جس نے کوئی نئی جنگ شروع نہیں کی۔ ہم نے اپنے دور میں جو کچھ کیا بہت اچھا کیا۔عوام کی محبتوں اورسپورٹ کا شکرگزار ہوں،چارسال بہترین تھے ،جانتا ہوں امریکی عوام میں بہت مقبول ہوں،ہمیں75ملین ووٹ ملے جوایک تاریخ ہے ،امریکہ کومضبوط بنانے کیلئے ہرممکن اقدامات کیے ،نئی انتظامیہ کیلئے نیک خواہشات کااظہار کرتا ہوں، آپ سب اپنا خیال رکھیں ، بہت جلد کسی اور روپ میں آپ سے ملاقات ہوگی۔ الوداعی خطاب میں ٹرمپ نے اہلیہ میلانیا کی بھی تعریف کی جبکہ ایک بار پھر کورونا کو چائنہ وائرس کہنانہ بھولے ۔ میری لینڈکی جوائنٹ بیس پر ڈونلڈٹرمپ کے اعزازمیں الوداعی تقریب ہوئی اورانہیں 21توپوں کی سلامی دی گئی۔ میلانیا ٹرمپ نے بھی وائٹ ہاؤس انتظامیہ کو شکریہ کا نوٹ لکھ کر دیا۔علاوہ ازیں یوٹیوب نے ڈونلڈ ٹرمپ پر پابندی میں مزید 7 روز توسیع کردی۔