سکھر(بیورو رپورٹ) پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ وہ نہیں جانتے کہ جج ارشد ملک کی ویڈیو کتنی سچ ہے لیکن اتفاق ہے کہ یہی جج نوازشریف اور آصف زرداری کا کیس سن رہا ہے ، دال میں کچھ تو کالا ہے ۔سکھر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کو ہٹانے کے فیصلے سے متعلق کہا کہ سب سیاسی جماعتوں نے اعلیٰ عدلیہ سے جج ارشد ملک کی ویڈیو کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ، اس جج کو ہٹادیا گیا اور امید ہے کہ اسے اپنی صفائی کا موقع دیا جا ئیگا۔انہوں نے کہا کہ یہ معاملہ اداروں کیلئے بڑا نقصان دہ ہوسکتا ہے ۔ چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر بلاول کا کہنا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں اپوزیشن اراکین کی تعداد زیادہ ہے اور چیئرمین سینیٹ اپوزیشن کا ہی بنے گا۔ضمنی الیکشن کے حوالے سے پی پی چیئرمین کا کہنا تھا کہ گھوٹکی میں الیکشن کو سلیکشن بنانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی سیاست سلیکشن پر یقین رکھتی ہے ، وہ سمجھتے ہیں کہ اوچھے ہتھکنڈوں سے ہمیں ڈرادیں گے مگر ہم ان کی سازشیں ناکام بنائیں گے ۔بلاول کا کہنا تھا کہ وفاق صوبے کا معاشی قتل کررہا ہے ، پنجاب اور خیبرپختونخوا کی طرح سندھ کے حقوق پر بھی ڈاکہ ڈالا جارہا ہے ، پیسے کم ملنے سے بجٹ اور معیشت پر اثر پڑرہا ہے لیکن ہم پبلک پرائیویٹ شراکت داری کے ذریعے کوشش کررہے ہیں کہ کم پیسے میں منصوبے مکمل کیے جائیں۔انہوں نے کہا کہ ہم مہنگائی، عوام دشمن بجٹ اورکٹھ پتلی حکومت کیخلاف احتجاج کرینگے ، پیپلزپارٹی عوامی خدمت پریقین رکھتی ہے ۔