لاہور (کرائم رپورٹر ، سپیشل رپورٹر ) سنگدل باپ نے دوسری بیوی کیساتھ مل کر ایک بیٹے کو قتل اور دوسرے کو شدید زخمی کر دیا جبکہ چھت پر کپڑے ڈالنے پر جھگڑے کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک ہو گیا۔تفصیلات کے مطابق گرین ٹاؤن کے علاقے باگڑیاں فیروز پارک میں سنگدل باپ نے دوسری بیوی کیساتھ مل کرایک بیٹے کو قتل دوسرے کو شدید زخمی کر دیا اور فرار ہو گیا ۔ بتایا گیا ہے کہ پرویز اپنے دو بیٹوں 9 سالہ داؤد اور 6 سالہ یشواز کو چار ماہ قبل لے کر دوسری بیوی کے پاس چلا گیا جہاں وہ دونوں بچوں پر تشدد کرتا تھا، گزشتہ روز پرویز دونوں بچوں کو تشویشناک حالت میں پہلی بیوی یاسمین کے گھر چھوڑ کر فرار ہو گیا جنہیں ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں دائود دم توڑ گیا ، یشواز کا ہسپتال میں علاج جاری ہے ،یاسمین کے مطابق پرویز پہلے بھی تشدد کرتا تھا اور اکثر بچوں کو ساتھ لے جاتا تھا۔ کاہنہ کے علاقے میں 30 سالہ شخص کی خون میں لت پت گردن کٹی لاش دیکھ کر مقامی افراد نے پولیس کو اطلاع کی ۔ پولیس کے مطابق مقتول کی شناخت 30 سالہ ممتازکے نام سے ہوئی ہے ، جو ایل پی جی سلنڈروں کا کام کرتا تھا ۔ٹبی سٹی کے علاقہ میں چھت پر کپڑے ڈالنے پرہمسایوں میں جھگڑا ہو گیا جس دوران نادر اور عامر نے اندھا دھند فائرنگ کر دی، جس سے امجد عرف پپو موقع پر ہی جاں بحق اور چار خواتین شدید زخمی ہو گئیں۔ پولیس نے ملزمان نادر،عامر، نور فاطمہ، شازیہ، سونیا اور فوزیہ کو گرفتار کر لیا۔علاوہ ازیں تیرہ روز قبل داروغہ والا سے اغوا ہونیوالی ماں بیٹی کی لاشیں نواحی علاقے فیروز والا میں زیر تعمیر مکان سے مل گئیں۔مقتولہ کے شوہر کی لاش 11 روز پہلے فیروز والا میں ریلوے لائن سے ملی تھی، تینوں یکم جون کو لاپتہ ہوئے تھے ۔پولیس کے مطابق 35 سالہ اشفاق اپنی اہلیہ 27 سالہ سدرہ اور 6 سالہ بچی ماریہ کیساتھ عید کی شاپنگ کیلئے دراوغہ والا گیا جہاں سے وہ اغوا ہو گئے ۔ مناواں پولیس نے مقدمہ درج نہ کیا۔ دو دن بعد اشفاق کی لاش فیروز والا میں ریلوے لائن سے مل گئی جبکہ ماں بیٹی کی بوسیدہ لاشیں بھلے ڈسن گاؤں فیروزوالامیں زیر تعمیر مکان سے ملیں،فیروز والا پولیس نے مقتولہ سدرہ کے بھائی عباس کی مدعیت میں قتل کا مقدمہ درج کر کے لاشیں پوسٹ مارٹم کیلئے مردہ خانے منتقل کر دیں۔