لاہور( حافظ فیض احمد) ڈائریکٹر جنرل ایکسائز پنجاب نے افسروں کی غیر حاضری کا سخت نوٹس لے لیا اور دوران ڈیوٹی سیٹوں سے غائب ہونے پر ناراضگی کا اظہار کیا جبکہ موٹر برانچ سمیت دیگر شعبوں کے افسران کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ دفاتر میں اپنی حاضری کو یقینی بنائیں اور کام کی غرض سے آنے والے شہریوں کو بہتر سہولتیں فراہم کی جائیں، علاوہ ازیں ڈائریکٹر جنرل ایکسائز پنجاب زاہد حسین اپنے عہدے کا چارج سنبھالنے کے بعد سٹاف کو بتائے بغیر ہی ایکسائز آفس فیصل ٹائون پہنچ گے اور وہ2گھنٹے سے زائد وہاں موجود رہے سنٹر میں ڈیوٹی پر موجود ایکسائز ملازمین موبائل فونز پر گیم کھیلتے رہے ،بعد ازاں پتہ چلا کہ ڈی جی ایکسائز فیصل ٹاون کے دفتر میں موجود ہیں جس پر انہوں نے میٹنگ کی اور افسروں کو تنبیہ کی سائلین کو بہتر سہولتیں فراہم کی جائیں،یوم عاشور سے قبل ڈی جی پنجاب زاہد حسین اچانک ایکسائز آفس باغبانپورہ پہنچ گئے اور وہاں پر بھی انہوں نے ناراضگی کا اظہار کیا اور ایک ایکسائز انسپکٹر کو معطل کر دیا جس کے بعد ایکسائز آفس فرید کورٹ ہائوس گئے ، ایک خاتون ای ٹی او ایکسائز کی عدم موجودگی کی وجہ سے شہریوں کی جانب سے شکایات سامنے آنے پر برہمی کا اظہار کیا اور ہدایت کی کہ موٹر برانچ سے متعلقہ افسر دوران ڈیوٹی دفاتر میں اپنی حاضری کو یقینی بنائیں اسی طرح پراپرٹی ٹیکس اور دیگر شعبوں کے افسر اور انسپکٹر دفاتر میں بر وقت حاضری کو یقینی بنائیں اس حوالے سے کسی قسم کی کوتاہی برادشت نہیں کی جائے گئی، ذرائع کے مطابق ڈی جی ایکسائز پنجاب زاہد حسین کی جانب سے اچانک دورے کئے جانے پر بعض افسروں نے روزانہ کی بنیاد پر ڈائریکٹرجزل ایکسائز کی نقل وحرکت کے متعلق رپورٹ لینا شروع کر دی ہے اور ماتحت عملے کو بھی ہدایت کی گئی ہے کہ وہ صبح8بجے اپنی حاضری کو یقینی بنائیں۔