لاہور ،گوجرانوالہ ،اسلام آباد،سندر (سٹاف رپورٹر ،نامہ نگار خصوصی ،خبر نگار خصوصی ،نمائندگان 92نیوز ) پی ڈی ایم کا پہلا جلسہ آج گوجرانوالہ میں ہو گا جس کیلئے اپوزیشن نے بھرپور تیاری کر لی ،لاہور سمیت مختلف شہروں میں مزید درجنوں کارکنوں کو گرفتار کر لیا گیا ،اپوزیشن رہنمائوں نے کہا کہ حکومت کا خوف بتا رہا ہے کہ اپوزیشن کامیاب اور حکومت ناکام ہوگئے ،حکومت کو گھر بھیج کر دم لینگے ۔تفصیلات کے مطابق جلسہ عام کو ناکام بنانے کیلئے لاہور پولیس کا شہر میں چھاپوں، گرفتاریوں اور کنٹینرز کی پکڑ دھکڑ کا سلسلہ جاری رہا ،پولیس نے لیگی رہنمائوں ، کارکنوں کے گھروں سے رشتہ داروں کو بھی حراست میں لے لیا، لاہور پولیس نے 150 سے زائد چھاپے مارے جن میں رہنما طلحہ جاوید اور شوکت علی سمیت کئی کارکنوں کو بھی حراست میں لے لیا ، پولیس نے رانا مشہود کے گھر چھاپہ مارا وہ نہ ملے ، پولیس ملازم کو لے گئی، پولیس نے 200 سے زائد کنٹینرز کو قبضے میں لے لیا جبکہ بسوں، و یگنوں ،پبلک ٹرانسپورٹ کی پکڑ دھکڑ بھی جاری رکھی ۔ پولیس نے قاری حنیف، سعد رفیق، بابر سہیل بٹ اور دیگر رہنمائوں کے گھروں پر بھی چھاپے تاہم وہ گرفتار نہ ہوئے ۔ جلسہ سے فضل الرحمنٰ ، بلاول ، مریم نواز، ساجد میر ، امیر حیدر ہوتی اور میاں افتخاراحمدخطاب کریں گے ۔ فضل الرحمٰن جامعہ اشرفیہ فیروز پورروڈ،مریم نواز جاتی عمرہ سے نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد قافلوں کی صورت میں گوجرانوالہ روانہ ہونگے ، عبدالغفور حیدری پرانا کاہنہ سے کارواں کا آغاز کرینگے ۔ مولانا فضل الرحمنٰ کی رہائش گاہ پر پی ڈی ایم کے اجلاس کے بعد سیکر ٹری اطلاعات پی ڈی ایم میاں افتخار حسین نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ حکومت اپوزیشن کے جلسوں سے خوفزدہ ہے ،پی ڈی ایم اجلاس میں گوجرانوالہ اور کراچی کے جلسوں کا جائزہ لیا گیا ، انہوں نے کہاحکومت کنٹینر ہٹا دے اور گرفتار افراد کو رہا کرے تو سٹیڈیم کو دوگنا بھر کر دکھائیں گے ، سابق وزیراعظم شاہد خاقان نے کہاحکومت دس دن سے کوشش کررہی ہے مگر وہ ہمیں نہیں روک سکی ، آج کا جلسہ بھرپور اور کامیاب ہوگا ۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزرا اپوزیشن کو دھمکیاں دے رہے ہیں ، فتح جمہوریت کی ہوگی،مریم نوازسے محمد زبیر ، پرویز رشید، سعدرفیق، رانا ثنا اور جاوید لطیف نے ملاقات کی اور جلسہ کو کامیاب بنانے کیلئے مشاورت ،گرفتاریوں کی مذمت کی گئی ۔مریم نواز نے کہاگرفتاریوں سے گھبرانے والے نہیں، انشا اللہ ہماری تحریک کامیاب ہوگی۔ محمد زبیر نے کہا اگر جلسے کو روکنے کی کوشش کی گئی توپورے پنجاب اور پاکستان میں جلسے ہوں گے ۔ ماڈل ٹائون میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے احسن اقبال اور سعد رفیق نے کہا کہ حکومت کی پی ڈی ایم جلسے کے اعلان سے ٹانگیں کانپ رہی ہیں، چھاپے مارنا بند کریں اور ورکرز کو چھوڑ دیں ۔ رانا ثنا اللہ نے کہا کہ جو مہنگائی سے نجات چاہتا ہے گوجرانوالہ جلسے میں شرکت کرے جبکہ جاتی عمرہ میں گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنا نے کارکنوں کی پکڑ دھکڑ کو اوچھے ہتھکنڈے قرار د یا ہے ، سعد رفیق نے کہا کہ لاہور میں 24 گھنٹے سے کارکنوں کے خلاف چھاپے جاری ہیں ، یہ جمہوریت نہیں بلکہ آمریت ہے ۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا ہے کہ پہلا مرحلہ احتجاج ہے دوسرا مرحلہ ہر شہر میں ریلیاں مظاہرے جبکہ تیسرے مرحلے میں جیل بھرو تحریک ہو سکتی ہے ۔ سابق صدر آصف زرداری ،مولانا اسعد محمود ود یگر نے گرفتاریوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ،پولیس اور انتظامیہ ہوش کے ناخن لے ۔پی پی چیئرمین بلاول جلسہ میں شرکت کیلئے سیالکوٹ ائیر پورٹ سے قمرزمان کائرہ کی رہائش گاہ لالہ موسی ٰ چلے گئے جہاں سے آج گوجرانوالہ جلسہ گاہ پہنچیں گے ۔ شیخوپورہ پولیس نے کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر ن لیگ کے سابق ایم پی اے حسان ریاض سمیت 140 افراد ،منڈی بہائو الدین میں 34مقامی رہنمائوں سمیت 200افراد اور سیالکوٹ میں کارنرمیٹنگ کرنے پرلیگی ایم پی اے رانا محمدافضل سمیت 23افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ۔ منڈی بہاؤالدین پولیس نے سابق ایم پی اے چودھری شفقت گوندل ، راولپنڈی پولیس نے سینیٹرچودھری تنویرکے دو بیٹوں اسامہ اور انس کے علاوہ دس سے زائد لیگی کارکنوں کو گرفتار کر لیا ۔