مکرمی!ہرسال کی طرح اس سال بھی ڈینگی نے عوام الناس کواپنی لپیٹ میں لے لیاہے۔ملک کے بیشترشہروں میں ڈینگی سے متاثرہ افرادکی شرح اموات میں خطرناک حدتک اضافہ دیکھاجارہاہے۔ ڈینگی بخارکااگربروقت علاج نہ کیاجائے تویہ جان لیواثابت ہوتاہے۔عوام باہرنکلنے سے اجتناب کریں۔دروازوں، کھڑکیوں وغیرہ میں جالیاں لگائیں۔سوتے وقت نیٹ میں سوئیںیامچھرمار کوائل استعمال کریں۔ اس کے باوجود بھی مچھروں سے نجات نہ ملے تومتعلقہ اداروں کومطلع کریں۔ڈینگی کابروقت علاج شروع کروالیاجائے تومریض جلدصحتیاب ہوجاتاہے۔ مریض کو دودھ،پانی، یخنی اورپھلوںکا جوس خاص کرانار، مالٹا اورسیب اورلیموں کارس مکس کر کے دیں۔یہ مریض میں قوت مدافعت پیداکرنے کے ساتھ ساتھ پلیٹ لیٹس بھی تیزی سے بڑھاتاہے۔اسکے علاوہ پپیتے کے پتوں کاعرق بھی کافی مفید ہوتا ہے۔ (عبدالقادر۔گجرخان،میراشمس)