لاہور(خصوصی نمائندہ)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدا ر نے عید کے موقع پر اوورچارجنگ کرنے والے ٹرانسپورٹر کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دیا ہے اور ہدایت کی کہ محکمہ ٹرانسپورٹ کے حکام اورانتظامی افسر بس اڈووں پر جاکرخود چیکنگ کریں۔انہوں نے صوبائی وزراء کو بھی موقع پر جاکر ٹرانسپورٹ کے کرایے چیک کرنے کی ہدایت کی ہے ، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اوورچارجنگ کے نام پر مسافروں کو لوٹنے کی اجازت نہیں دیں گے ،چھوٹے بڑے شہروں میں محکمہ ٹرانسپورٹ کا عملہ کرایو ں کی مسلسل مانیٹرنگ کرے اور اس ضمن میں فرائض سے غفلت برتنے والے افسروں اوراہلکاروں کے خلاف قانونی کارروائی ہوگی،وزیراعلیٰ نے میٹروبس سٹیشنز پر پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے کولرز فنکشنل نہ ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے ہدایت کی کہ کولرز کو فی الفور فنکشنل کیاجائے ،انہوں نے کہا کہ میٹروبس سروس کے مسافروں کو سہولتوں کی فراہمی میں کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی،اجلاس میں وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو اورنج لائن میٹروٹرین کے منصوبے کی تکمیل کے مراحل سے آگاہ کیاگیا،وزیراعلیٰ نے عوام کی سہولت کے پیش نظر اورنج لائن میٹرو ٹرین پراجیکٹ کو جلدمکمل کرنے کا حکم دیااور ٹھوکر نیاز بیگ سمیت ملتان روڈ پر اورنج لائن ٹرین ٹریک سے ملحقہ سڑکوں کی فوری تعمیرومرمت کی ہدایت کی،انہوں نے کہا کہ ٹھوکر نیاز بیگ پر ٹریفک کے نظام کو سہل بنانے کے لئے فوری اقدامات کئے جائیں اورٹھوکر نیاز بیگ کی ری ماڈلنگ کر کے عوام کو آمد ورفت میں سہولت فراہم کی جائے ،وزیر اعلیٰ نے کمشنر لاہور ڈویژن اور ڈی جی ایل ڈی اے سے سڑکوں اورفٹ پاتھ کی تعمیر و مرمت سے متعلق رپورٹ طلب کر لی، وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت اجلاس میں ’’نیا پاکستان منزلیں آسان پروگرام‘‘ کے تحت صوبے کے دیہی علاقوں میں سڑکوں کی تعمیر و بحالی کا فیصلہ کیا گیا،وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 15ارب روپے کی خطیر رقم سے پسماندہ علاقوں میں سڑکوں کی تعمیر و بحالی کے پروگرام کا پہلا مرحلہ شروع کیا جائے گا، انہوں نے کہا کہ ’’نیا پاکستان منزلیں آسان پروگرام‘‘ کے تحت کم از کم پانچ کلومیٹر طویل کارپٹڈ سڑکیں تعمیر کی جائیں گی، سڑکوں کی چوڑائی 12فٹ اورکارپٹ کی موٹائی 2انچ ہوگی جبکہ نکاسی آب کے مسائل سے نمٹنے کیلئے بعض علاقوں میں کنکریٹ سڑکیں بنائی جائیں گی، سڑکوں کے معیار کی دیکھ بھال اوربروقت تکمیل کیلئے صوبائی سٹیئرنگ کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے ۔