وزیر اعظم عمران خاں نے چیک پوسٹوں پر گڈز ٹرانسپورٹ سے بھتہ وصولی کا سخت نوٹس لیتے ہوئے چیک پوسٹوں سے متعلق قواعد و ضوابط میں تبدیلی کی ہدایت کی ہے‘ وزیر اعظم نے آفس کی جانب سے جاری خط میں کہا گیا ہے کہ کراچی طورختم اور کراچی چمن روڈ پر ٹرکوں سے کرایہ وصولی کی شکایات بڑھ رہی ہیں جو کہ زیادہ تر پولیس یا ایکسائز ‘ کسٹمز ‘ رینجرز اور ایف سی اہلکاران کے خلاف ہیں۔ اس میں شبہ نہیں کہ بھتہ خوری کے واقعات بہت عرصہ سے ہو رہے ہیں گڈز ٹرانسپورٹ کی بعض ہڑتالیںاسی بھتہ خوری کے پس منظر میں ہوتی رہی ہیں‘ یہ شکایات متعلقہ حکام تک پہنچتی بھی رہی ہیں لیکن ان کے ازالہ کی بظاہر کوئی کوشش نہیں کی گئی۔ وزیر اعظم کی طرف سے صورت حال کا نوٹس لیے جانے کے بعد امید کی جاتی ہے کہ ان شکایات کا ازالہ کیا جائے گا تاہم اس سلسلہ میں یہ بھی ضروری ہے کہ جو محکمے اور ان کے ملازمین و افسران بھتہ خوری میں ملوث ہیں ان کیخلاف محکمانہ کارروائی کی جائے تاکہ گڈز ٹرانسپورٹ کو بھتہ خوری کے باعث جن مسائل کا سامنا ہے ان کا تدارک کیا جا سکے۔ گڈز ٹرانسپورٹ ملکی کاروبار معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں اور اشیائے ضروری کی بڑے پیمانے پر نقل و حمل کے ذمہ دار ہیں ان کی شکایات کا ازالہ بہت ضروری ہے تاکہ وہ کراچی‘ طورخم ‘ چمن اور ملک کے دوسرے حصوں سے اشیاء اور مال گودام کی سہولت کے ساتھ نقل و حمل کر سکیں۔