راولپنڈی ،اسلام آباد( رپورٹر92نیوز،سپیشل رپورٹر) وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے 30 دسمبر تک ریلوے کو مثالی بنانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک سال میں ریلوے کا 42 ملین کا خسارہ ختم کر ینگے ، وزیراعظم عمران خان نے ہمیں ریلوے کا جو ٹاسک دیا ، اسے پورا کریں گے اور وعدہ کرتا ہوں بھیس بدل کر گاڑیوں کو چیک کروں گا،انھوں نے یہ باتیں راولپنڈی ریلوے سٹیشن میں میانوالی ریل کار کے معائنے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئی کہی۔انھوں نے مزید کہا کہ ریلوے میں وائی فائی ہوگا، 24 گھنٹے پنکھے اور لائٹس ہوں گی، خزانہ خالی ہے تاہم دستیاب وسائل سے ہی کام لیں گے اور کوشش ہوگی کرایہ بڑھانے کے بجائے سستی ٹرین چلائیں۔30 دسمبر تک ریلوے کو بہترین بناتے ہوئے کوئٹہ سے تفتان تک گیج بنائینگے ، ایک دو مچھلیاں سارے تالاب کو خراب کرتی ہیں تاہم کرپشن کے خلاف زیرو ٹالیرنس ہے ۔دریں اثنائچین ہاربر انجینئرنگ کمپنی (سی ایچ ای سی) کے جنرل منیجرWang Xiofeng نے جمعرات کو وزارت ریلوے میں وفاقی وزیر ریلویز شیخ رشید احمد نے ملاقات کی ۔ملاقات کے دوران چیئرمین ریلوے جاوید انور ،پاکستان ریلوے کے سی ای او آفتاب اکبر ،سیکرٹری ریلو ے بورڈ فرخ تیمورگلزئی اور ڈی جی ٹیکنیکل منور شاہ بھی موجود تھے ۔ ملاقات میں دونوں جانب سے باہمی تعاون میں دلچسپی ظاہر کی گئی ۔سی ایچ ای سی نے پاکستان ریلوے کے ساتھ بلڈ آپریٹ ٹرانسفر کی بنیاد پرمارشلنگ یارڈ پیپری، کنٹینرڈپو(MYP)کی تعمیر اور ورکراچی پورٹ میں ریل لائنوں کی بحالی میں دلچسپی کا اظہار کیا ۔وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے (سی ایچ ای سی) کی جانب سے ٹھوس تجاویز پیش کرنے کا مطالبہ کیا ۔انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ممالک میں لازوال تعلقات ہیں ۔سی ایچ ای سی کی جانب سے تمام اچھی اور ٹھوس تجاویز کا خیر مقدم کیا جائیگا ۔سی ایچ ای سی نے پاکستان ریلوے کے ساتھ بلڈ آپریٹ ٹرانسفر(BOT)کی بنیاد پرمارشلنگ یارڈ پیپری، کنٹینرڈپو(MYP)کی تعمیر اورکراچی پورٹ میں ریل لائنوں کی بحالی میں دلچسپی ظاہر کی۔ انہوں نے کراچی پورٹ اور MYPکے درمیان شٹل فریٹ ٹرینوں کو چلانے کیلئے دلچسپی ظاہر کی۔